آفریدی کی کپتانی، فیصلہ بورڈ کرے گا

تصویر کے کاپی رائٹ AP
Image caption آفریدی نے اپنی ریٹائرمنٹ کے بارے میں بیان دیا تھا

پاکستان کرکٹ بورڈ کے چیرمین شہریارخان نے واضح کردیا ہے کہ شاہد آفریدی کی کپتانی کے مستقبل کا فیصلہ پاکستان کرکٹ بورڈ کرے گا۔

شہریارخان کا یہ موقف شاہد آفریدی کے اس بیان کے بعد سامنے آیا ہے جس میں انھوں نے کہا ہے کہ ان پر ان کی فیملی اور دوستوں کی جانب سے ریٹائرمنٹ کے فیصلے پر نظرثانی کے لیے سخت دباؤ ہے۔

شہریارخان کا کہنا ہے کہ شاہد آفریدی نے کپتان بنائے جانے کے وقت ان سے یہی کہا تھا کہ اگر کرکٹ بورڈ انہیں کپتان بنانا چاہتا ہے تو وہ انہیں ورلڈ ٹی ٹوئنٹی تک قیادت کی ذمہ داری سونپ دے جس پر انہیں یہ ذمہ داری سونپی گئی تھی لیکن اب اگر وہ اپنے کریئر سے متعلق فیصلے پر نظرثانی کا سوچ رہے ہیں تو انہیں چاہیے کہ وہ اُن سے بات کریں میڈیا میں اُن کا بات کرنا مناسب نہیں ہے ۔

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption بھارت سے شکست کے بعد آفریدی پر دباؤ بڑھ گیا ہے

شہریارخان نے کہا کہ وہ ذاتی طور پر کسی بھی کرکٹر کو جو کپتان بھی ہو ریٹائرمنٹ پر مجبور کرنے کے حق میں نہیں ہیں۔ ریٹائرمنٹ کا فیصلہ شاہد آفریدی کااپنا ہوگا لیکن یہ بات واضح ہے کہ جب وہ اپنے مستقبل کے فیصلے کے بارے میں پاکستان کرکٹ بورڈ کو مطلع کردیں گے تو پھر بورڈ یہ فیصلہ کرے گا کہ آیا وہ کپتان کی حیثیت سے ہی کھیلیں گے یا عام کھلاڑی کی حیثیت سے۔

واضح رہے کہ حالیہ دنوں میں شاہد آفریدی کی قیادت میں پاکستانی کرکٹ ٹیم کو انگلینڈ اور نیوزی لینڈ کے خلاف ٹی ٹوئنٹی سیریز میں شکست کے بعد ایشیا کپ کے پہلے میچ میں بھارت کے خلاف بھی ناکامی کا سامنا کرنا پڑا ہے ۔ خود آفریدی کی اپنی کارکردگی میں بھی تسلسل کا فقدان رہا ہے۔

اسی بارے میں