بوئنگ کا 4,500 ملازمین نکالنے کا اعلان

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption بوئنگ کو ملنے والے نئے آڈرز کی تعداد میں نمایاں کمی ہوئی ہے

امریکی طیارہ ساز کمپنی بوئنگ نے اخراجات میں کمی کے لیے رواں برس کے وسط تک 4,500 سے زائد ملازمتیں ختم کرنے کے منصوبے کا اعلان کیا ہے۔

بوئنگ کے ایک ترجمان کے مطابق 4,500 میں سے 1600 ملازمین رضاکارانہ پالیسی کے تحت نوکری چھوڑیں گے۔

بوئنگ کے کمرشل جہاز تیار کرنے والے شعبے میں ملازمین کو کم کیا جا رہا ہے کیونکہ کمرشل جہازوں کے گاہکوں نے اپنی خریداری کم کر دی ہے۔

توقع ہے کہ سینکڑوں ایگزیکٹیوز اور مینیجرز بھی ملازمتوں سے فارغ ہوں گے۔

نکالے جانے والے ملازمین بوئنگ میں کام کرنے ملازمین کی مجموعی تعداد کا تین فیصد ہوں گے اور یہ تعداد گذشتہ برس کے اختتام تک ایک لاکھ 61 ہزار تھی۔

بوئنگ نے یہ اقدام جہازوں کی مانگ میں کمی کے خدشات کے تحت اٹھایا ہے۔

اس کے علاوہ بوئنگ کو اس کی حریف طیارہ ساز کمپنی ایئربیس سے بھی سخت مقابلے کا سامنا ہے جس میں ایئر بس کے مارکیٹ شیئر میں اضافہ ہوا ہے۔

بوئنگ نے اگرچہ گذشتہ برس اپنی توقعات سے زیادہ ریکارڈ 762 جہاز فروخت کیے تھے تاہم گذشتہ برس ہی اس کو ملنے والے نئے آڈرز کی تعداد میں واضح کمی دیکھنے میں آئی تھی۔

تصویر کے کاپی رائٹ Boeing
Image caption ملازمتوں میں کٹوتی کمرشل جہازوں کے شعبے میں کی جائے گی

بوئنگ کے ایشیا اور مشرقِ وسطیٰ کے بڑے خریداروں نے اب اپنی خریداری کو کم کر دیا ہے۔

اس کے علاوہ گذشتہ برس 31 دسمبر تک بوئنگ کے پاس جمع شدہ جہازوں کے سودوں کی تعداد پانچ ہزار 795 تھی اور جہازوں کی تیاری کی موجودہ رفتار سے انھیں مکمل کرنے میں ساڑھے سات سال درکار ہیں۔

اس وقت بوئنگ اور ایئربس کی فیکڑیاں اپنی مکمل صلاحیت کے ساتھ کام کر رہی ہیں اور گاہک ایسے جہازوں پر اربوں ڈالر خرچ کرنے سے گریز کر رہے ہیں جو انھیں کئی برسوں بعد تیار ملیں گے۔

اسی بارے میں