دس آلودہ ترین شہروں میں سے چار انڈین

تصویر کے کاپی رائٹ Getty

عالمی ادارۂ صحت کا کہنا ہے کہ دنیا کے دس آلودہ ترین شہروں میں سے چار انڈیا میں واقع ہیں۔

ایک تحقیق کے مطابق گوالیار، احمد آباد، پٹنہ اور رائے پور کی فضا میں آلودہ ذرات کی سطح انتہائی بلند ہے۔

٭ بھارت میں فضائی آلودگی سے آگاہ کرنے والا نظام

انڈیا کے دارالحکومت نئی دہلی کو دنیا کا 11واں آلودہ ترین شہر قرار دیا گیا ہے۔

تحقیق کے مطابق آلودگی کے چھوٹے ذرات سے فالج، دل کی بیماری، پھیپھڑوں کا سرطان اور سانس کی شدید تکلیف لاحق ہو سکتی ہے۔

عالمی ادارۂ صحت کے مطابق فضائی آلودگی کی وجہ سے ہر سال 70 لاکھ سے زائد افراد ہلاک ہو جاتے ہیں جس میں سے 30 لاکھ اموات ہوا کے خراب معیار کے باعث ہوتی ہیں۔

عالمی ادارۂ صحت نے دنیا کے 103 ممالک کے 3,000 شہروں، قصبوں اور دیہاتوں میں ہوا کی کوالٹی کاجائزہ لیا۔

اس تحقیق کے نتائج ان ممالک کی جانب سے جاری کیے جانے والے رپورٹوں اور دیگر ذرائع سے سنہ 2008 سے سنہ 2013 تک حاصل کیے گئے ہیں اگرچہ کچھ ممالک نے اس مقصد کے لیے ڈیٹا فراہم نہیں کیا۔

تحقیق کے مطابق نئی دہلی میں سالانہ اوسطً 2.5 پارٹیکولیٹ میٹر کی پیمائش 122 ہے۔

عالمی ادارۂ صحت نے 2.5 مائیکرو پارٹیکلز کو درجہ بندی کرنے والے گروپ ایک میں رکھا ہے اس کے علاوہ اس میں پھیپھڑوں کو متاثر کرنے، دل کے عارضےاور زندگی کو لاحق خطرات کی شرائط کے بارے میں بھی بتایا گیا ہے۔

ڈبلیو ایچ او کی ماریا نیرہ نے انڈیا کی حکومت کی جانب سے آلودگی سے نمٹنے کے منصبوے کی تعریف کی ہے۔

انھوں نے خبر رساں ادارے روئیٹرز کو بتایا کہ ممکنہ طور پر دنیا کے آلودہ ترین شہروں کے نام ہماری فہرست میں شامل نہیں ہیں اور اس کی وجہ ان کے پاس ہوا کی کوالٹی کو مانیٹر کرنے کا اچھا سسٹم نہیں ہے۔

اسی بارے میں