ہینڈز فری سے بھی ڈرائیور کی توجہ بٹ جاتی ہے

تصویر کے کاپی رائٹ Getty

تحقیق سے معلوم ہوا ہے کہ ہینڈز فری استعمال کرنے والے ڈرائیوروں کی توجہ بھی اسی قدر بٹی رہتی ہے جتنی فون ہاتھ سے پکڑ کر سننے والوں کی۔

یونیورسٹی آف سسیکس کے سائنس دانوں نے دریافت کیا ہے کہ فون پر گفتگو کرتے ہوئے ڈرائیور ان چیزوں کو تصور میں لے آتے ہیں جن کے بارے میں وہ بات کر رہے ہوتے ہیں۔

تحقیق کے مطابق فون پر بات کرنے سے دماغ کا وہ حصہ بھی مصروف ہو جاتا ہے جو عام طور پر سڑک پر دھیان دینے کے کام آتا ہے۔

مرکزی تحقیق کار نے کہا ہے کہ اس تحقیق کی روشنی میں گاڑیوں میں ہر قسم کے فون کے استعمال پر پابندی لگا دینی چاہیے۔

تحقیق میں 20 مرد اور 40 عورتوں شامل تھیں جنھوں نے گاڑی کی ڈرائیونگ سیٹ پر بیٹھ کر ویڈیو ٹیسٹ دیے۔ رضاکاروں کے ایک گروپ کو بغیر کسی خلل کے گاڑی ’چلانے‘ دی گئی، جب کہ دوسرے گروپ کو تین فٹ دوری کے فاصلے سے ایک مرد کی آواز سنائی گئی۔

وہ لوگ جن کی توجہ گفتگو کی وجہ سے بٹ گئی تھی، انھوں نے سڑک پر پیش آنے والے واقعات پر ردِعمل دکھانے میں ایک سیکنڈ کے لگ بھگ زیادہ وقت صرف کیا۔ ان واقعات میں سڑک پر اچانک کسی راہگیر کا آ جانا، یا کسی گاڑی کے غلط طرف سے سڑک پر گھس جانا وغیرہ شامل تھے۔

تحقیق سے معلوم ہوا کہ سادہ سے سوال، مثلاً ’آپ نے نیلی فائل کہاں رکھی ہے؟‘ پوچھے جانے سے ڈرائیور عام حالات کی نسبت اپنے دماغ کے چار گنا کم حصے ہی کا استعمال کر پاتا ہے، کیونکہ ان کا دماغ سڑک پر درپیش خطرات پر توجہ مرکوز کرنے کی بجائے اس کمرے کا تصور کرنے لگتا ہے جہاں انھوں نے فائل چھوڑی تھی۔

تحقیق کے سربراہ یونیورسٹی آف سسیکس کے ڈاکٹر گریم ہول کہتے ہیں کہ اس تحقیق سے یہ بات بالکل غلط ثابت ہو گئی ہے کہ ’اگر ڈائیور ہینڈز فری استعمال کرے تو اسے ڈرائیونگ کے دوران کوئی مسئلہ نہیں ہو گا۔ مسئلہ قانون کے نفاذ کا ہے۔ پولیس کے لیے یہ جاننا بہت مشکل ہے کہ کوئی ہینڈز فری استعمال کر رہا ہے۔‘

انھوں نے کہا: ’میرا خیال ہے کہ پیغام پہنچانے کے لیے قانون میں تبدیلی لانی چاہیے اور یہ بات بالکل واضح طور پر بتا دینی چاہیے کہ ڈرائیونگ کے دوران موبائل فون کا استعمال خطرناک ہے۔‘

ڈاکٹر ہول نے کہا کہ دوسرے مطالعات سے معلوم ہوتا ہے کہ گاڑی کے کسی مسافر سے بات کرنے کے مقابلے پر فون پر گفتگو زیادہ خلل انداز ہوتی ہے۔

انھوں نے کہا کہ گاڑی میں بیٹھا مسافر اس لیے کم خلل انداز ہوتا ہے کیونکہ اگر سامنے کوئی خطرہ آ جائے تو دونوں بولنا بند کر دیتے ہیں۔

برطانیہ میں ڈرائیونگ کے دوران ہاتھ سے پکڑ کر فون استعمال کرنا غیرقانونی ہے، البتہ ہینڈز فری کے استعمال کی اجازت ہے۔

اسی بارے میں