بھارتی سلامتی کو خطرہ، گوگل سٹریٹ ویو پر پابندی

تصویر کے کاپی رائٹ Getty
Image caption گوگل کا ٹریکر کیمرا مختلف زاویوں پر نصب اپنے 15 عدسوں کی مدد سے مسلسل تصویریں کھینچتا ہے

بھارت کی وزارت داخلہ نے ملکی سلامتی کو ممکنہ خطرے کے پیش نظر گوگل سٹریٹ ویو کے لیے تصاویر لینے کی اجازت دینے سے انکار کر دیا ہے۔

اس سے پہلے بھارت کی سرکاری خبر رساں ایجنسی پی ٹی آئی کے مطابق وزارت داخلہ نے گوگل کو مطلع کیا ہے کہ بھارت میں گوگل سٹریٹ ویو کی خدمات کو اجازت نہیں دی گئی ہے۔

بی بی سی کے نامہ نگار شلپا كننن سے بات چیت میں وزارتِ داخلہ کے ایک اعلیٰ اہلکار نے بتایا کہ’بھارت میں گوگل سٹریٹ ویو کے لیے تصاویر لینے کی اجازت ہی نہیں دی گئی۔

وزارت داخلہ کے افسر کا کہنا ہے کہ گوگل سٹریٹ ویو سے ملک کی سلامتی کو خطرہ ہو سکتا ہے۔

تصویر کے کاپی رائٹ Google maps
Image caption گوگل سٹریٹ ویو کے لیے ڈیٹا حاصل کرنے پر ہندوستان کے علاوہ کئی دیگر ملک پہلے بھی اپنی اعتراض کر چکے ہیں

گوگل سٹریٹ ویو سڑکوں، عمارتوں، دریاؤں، پہاڑوں اور تقریباً ایسی تمام جگہوں کو ظاہر کرتا ہے، جنھیں عام طور پر سڑکوں پر چلنے والے لوگ تلاش کرتے ہیں۔

گوگل کا ٹریکر کیمرا مختلف زاویوں پر نصب اپنے 15 عدسوں کی مدد سے مسلسل تصویریں کھینچتا ہے اور پھر ان تصاویر کو جوڑ کر سافٹ ویئر کی مدد سے دیکھنے والوں کو 360 ڈگری کی تصویر فراہم کی جاتی ہے جس سے انھیں محسوس ہوتا ہے کہ وہ خود اس جگہ پر موجود ہیں۔

گوگل سٹریٹ ویو کے لیے ڈیٹا حاصل کرنے پر ہندوستان کے علاوہ کئی دیگر ملک پہلے بھی اپنی اعتراض کر چکے ہیں۔