نائجیریا سے انٹرنیٹ پر فراڈ کرنے والا ہیکر گرفتار

تصویر کے کاپی رائٹ Getty
Image caption نائیجیریا کی انسداد فراڈ اجینسی بھی اس گرفتاری میں ملوث تھی

انٹرپول کا کہنا ہے کہ نائیجیریا کے جنوبی ساحلی شہر پورٹ ہارکورٹ میں نائیجیریا کے ایک شہری کو انٹرنیٹ پر لوگوں کے ساتھ دھوکے کرنے کے الزام میں گرفتار کیا ہے۔

’مائک‘ کے نام سے جاننے جانے والے اس 40 سالہ شخص کے بارے میں کہا گیا ہے کہ اس نے 40 افراد کی مدد سے مختلف ممالک میں لوگوں سے دھوکے سے چھ کروڑ ڈالر حاصل کیے تھے۔

ان کی سرگرمیوں میں کمپیورٹرز پر کنٹرول حاصل کرنے والے وائرس منتقل کر کے لوگوں کی ای میلز کو ہیک کرنا شامل ہے۔

نائیجیریا کی انسداد فراڈ ایجنسی نے بھی گرفتاری کی کارروائی میں شامل تھی۔

انٹرپول نے ایک بیان میں کہا کہ ’ایک کیس میں دھوکے سے ڈیڑھ کروڑ پاؤنڈ سے زیادہ رقم حاصل کی گئی تھی۔‘

’مائک‘ مبینہ طور پر چین، یورپ اور امریکہ میں منی لانڈرنگ کا ایک نیٹ ورک بھی چلا رہا تھا۔

انٹرپول نے مزید کہا ’اس نیٹ ورک نے آسٹریلیا، کینیڈا، انڈیا، ملائیشیا، رومانیہ، جنوبی افریقہ، تھائی لینڈ اور امریکہ میں قائم چھوٹے کاروباروں کے ای میل اکاؤنٹس ہیک کیے تھے۔‘

گرفتار ہونے والے ملزم اور ان کے ایک ساتھی پر ہیکنگ، سازش اور دھوکے سے پیسے حاصل کرنے کے الزامات عائد کیے گئے ہیں۔

اسی بارے میں