فیس بک کی کوئٹہ دھماکے پر سیفٹی چیک کی سہولت

تصویر کے کاپی رائٹ AFP

سماجی رابطوں کی ویب سائٹ فیس بُک نے کوئٹہ کے سول ہسپتال میں دھماکے کے بعد کوئٹہ کے فیس بُک صارفین کے لیے سیفٹی چیک کی سہولت پیش کی ہے۔

فیس بُک سیفٹی چیک کے ذریعے فیس بُک صارفین اپنے آپ کو اور اپنے دوستوں کو محفوظ قرار دے سکتے ہیں جن کے بارے میں انہیں یقین ہو کہ وہ محفوظ ہیں۔

*کوئٹہ کے سول ہسپتال میں دھماکہ، ’63 افراد ہلاک‘

* لاہور دھماکہ، ’سیفٹی بگ‘ پر فیس بک کی معافی

تصویر کے کاپی رائٹ facebook

اس فیچر میں عوام کی مدد سے تحفظ کے لیے پریشان لوگوں کی مدد کی جاتی ہے اور ایک صارف جو محفوظ قرار دیا جاتا ہے اس کے تمام فیس بُک دوستوں کو اس کا نوٹیفیکیشن جاتا ہے۔

پاکستان میں اس سے قبل فیس بُک نے 26 اکتوبر 2015 کو آنیوالی زلزلے کے بعد اور لاہور میں ہونے والے دھماکے کے بعد اس فیچر کو پیش کیا تھا۔

فیس بُک پر حالیہ دنوں میں اس حوالے سے شدید تنقید کی جاتی رہی ہے کہ اس نے مغربی ممالک میں ہونے والے شدت پسندی اور دہشت گردی کی واقعات کے بعد اس فیچر کو پیش کیا مگر بغداد، بیروت، استنبول جیسے شہروں کے لیے اس سہولت کو پیش نہیں کیا۔

اسی بارے میں