سام سنگ گلیکسی نوٹ 7 کی فروخت روک دی گئی

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption سام سنگ کا یہ نیا سمارٹ فون 19 اگست کو فروخت کے لیے پیش کیا گیا تھا اور اسے صارفین اور تجزیہ نگاروں کی طرف سے زبردست پذیرائی ملی تھی

جنوبی کوریا کی ٹیکنالوجی کمپنی سام سنگ کا کہنا ہے کہ اس نے بیٹری کے مسائل کی وجہ سے اپنے نئے سمارٹ فون گلیکسی نوٹ 7 ماڈل کی فروخت روک دی ہے۔

یہ فیصلہ امریکہ اور جنوبی کوریا میں موبائل فون چارجنگ کے دوران فون کے ’پھٹنے‘ کی اطلاعات کے بعد کیا گیا ہے۔

سام سنگ کی جانب سے جاری کردہ بیان میں بتایا گیا ہے کہ ڈیوائسز کی تبدیلی میں کم از کم دو ہفتے درکار ہیں۔

خیال رہے کہ یہ صورت حال ایسے موقعے پر سامنے آئی ہے جب سام سنگ کی حریف کمپنی ایپل آئی فون کا نیا ماڈل ریلیز کرنے کی تیاری کر رہی ہے۔

بدھ کو سام سنگ کا کہنا تھا کہ اس نے جنوبی کوریا میں نوٹ 7 کی ترسیل اضافی کوالٹی ٹیسٹوں کے پیش نظر روک دی تھی۔

خود کو امریکہ میں مقیم ظاہر کرنے والے یوٹیوب کے ایک صارف نے ایریل گونزالیز کے نام کے ساتھ 29 اگست کو گلیکسی نوٹ 7 کی ایک ویڈیو جاری کی تھی جس میں جلی ہوئی کیسنگ اور ٹوٹی ہوئی سکرین دکھائی گئی ہے۔

تصویر کے کاپی رائٹ Ariel Gonzalez
Image caption ایک صارف ایریل گونزالیز کا کہنا ہے کہ ان کا فون جل گیا

ان کا کہنا تھا کہ جب انھوں نے سام سنگ کے آفیشل چارجر سے فون کو ہٹایا تو فون کو ’آگ لگ گئی۔‘ ان کا کہنا تھا کہ انھوں نے یہ فون دو ہفتے پہلے ہی خریدا تھا۔

30 اگست کو جنوبی کوریا کی سماجی رابطے کی ویب سائٹ کاکاؤ سٹوری پر پھٹنے والے گلیکسی نوٹ 7 کی مزید تصاویر جاری کی گئیں۔

خیال رہے کہ سام سنگ کا یہ نیا سمارٹ فون 19 اگست کو مارکیٹ میں فروخت کے لیے پیش کیا گیا تھا اور ناقدین اور صارفین کی جانب سے اسے خاصی پذیرائی حاصل ہوئی تھی۔

اسی بارے میں