جوکووچ کو شکست، اینڈی مرے عالمی نمبر ایک برقرار

تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption سترہ ہزار شائقین سے بھرے ٹینس کورٹ میں یہ میچ ٹینس مقابلے سے زیادہ ہیوی ویٹ باکسنگ چیمپیئن شب دکھائی دے رہا تھا

برطانوی ٹینس سٹار اینڈی مرے نے پانچ مرتبہ کے چیمپیئن نوواک جوکووچ کو اپنے پہلے اے ٹی پی ورلڈ ٹوور فائنلز میں شکست دے کر ٹائٹل اپنے نام کرنے کے ساتھ ساتھ سال 2016 کا اختتام بطور عالمی نمبر ایک کر دیا ہے۔

لندن کے او2 ارینا میں انتہائی بے چینی سے انتظار کیے جانے والے اس فائنل میچ میں اینڈی مرے نے نوواک جوکووچ کو چھ، تین اور چھ، چار سے شکست دی۔

اینڈی مرے نے اس موقع پر کہا کہ ’میں جیتنے پر بہت خوش ہوں اور عالمی نمبر ایک ہونا میرے لیے بہت خاص ہے۔ اس قسم کے میچ میں نوواک جوکووچ کے خلاف کھیلنا بہت زبردست ہے۔‘

اس کے ساتھ ہی نوواک جوکووچ کا ٹینس سٹار راجر فیڈرر کا لگاتار چھ بار اے ٹی پی ورلڈ ٹوور فائنلز جیتنے کا سفر بھت ختم ہوگیا۔ وہ اس سے قبل لگاتار چار بار یہ اعزاز جیت چکے ہیں۔

نوواک جوکووچ اور اینڈی مرے کے درمیان کھیلے جانے والے گذشتہ 34 میچوں میں مرے دس میچ جیت چکے ہیں۔ اینڈی مرے کا کہنا ہے کہ ’ہم اس سے قبل گرینڈ سلیم فائنلز اور اولپمک میں آمنے سامنے ہو چکے ہیں لیکن میں اس جیت پر بہت خوش ہوں۔‘

تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images
Image caption اینڈی مرے اس جیت کے ساتھ عالمی نمبر ایک پوزیشن پر برقرار

اینڈی مرے نے مزید کہا کہ ’یہ وہ لمحہ ہے جس کا میں نے کبھی تصور نہیں کیا تھا۔‘

سترہ ہزار شائقین سے بھرے ٹینس کورٹ میں یہ میچ ٹینس مقابلے سے زیادہ ہیوی ویٹ باکسنگ چیمپیئن شب دکھائی دے رہا تھا اور آخر میں اینڈی مرے اس میں کامیاب رہے۔

جوکووچ نے اس موقع پر کہا کہ ’اینڈی مرے عالمی نمبر ایک کھلاڑی ہیں اور وہ اس کے حقدار بھی ہیں، وہ بہترین کھلاڑی ہیں۔‘

انھوں نے مزید کہا کہ ’فیصلہ کن لمحے پر میں کھیل میں واپس نہیں آسکا۔ میں آخر میں اچھا کھیلا لیکن وہ کافی نہیں تھا۔‘

متعلقہ عنوانات

اسی بارے میں