نئی رینکنگ: انڈین بولرز سرفہرست، یونس کی پوزیشن بہتر

جڈیجہ اور ایشون تصویر کے کاپی رائٹ AP
Image caption جڈیجہ اور ایشون نے انگلینڈ کے خلاف ہونے والی حالیہ سیریز میں بیٹ اور بال دونوں سے اہم کردار ادا کیا

آئی سی سی کی تازہ ٹیسٹ رینکنگ میں انگلینڈ کے خلاف کلین سوئپ کے نتیجے میں انڈیا نے پہلی پوزیشن برقرار رکھی ہے۔

بولنگ کے معاملے میں انڈیا کے کھلاڑیوں کی رینکنگ میں بہتری آئی ہے تو بیٹنگ کے شعبے میں پاکستانی کھلاڑیوں کی پوزیشن میں اضافہ ہوا ہے۔

انڈیا نے آسٹریلیا اور پاکستان سے پوائنٹس کے معاملے کافی زیادہ پوائنٹس کی سبقت حاصل کر لی ہے۔

بالروں کی رینکنگ میں یہ دوسرا موقع ہے جب انڈیا کے دو کھلاڑی سر فہرست ہیں اور دونوں انڈیا کے سپنر ہیں۔ اس سے پہلے سنہ 1974 میں بشن سنگھ بیدی اور بھاگوت چندرشیکھر پہلی اور دوسری پوزیشن پر تھے۔

پہلے نمبر پر 887 پوائنٹس کے ساتھ رام چندرن ایشون ہیں جبکہ 879 پوائنٹس کے ساتھ رویندر جڈیجہ دوسرے نمبر پر ہیں۔ جڈیجہ نے گزشتہ روز انگلینڈ کے خلاف ختم ہونے والے پانچویں ٹیسٹ میچ کی دوسری اننگز میں سات وکٹیں لیں تھیں اور یہ ان کی زندگی کی سب سے اچھی رینکنگ ہے۔ مجموعی طور پر انھوں نے میچ میں دس وکٹیں لیں اور سیریز میں 26 وکٹیں حاصل کیں جبکہ ایشون کو سیریز میں 28 وکٹیں ملیں۔

خیال رہے کہ ایشون اس سے قبل جاری کی جانے والی رینکنگ میں بھی سر فہرست تھے اور ان کے 904 پوائنٹس تھے جو ان کا کریئر بیسٹ تھا۔

پاکستان کے یاسر شاہ 754 پوائنٹس کے ساتھ دسویں نمبر پر ہیں۔ سری لنکا کے رنگنا ہیراتھ تیسری جبکہ ڈیل سٹین چوتھی پوزیشن پر ہیں۔

تصویر کے کاپی رائٹ AP
Image caption یونس خان نے پہلے ٹیسٹ کی دوسری اننگز میں ایک عرصے کے بعد نصف سنچری سکور کی

پاکستان کے خلاف عمدہ بولنگ کے نتیجے میں آسٹریلیا کے مچل سٹارک اپنے کریئر کی بہترین رینکنگ حاصل کرنے میں کامیاب رہے ہیں۔

گذشتہ ہفتے جاری کی جانے والی رینکنگ کے مقابلے میں وہاب ریاض کی رینکنگ میں بھی دو پوزیشن کا اضافہ ہوا ہے اور اب وہ 24 ویں نمبر پر ہیں۔

بیٹسمین کی رینکنگ میں انڈیا کے لوکیش راہل اور کرون نائر نے بڑی چھلانگ لگائي ہے۔ راہل کو ان کی 199 رنز کی اننگز کے سبب 29 پوزیشن کا فائدہ ہوا ہے اور اب وہ اپنے کریئر بیسٹ 51 ویں نمبر پر ہیں۔ جبکہ کرون نائر کو ٹرپل سنچری کی بدولت 122 پوائنٹس کا فائدہ ہوا ہے اور وہ 55ویں نمبر پر ہیں۔

پاکستان کے معروف بیٹسمین یونس خان اب آٹھویں نمبر پر آ گئے ہیں جبکہ اظہر علی 16 ویں اور اسد شفیق 20 ویں نمبر پر آ گئے ہیں۔ آسٹریلیا کے عثمان خواجہ بھی اپنی بہتریں رینکنگ حاصل کرنے میں کامیاب ہوئے ہیں۔ اب وہ 18 ویں پوزیشن پر ہیں۔

آسٹریلیا کے سٹوین سمتھ پہلے اور انڈیا کے وراٹ کوہلی دوسرے نمبر پر موجود ہیں۔

متعلقہ عنوانات

اسی بارے میں