آسٹریلیا سے سیریز جیت کر نیوزی لینڈ تیسرے نمبر پر آ گیا

بولٹ اور ٹیلر تصویر کے کاپی رائٹ AFP/Getty Images
Image caption بولٹ اور ٹیلر نے اپنی بولنگ اور بیٹنگ سے نیوزی لینڈ کو کامیابی دلائی

نیوزی لینڈ نے راس ٹیلر کی سنچری اور بولٹ کی بہترین بولنگ کی بدولت تیسرے ون ڈے میچ میں آسٹریلیا کو شکست دے کر سیریز دو صفر سے جیت لی ہے۔

راس ٹیلر نے اس میچ میں نیوزی لینڈ کی جانب سے نیتھن ایسٹل کا سب سے زیادہ 16 سنچریوں کا ریکارڈ برابر کر لیا ہے جبکہ ٹرینٹ بولٹ نے بہترین کارکردگی کا مظاہرہ کرتے ہوئے 33 رنزکے عوض چھ وکٹیں لیں۔

سکور کارڈ دیکھنے کے لیے کلک کریں

جبکہ اس جیت کے ساتھ نیوزی لینڈ کی ٹیم ون ڈے کی رینکنگ میں تیسرے نمبر پر آ گئی ہے۔ سیریز ہارنے کے بعد بھی آسٹریلیا پہلے نمبر پر قائم ہے جبکہ جنوبی افریقہ دوسرے نمبر پر ہے۔

خیال رہے کہ نیوزی لینڈ نے اس کے ساتھ اپنی سر زمین پر آٹھویں بار لگاتار اس دو طرفہ 'چیپل ہیڈلی' سیریز میں کامیابی حاصل کی ہے۔

پہلے میچ میں نیوزی لینڈ نے 286 رنز بنائے تھے اور چھ رنز سے کامیابی حاصل کی تھی جبکہ دوسرا میچ بغیر کسی کھیل کے منسوخ کر دیا گیا۔

تصویر کے کاپی رائٹ AFP/Getty Images
Image caption نیوزی لینڈ ٹیم اب عالمی رینکنگ میں تیسرے نمبر پر آ گئی ہے

اتوار کو ہیملٹن کے سیڈن پارک میں ہونے والے تیسرے میچ میں نیوزی لینڈ نے ٹاس جیت کر پہلے بیٹنگ کا فیصلہ کیا اور مقررہ 50 اووروں میں نو وکٹوں کے نقصان پر 281 رنز بنائے۔

راس ٹیلر نے سب سے زیادہ 107 رنز بنائے جبکہ اوپنر ڈین براؤنلی نے 63 رنز کا تعاون دیا۔

آسٹریلیا کی جانب سے مچل سٹارک اور فاکنر نے تین تین وکٹیں لیں جبکہ دو وکٹیں ہیزل وڈ کے حصے میں آئی۔

جواب میں آسٹریلیا عمدہ آغاز کیا لیکن پھر بولٹ چھا گئے۔ کپتان ایرون فنچ نے سب سے زیادہ 56 رنز بنائے۔ ان کے علاوہ ٹریوس ہیڈ نے 53 رنز جبکہ سٹیونز نے 42 رنز بنائے۔

اخیر میں پیٹ کمنز اور مچل سٹارک نے جارحانہ بیٹنگ کی لیکن ہدف سے 25 رنز کی دوری پر پوری ٹیم 257 رنز بنا کر آؤٹ ہو گئی اور آسٹریلیا یہ میچ 24 رنز سے ہار گیا۔

ٹرینٹ بولٹ کو ان کی بہترین کارکردگی کے لیے مین آف دا میچ قرار دیا گيا۔

متعلقہ عنوانات

اسی بارے میں