اگر کوئی نیا کیس سامنے نہیں آتا تو پی ایس ایل کے دوران دیگر کھلاڑیوں کو معطل نہیں کر رہے: نجم سیٹھی

تصویر کے کاپی رائٹ AFP

پاکستان سپر لیگ کے چیئرمین نجم سیٹھی نے کہا ہے کہ اگر کوئی نیا کیس سامنے نہیں آتا تو پی ایس ایل کے دوران دیگر کھلاڑیوں کو معطل کرنے کا کوئی منصوبہ نہیں ہے۔

نجم سیٹھی نے یہ ٹویٹ شاہ زیب حسن، ذوالفقار بابر اور محمد عرفان کو پوچھ گچھ کے بعد کلیئر ہونے کے بعد دی ہے۔

’بک میکرز سے رابطہ‘: عرفان، ذوالفقار، شاہ زیب سے پوچھ گچھ

’بک میکرز سے رابطہ‘: شرجیل خان اور خالد لطیف معطل

’کیوں شرجیل اور خالد لطیف کیوں؟‘

پاکستان کرکٹ بورڈ نے ان تینوں کھلاڑیوں سے پوچھ گچھ کے بعد کلیئر کیا اور انہیں پاکستان سپر لیگ کھیلنے کی اجازت دے دی۔

واضح رہے کہ پاکستان سپر لیگ کے دوران بک میکرز مافیا کی جانب سے پاکستانی کرکٹرز سے رابطے کے بعد پاکستان کرکٹ بورڈ نے اسلام آباد یونائیٹڈ کے شرجیل خان اور خالد لطیف کو معطل کرکے وطن واپس بھیج دیا تھا۔

نجم سیٹھی نے ٹویٹ میں کہا ہے 'اگر کوئی نیا کیس سامنے نہیں آتا تو پاکستان سپر لیگ میں مزید کسی کھلاڑی کو معطل نہیں کیا جا رہا ہے۔'

ان کا مزید کہنا ہے 'ایکشن اس صورت میں لیا جائے گا اگر بدعنوانی کروانے کی کوشش اور خراب کرنے کی کوشش کو رپورٹ نہ کیا گیا۔'

پی ایس ایل کے چیئرمین نے کہا کہ میڈیا قیاس آرائیاں نہ کریں۔

'پلیئرز ریلیکس ہو جائیں، کرکٹ کھیلیں اور ملک اور بیرون ملک لاکھوں مداحوں کے لیے خوشی کا سبب بنیں۔'

تصویر کے کاپی رائٹ AFP

واضح رہے کہ پاکستان سپر لیگ کے دوران بک میکرز مافیا کی جانب سے پاکستانی کرکٹرز سے رابطے کے بعد پاکستان کرکٹ بورڈ نے اسلام آباد یونائیٹڈ کے شرجیل خان اور خالد لطیف کو معطل کرکے وطن واپس بھیج دیا تھا۔

پاکستان کرکٹ بورڈ کا کہنا ہے کہ ان دونوں کرکٹرز کے خلاف ٹھوس شواہد موجود ہیں۔

پاکستان کرکٹ بورڈ نے دونوں کرکٹرز کی معطلی کے بعد شاہ زیب حسن، ذوالفقار بابر اور محمد عرفان سے پوچھ گچھ کی تھی۔

محمد عرفان پوچھ گچھ کے بعد ہفتے کے روز لاہور قلندر کے خلاف میچ نہیں کھیلے۔

تصویر کے کاپی رائٹ AFP