تیسرا ون ڈے پاکستان کے نام، امام الحق کی سنچری

پاکستانی بیٹنگ کی خاص بات اپنا پہلا میچ کھیلنے والے امام الحق کی 124 گیندوں پر سنچری تھی۔ تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images
Image caption پاکستانی بیٹنگ کی خاص بات اپنا پہلا میچ کھیلنے والے امام الحق کی 124 گیندوں پر سنچری تھی۔

ابوظہبی کے شیخ زید سٹیڈیم میں پاکستان نے سری لنکا کو تیسرے ون ڈے میں سات وکٹوں سے ہرا کر پانچ میچوں کی سیریز اپنے نام کر لی ہے۔

سری لنکا نے پہلے بیٹنگ کرتے ہوئے پاکستان کو 209 رنز کا ہدف دیا تھا جو پاکستان نے 43ویں اوور میں تین وکٹوں کے نقصان پر مکمل کر لیا۔

پاکستانی بیٹنگ کی خاص بات اپنا پہلا میچ کھیلنے والے امام الحق کی 124 گیندوں پر سنچری تھی۔ انھوں نے 5 چوکے اور دو چھکے مارے ہیں۔ وہ دوسرے پاکستانی بلے باز ہیں جنھوں نے ایک روزہ میچوں میں ڈیبیو پر سنچری کی ہے۔ اس سے پہلے سلیم الٰہی کے پاس یہ اعزاز ہے۔

پاکستان کی طرف سے سب سے پہلے آؤٹ ہونے والے کھلاڑی فخرزمان تھے جنھوں نے 29 رنز بنائے تھے۔ ان کی وکٹ وانڈرسے نے حاصل کی۔

پاکستان کے دوسرے آؤٹ ہونے والے بیٹسمین بابر اعظم تھے جنھوں نے 30 رنز بنائے اور وہ گاماگے کی بال پر آؤٹ ہوئے۔

میچ کا تفصیلی سکور کارڈ

سری لنکا نے پہلے بیٹنگ کرتے ہوئے 208 رنز بنائے اور اس کے تمام کھلاڑی آؤٹ ہو گئے۔ پاکستانی بولر حسن علی نے 34 رنز دے کر پانچ کھلاڑیوں کو آؤٹ کیا جب کہ شاداب خان نے 37 رنز کے عوض دو وکٹیں حاصل کیں۔ محمد حفیظ اور جنید خان کے حصے میں ایک ایک وکٹ آئی۔

حسن علی اس میچ میں پانچ وکٹیں لینے کے بعد سب سے تیزی سے 50 وکٹیں حاصل کرنے والے پاکستانی بولر بن گئے ہیں۔

آؤٹ ہونے والے پہلے کھلاڑی ڈک ویلا تھے جنھیں حسن علی نے 18 کے سکور پر آؤٹ کیا۔ سری لنکا کے آؤٹ ہونے والے دوسرے کھلاڑی دنیش چندی مل تھے جنھیں شاداب خان نے 19 کے سکور پر ایل بی ڈبلیو کیا۔ آؤٹ ہونے والے تیسرے کھلاڑی اُپل تھرنگا تھے جو شاداب خان کی بال پر فخر زمان کے ہاتھوں 61 رنز کے سکور پر کیچ آؤٹ ہوئے۔

آؤٹ ہونے والے چوتھے سری لنکن بیٹسمین کپو گیدرا تھے جن کا کیچ علی حسن نے اپنی ہی بال پر پکڑا جب وہ 18 رنز پر کھیل رہے تھے۔ کھیلوں کی نامہ نگار زینب عباس نے حسن علی بولنگ کے بارے میں کہا ہے کہ انھوں نے کھیل کا نقشہ بدل دیا۔

آؤٹ ہونے والے پانچویں بیٹسمین سری وردنا تھے جنھیں جنید خان نے دو رنز پر آؤٹ کیا۔آؤٹ ہونے والے چھٹے کھلاڑئ وینڈرسے تھے جو جنید خان کی بال پر سرفراز کے ہاتھوں بغیر کوئی رن بنائے کیچ آؤٹ ہوئے۔سری لنکا کے ساتویں بیٹسمین تھریمانے تھے جو محمد حفیظ کی بال پر سرفراز کے ہاتھوں کیچ آؤٹ ہوئے۔ انھوں نے 28 رنز بنائے تھے۔آٹھویں سری لنکن کھلاڑی اکیلا دھاننجیا تھے جو حسن علی کی بال پر سرفراز کے ہاتھوں کیچ آؤٹ ہوئے۔ وہ صرف ایک رن ہی بنا سکے۔

چمیرا 10 رنز بنا کر حسن علی کی بال پر سرفراز کے ہاتھوں کیچ آؤٹ ہوئے۔

سری لنکن بیٹسمینوں نے آغاز سے ہی جارحانہ انداز اپنایا ہے اور پوری اننگز میں 16 چوکے لگائے ہیں۔سری لنکا نے ٹاس جیت کر پہلے بیٹنگ کرنے کا فیصلہ کیا تھا۔

پاکستان اور سری لنکا نے اس میچ کے لیے اپنی ٹیموں میں دو، دو تبدیلیاں کی ہیں۔

پاکستانی ٹیم میں احمد شہزاد اور عماد وسیم کی جگہ امام الحق اور فہیم اشرف کو کھلایا گیا ہے۔

یہ امام الحق کے کریئر کا پہلا ایک روزہ کرکٹ میچ ہے۔ سابق پاکستانی فاسٹ بالر شعیب اختر نے ٹویٹ کر کے امام الحق کو کرکٹ کی دنیا میں خوش آمدید کہا ہے۔

پانچ ایک روزہ میچوں کی سیریز میں پاکستان کو دو صفر کی برتری حاصل ہے۔ تیسرا میچ جیت کر پاکستان ون ڈے سیریز اپنے نام کرسکتی ہے۔

پاکستانی کھلاڑیوں کے نام:

سرفراز احمد(کپتان)، امام الحق، فخر زمان، بابر اعظم، محمد حفیظ، شعیب ملک، شاداب خان، فہیم اشرف، حسن علی، رومان رئیس اور جنید خان۔

سری لنکن کھلاڑیوں کے نام:

اُپل تھارنگا(کپتان)، نروشن ڈِک ویلا، لہیرو تھریمانے، دنیش چندیمل، چمارا کپوگیدرا، ملندا سریوردنا، تھسارا پریرا، دشمناتھا چمیرا، اکیلا دھاننجیا، وشوا فرنینڈو اور لہیرو گماگے۔

متعلقہ عنوانات

اسی بارے میں