شمالی کوریا کی فٹبال ٹیموں کو جاپان آنے کی اجازت مل گئی

فٹ بال تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images
Image caption ای ون فٹبال چیمپینشپ جمع کو شروع ہونے جا رہی ہے۔

جاپان نے شمالی کوریا کے مردوں اور خواتین کی فٹبال ٹیموں کو ٹوکیو میں منعقد ہونے والے فٹبال ٹورنامنٹ میں حصہ لینے کی اجازت دے دی ہے۔ بیجنگ میں جاپانی سفارتخانے سے ویزا لینے کے بعد آج شمالی کوریا کے کھلاڑی ٹوکیو پہنچ گیے۔

شمالی کوریا کے جوہری ہتھیار بنانے کی مخالفت میں جاپان کی جانب سے یکطرفہ پابندیوں کے تحت عام طور پر شمالی کوریا کے کھلاڑیوں کو جاپان آنے کی اجازت نہیں ملتی ہے۔ لیکن اس مرتبہ ٹیموں کو خصوصی ویزا دیا گیا ہے۔

آج جب شمالی کوریا کی ٹیمیں ٹوکیو پہنچ گئی ہیں تو وہاں رہنے والے کوریائی نسل کے افراد نے شمالی کوریا کی ٹیموں کا نعروں کے ساتھ استقبال کیا۔

یہ بھی پڑھیے

شمالی کوریا کا نیا میزائل، ’امریکہ کا کوئی حصہ محفوظ نہیں‘

شمالی کوریا دہشتگردی کا معاون ملک ہے: امریکہ

سرکاری ذرائع کے مطابق جاپانی حکومت نے ایسٹ ایشیا فٹبال ٖفیڈریشن کی عنقریب ای ون فٹبال چیمپین شپ میں حصہ لینے کے لیے شمالی کوریا کی مردوں اور خواتین کی فٹبال ٹیموں کو چار دسمبر کو ویزے دیے۔

شمالی کوریا کے ساتھ سفارتی تعلقات نہیں رکھنے والے جاپان نے بیجنگ میں اپنے سفارت خانے سے شمالی کوریا کے کھلاڑیوں کے ویزا جاری کیے۔

یہ بھی پڑھیے

فیفا ورلڈ کپ کے گروپس کا اعلان، بڑی ٹیموں کے لیے آسان راستے

2018 فٹ بال ورلڈ کپ کے آفیشل فٹ بال کا اعلان

فیفا رینکنگ میں فلسطینی ٹیم اسرائیل سے اوپر

دو دسمبر کو شمالی کوریا کے کھلاڑی بیجنگ پہنچے تھے جہاں سے ویزے حاصل کرنے کے بعد آج وہ ٹوکیو پہنچے۔

ای ون فٹبال چیمپینشپ جمع یعنی آٹھ دسمبر کو شروع ہونے جا رہی ہے۔ اس ٹورنامنٹ میں شمالی کوریا اور جاپان کے علاوہ چین اور جنوبی کوریا کی ٹیمیں بھی شرکت کر رہی ہیں۔

متعلقہ عنوانات

اسی بارے میں