پی ایس ایل نوجوان کرکٹرز کو سامنے لانے کا اہم پلیٹ فارم: وسیم اکرم

وسیم اکرم تصویر کے کاپی رائٹ AFP

پاکستان کے سابق فاسٹ بولر وسیم اکرم کا کہنا ہے کہ پاکستان سپر لیگ نے نوجوان کرکٹرز کی صلاحیتوں کے اظہار میں انتہائی اہم کردار ادا کیا ہے اور انہیں امید ہے کہ یہ سلسلہ آئندہ بھی جاری رہے گا۔

ٹیسٹ اور ون ڈے انٹرنیشنل میں پاکستان کی طرف سے سب سے زیادہ وکٹیں حاصل کرنے والے وسیم اکرم پاکستان سپر لیگ میں پہلی بار شامل ہونے والی ٹیم ملتان سلطانز کے ڈائریکٹر آف کرکٹ ہیں۔

وسیم اکرم نے بی بی سی اردو کو دیے گئے انٹرویو میں کہا کہ پاکستان سپر لیگ کے سلسلے میں صرف وہ ہی نہیں بلکہ پوری پاکستانی قوم بہت زیادہ پرجوش ہے کیونکہ یہ سارے پاکستانیوں کی کرکٹ ہے۔

اس بارے میں مزید پڑھیے

پی ایس ایل: غیرملکی کرکٹرز میں کون دھاک بٹھائے گا؟

پاکستان سپر لیگ میں کون سی ٹیم کتنی مضبوط؟

پی ایس ایل 3 کے باصلاحیت نوجوان کرکٹرز

وسیم اکرم کا کہنا ہے کہ گذشتہ دونوں پاکستان سپر لیگ میں پاکستانی ٹیم کو دو بہت ہی باصلاحیت کرکٹرز حسن علی اور شاداب خان ملے جو انٹرنیشنل کرکٹ میں بہت ہی زبردست کارکردگی کا مظاہرہ کر رہے ہیں جس سے یہ ظاہر ہوتا ہے کہ پی ایس ایل نوجوان کرکٹرز کو سامنے لانے کا اہم پلیٹ فارم ہے۔

وسیم اکرم نے کہا کہ وہ ملتان سلطانز کی ٹیم میں شامل ایمرجنگ کیٹگری کے دونوں نوجوان کرکٹرز کو یہ ہی کہتے ہیں کہ آپ کے ذہن میں ایک مقصد ہونا چاہیے کہ اس پی ایس ایل میں اچھی کارکردگی دکھا کر بہترین ایمرجنگ کرکٹر کا ایوارڈ حاصل کرنا ہے۔

وسیم اکرم کا کہنا ہے کہ ملتان سلطانز میں ان کی سب سے اہم ذمہ داری یہ ہے کہ ہر کرکٹر پر انفرادی طور پر توجہ دے کر انہیں کسی بھی قسم کے دباؤ سے دور رکھیں تاکہ وہ یکسوئی سے اچھی کارکردگی دکھا سکیں۔ کھیل میں ہار جیت ہوتی ہے لیکن ملتان سلطانز کی کوشش ہوگی کہ آخری گیند تک مقابلہ کرے۔

وسیم اکرم کا کہنا ہے کہ ملتان سلطانز صرف ملتان شہر ہی نہیں بلکہ پورے جنوبی پنجاب میں مقبول ہو چکی ہے جس کی ایک جھلک ملتان سٹیڈیم میں کھیلے گئے نمائشی میچ میں نظر آئی تھی۔

متعلقہ عنوانات

اسی بارے میں