کراچی گنگز اسلام آباد یونائیٹڈ کو سات وکٹوں سے شکست دے کر پلے آف رؤانڈ میں پہنچ گئی

پاکستان، کرکٹ تصویر کے کاپی رائٹ PSL
Image caption کراچی کنگز نے اس اہم میچ میں ٹاس جیت کر پہلے بولنگ کرنے کا فیصلہ کیا۔

پاکستان سپر لیگ کے تیسرے ایڈیشن میں جمعے کو کھیلے جانے والے دوسرے میچ میں کراچی گنگز نے اسلام آباد یونائیٹڈ کو سات وکٹوں سے شکست دے کر پلے آف راؤنڈ کے لیے کوالیفائی کر لیا ہے۔

شارجہ میں کھیلے جانے والا یہ میچ کراچی کنگز کے لیے انتہائی اہم تھا کیونکہ اگر کراچی گنگز یہ میچ ہار جاتی ہے تو وہ ٹورنامنٹ سے باہر ہو سکتی تھی۔

کراچی کنگز نے اس اہم میچ میں ٹاس جیت کر پہلے بولنگ کرنے کا فیصلہ کیا۔

اسلام آباد یونائیٹڈ نے مقررہ 20 اوورز بھی پورے نہیں کھیلے اور 19 اوورز میں 124 رنز پر ساری ٹیم آؤٹ ہو گئی۔

کراچی گنگز کے بالروں نے بہترین بولنگ سے اسلام آباد یونائیٹڈ کے بیٹمسین کو دباؤ میں رکھا۔

عثمان شنواری نے چار، شاہد آفریدی اور محمد عرفان نے دو دو وکٹیں لیں۔

شاندار بولنگ پر عثمان شنواری کو مین آف دی میچ قرار دیا گیا۔

125 رنز کے تعاقب میں کراچی نے بیٹنگ شروع کی تو اوپنر خرم منظور اور ڈینلی نے اچھی بنیاد بنائی۔

تصویر کے کاپی رائٹ PSL
Image caption اسلام آباد یونائیٹڈ کے کپتان مصباح 19 رنز بنا سکے اور انھیں آفریدی نے آؤٹ کیا

کراچی گنگز کی پہلے وکٹ 33 کے مجموعی سکور پر اُس وقت گری جب خرم منظور 15 رنز بنا کر آؤٹ ہو گئے۔ اُس کے بعد بابر اعظم آنے جنھوں نے ڈینلی کے ساتھ مل کر اچھے شارٹس کھیلے۔

ڈینلی نے 36 رنز بنائے اور انھیں فہیم اشرف نے بولڈ کیا۔ کپتان مورگن دو رنز بنا کر آؤٹ ہو گئے۔

اسلام آباد یونائیٹڈ کا آغاز شروع سے ہی اچھا نہیں تھا اور اس کے 63 رنز پر پانچ کھلاڑی آؤٹ ہو چکے تھے۔ اننگز میں سب سے نمایاں سکور آصف علی کا تھا جو 34 رن بنا سکے۔

اسلام آباد یونائیٹڈ کی جانب سے فن، شاداب خان اور فہیم اشرف نے ایک ایک وکٹ لی۔

اسلام آباد یونائیٹڈ نے اس میچ کے لیے ٹیم میں تین تبدیلیاں کی تھیں۔ لک رانکی، سمت پٹیل اور محمد سمیع نے یہ میچ نہیں کھیلا اور ان کی جگہ سٹیون فن، ظفر گوہر اور والٹن کو ٹیم میں شامل کیا تھا۔

دوسری جانب کراچی کنگز کی طرف سے آج بھی عماد وسیم میچ نہیں کھیلا

اس سے قبل آج ہی کھیلے گئے پہلے میچ میں پشاور زلمی نے لاہور قلندرز کو سات وکٹوں سے شکست دے کر پلے آف مرحلے کے لیے کوالیفائی کر لیا ہے۔

پشاور زلمی نے 172 رنز کا ہدف 18 اووروں میں تین وکٹوں کے نقصان پر حاصل کر لیا جس میں کامران اکمل نے عمدہ اننگز کھیلتے ہوئے سنچری سکور کی۔

متعلقہ عنوانات

اسی بارے میں