یاسر شاہ انجرڈ، دورۂ انگلینڈ اور آئرلینڈ کے لیے دستیاب نہیں ہوں گے

یاسر شاہ تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images
Image caption 31 سالہ لیگ سپنر اب تک 28 ٹیسٹ میچوں میں 165 وکٹیں حاصل کر چکے ہیں

پاکستان کرکٹ ٹیم کے دورۂ آئرلینڈ اور انگلینڈ سے قبل لیگ سپنر یاسر شاہ کولہے کی ہڈی میں تکلیف کے باعث اس دورے کے لیے دستیاب نہیں ہوں گے۔

31 سالہ لیگ سپنر سنہ 2014 سے پاکستانی ٹیسٹ ٹیم کا حصہ ہیں اور اب تک 28 ٹیسٹ میچوں میں 165 وکٹیں حاصل کر چکے ہیں۔

خبررساں ادارے اے ایف پی کے مطابق چیف سلیکٹر انضمام الحق نے تصدیق کی ہے کہ یاسر شاہ آئرلینڈ اور انگلینڈ کے دورے کے لیے دستیاب نہیں ہوں گے۔

انضمام الحق نے مقامی ذرائع ابلاغ کو بتایا کہ ’یاسر شاہ آئرلینڈ اور انگلینڈ کے ٹیسٹ دوروں کا حصہ نہیں ہوں گے اور یہ بہت بڑا دھچکا ہے۔‘

’یہ ٹیم کے لیے بہت بڑا نقصان ہے۔‘

میڈیکل رپورٹس کے مطابق یاسر شاہ کی کولہے کی ہڈی میں تکلیف ہے اور انھیں چار ہفتے آرام کرنا ہوگا اور مکمل بحالی میں مزید چھ ہفتے لگ جائیں گے۔

انضمام الحق کا کہنا ہے کہ اس کمی کو پورا کرنے کے لیے نوجوان لیگ سپنر شاداب خان، آف سپنر بلال آصف اور لیف آرم سپنر کاشف بھٹی کو بلایا گیا ہے۔

شاداب خان نے بارباڈوس میں ویسٹ انڈیز کے خلاف اپنا واحد ٹیسٹ کھیلا تھا جس میں انھوں نے ایک وکٹ حاصل کی جبکہ دیگر دو کھلاڑیوں نے کوئی ٹیسٹ نہیں کھیلا۔

تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images
Image caption سنہ 2016 میں یاسر شاہ نے لارڈز کے میدان پر تاریخی ٹیسٹ میچ میں دس وکٹیں حاصل کی تھیں

مئی 2016 سے اب تک یاسر شاہ نے پاکستان کی جانب سے 17 میں سے 16 ٹیسٹ میچ کھیل کر 89 وکٹیں حاصل کی ہیں۔

سنہ 2016 میں یاسر شاہ نے لارڈز کے میدان پر تاریخی ٹیسٹ میچ میں دس وکٹیں حاصل کی تھیں اور اس میچ میں کامیابی سے پاکستان انگلینڈ ‌کے خلاف ٹیسٹ سیریز 2-2 سے برابر کرنے میں کامیاب ہوا تھا۔

یاسر شاہ نے صرف 17 میچوں میں اپنی 100 ٹیسٹ وکٹیں جبکہ 27 میچوں میں 150 ٹیسٹ وکٹیں حاصل کی تھیں جو کسی بھی پاکستانی کھلاڑی کا یہ سنگ میل عبور کرنے کا دوسرا تیز ترین ریکارڈ ہے۔

پاکستان اور آئرلینڈ کے درمیان واحد ٹیسٹ میچ 11 مئی سے 15 مئی کو ڈبلن میں کھیلا جائے جبکہ انگلینڈ کے خلاف دو ٹیسٹ میچوں کی سیریز کا پہلا میچ 24-28 مئی کو لارڈز اور دوسرا یکم جون سے پانچ جون کو لیڈز میں کھیلا جائے گا۔

متعلقہ عنوانات

اسی بارے میں