ہاکی کے سابق گول کیپر منصور احمد کی علاج کے لیے انڈیا سے اپیل

منصور احمد

پاکستانی ہاکی ٹیم کے سابق گول کیپر منصور احمد نے انڈین حکومت سے انسانی ہمدردی کی بنیاد پر اپیل کی ہے کہ وہ دل کی پیوند کاری کے سلسلے میں ان کی مدد کرے۔

منصور احمد خاصے عرصے سے عارضۂ قلب میں مبتلا ہیں اور اس وقت وہ کراچی میں امراض قلب کے قومی ادارے میں زیرعلاج ہیں جہاں ان کی حالت اچھی نہیں ہے۔

اسی بارے میں

انڈیا کے میڈیکل ویزے پاکستانی مریضوں کی امید

'انڈیا کے سبب ایک پاکستانی دل دھڑکے گا'

منصور احمد نے بی بی سی اردو کو بتایا کہ جمعے کی رات ان کی طبیعت بگڑ گئی تھی جس کے بعد انھیں دوبارہ اسپتال میں داخل کیا گیا۔

ڈاکٹروں کا خیال ہے کہ دل کی پیوند کاری سے ان کی حالت میں بہتری آ سکتی ہے اور یہ علاج اس وقت انڈیا میں کامیابی سے ہو رہا ہے۔

منصور احمد نے انڈین حکومت خصوصاً وزیرخارجہ سشما سوراج سے اپیل کی ہے کہ وہ ان کے ویزے اور علاج کے سلسلے میں انسانی ہمدردی پر غور کریں۔

منصور احمد نے، جو ان دنوں سانس لینے میں تکلیف کے سبب بہت کم بات کر پا رہے ہیں، کہا کہ انھوں نے انڈیا کی سرزمین پر متعدد میچ پاکستان کے لیے جیت کر یقیناً بھارتیوں کے دل توڑے ہوں گے لیکن اس وقت اس مشکل وقت میں انہیں دل کی ضرورت ہے۔

منصور احمد کے علاج و معالجے کے سلسلے میں ان دنوں کرکٹر شاہد آفریدی گہری دلچسپی لے رہے ہیں اور انھوں نے منصور احمد کے گھر جاکر ان کی عیادت کرتے ہوئے ان کے علاج کے تمام اخراجات برداشت کرنے کا اعلان کیا تھا۔

یاد رہے کہ منصور احمد کی شاندار گول کیپنگ نے 1994 میں پاکستان کو سڈنی میں عالمی کپ جتوایا تھا۔

اسی سال ان کی گول کیپنگ نے پاکستان کو لاہور میں چیمپیئنز ٹرافی جتوانے میں بھی فیصلہ کن کردار ادا کیا تھا۔

اسی بارے میں