ڈبلن ٹیسٹ کا پہلا روز بارش کی نذر

میلاہائیڈ کرکپ کلب تصویر کے کاپی رائٹ Inpho
Image caption میلا ہائیڈ کرکپ سٹیڈیم کا منظر

ڈبلن میں پاکستان اور آئرلینڈ کے درمیان طویل انتظار کے بعد پہلا ٹیسٹ میچ شروع نہیں ہو سکا اور رکاوٹ خراب موسم اور بارش بنی ہے۔

امپائرز نے بارش کے باعث اعلان کیا ہے کہ پہلے ٹیسٹ میچ کے پہلے دن کا کھیل نہیں ہو گا۔

اس سے قبل گرینچ کے مقامی وقت کے مطابق میچ کو صبح گیارہ بجے شروع ہونا تھا مگر پھر امپائرز نے فیصلہ کیا کہ کھانے سے پہلے کوئی کھیل نہیں ہوگا۔

آئر لینڈ کے خلاف ٹیسٹ میچ کے بعد پاکستان 24 مئی سے انگلینڈ کے خلاف دو ٹیسٹ میچوں کی سیریز کھیلے گا اور تین ٹی ٹوئنٹی میچ سکاٹ لینڈ میں کھیلے گا۔

مزید پڑھیے

آئرلینڈ کے خلاف میچ ہو اور 2007 کا ورلڈ کپ ذہن میں نہ آئے

پاکستان بمقابلہ آئرلینڈ: ’تاریخ نہ دہرانے کا سنہری موقع‘

2007 کے ورلڈ کپ کے میچ میں پاکستان کے خلاف غیر معمولی کامیابی کے بعد یہ پہلا موقع ہے کہ دونوں ٹیمیں مدمقابل ہوئی ہیں۔

انگلینڈ کے سابق فاسٹ بالر بوئد رینکن آئرلینڈ کے سکواڈ میں شامل ہیں اور پرامید ہیں کہ وہ 25 سال میں دونوں ملکوں کے لیے کھیلنے والے پہلے کھلاڑی کا اعزاز حاصل کریں گے۔

سینیئر بلے باز ایڈ جوئسی جنھوں نے انگلینڈ کی جانب سے سنہ 2006 سے 2007 کے دوران 17 ایک روزہ میچز کھیلے تھے بھی ڈبلن میں اپنا پہلا ٹیسٹ میچ کھیلیں گے۔

آئرلینڈ سکواڈ: ولیم پورٹرفیلڈ (کپتان) اینڈریو بالبرنی، ایڈ جوئس، ٹائرون کین، اینڈریو میکبرین، ٹم مرتاغ، کیون او برائن، نیل او برائن (وکٹ کیپر) بوئد رینکن، جیمز شینن، کریگ ینگ، پال سٹرلنگ، سٹوئرٹ تھامسن، گیری ولسن۔

پاکستانی سکواڈ:

سرفراز احمد (کپتان، وکٹ کیپر) اظہر علی، امام الحق، سمیع اسلم، حارث سہیل، بابر اعظم، فخر زمان، سعد علی، اسد شفیق، عثمان صلاح الدین، شاداب خان، محمد عامر، محمد عباس، حسن علی، راحت علی، فہیم اشرف

تصویر کے کاپی رائٹ Inpho
Image caption مالا ہائیڈ کرکٹ کلب میں وکٹ کو بارش سے بچانے کے لیے کور کر دیا گیا ہے

.

متعلقہ عنوانات

اسی بارے میں