لارڈز ٹیسٹ: پاکستانی بالروں کی عمدہ کارکردگی کے بعد بلے بازوں کا محتاط آغاز

کرکٹ تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images
Image caption پاکستان چار فاسٹ بولروں کے ساتھ میدان میں اترا ہے

لندن میں لارڈز کے میدان میں پاکستان اور انگلینڈ کے درمیان دو کرکٹ ٹیسٹ میچوں کی سیریز کے پہلے میچ میں پہلے دن کا کھیل ختم ہو چکا ہے۔

دن کے اختتام پر پاکستان نے انگلینڈ کے سکور 184 رنز کے مقابلے میں ایک وکٹ کے نقصان پر 50 رنز بنا لیے تھے۔

کریز پر حارث سہیل 21 اور اظہر علی 18 رنز کے انفرادی سکور پر موجود تھے۔

پاکستان کی اننگز کا آغاز بھی اچھا نہیں تھا اور امام الحق صرف چار رنز بنا کر سٹوارٹ براڈ کی گیند پر ایل بی ڈبلیو آؤٹ ہوگئے۔

میچ کا تفصیلی سکور کارڈ

اس سے قبل انگلینڈ کی ٹیم اپنی پہلی اننگز میں 184 رنز بنا کر آؤٹ ہوگئی تھی۔

پاکستان کی جانب سے حسن علی اور محمد عباس نے عمدہ بولنگ کا مظاہرہ کرتے ہوئے چار، چار وکٹیں حاصل کیں جبکہ محمد عامر اور فہیم اشرف نے ایک، ایک کھلاڑی کو آؤٹ کیا۔

انگلینڈ کی جانب سے السٹر کک 70 رنز کے ساتھ نمایاں رہے تھے۔

انگلینڈ‌ نے ٹاس جیت کر پہلے بیٹنگ کا فیصلہ کیا تو الیسٹر کک اور مارک سٹون مین نے اننگز کا آغاز کیا۔ پاکستان کو پہلی کامیابی جلد ہی مل گئی جب محمد عباس نے مارک سٹون مین کو 12 کے مجموعی سکور پر بولڈ کر دیا۔ وہ صرف چار رنز بنا سکے۔

33 کے مجموعی سکور پر پاکستان کو دوسری کامیابی اس وقت ملی جب حسن علی کی گیند پر جو روٹ چار رنز بنا کر وکٹوں کے پیچھے سرفراز احمد کو کیچ دے بیٹھے۔

تیسری وکٹ 43 کے سکور پر گری جب ڈیوڈ ملان چھ رنز بنا کر حسن علی کی دوسری وکٹ بنے۔

تصویر کے کاپی رائٹ Reuters
Image caption محمد عامر نے کک کو 70 کے انفرادی سکور پر بولڈ کیا

کھانے کے وقفے کے بعد 100 کے مجموعی سکور پر فہیم اشرف نے جونی بیئرسٹو کو بولڈ کر دیا، انھوں نے 27 رنز بنائے۔

محمد عامر نے کک کو 70 کے انفرادی سکور پر بولڈ کیا تو انگلینڈ کا مجوعی سکور 150 تھا۔

بین سٹوکس 38 رنز بنا کر محمد عباس کی دوسری وکٹ بنے۔ اس کے اگلے ہی اوور میں حسن علی نے جوس بٹلر کو آؤٹ کر دیا، اسد شفیق نے دوسری سلپ میں ان کا عمدہ کیچ لیا۔

اپنا پہلا میچ کھیلے والے ڈوم بیس پانچ رنز بناسکے، انھیں محمد عباس نے آؤٹ کیا۔ اسی اوور میں انھوں نے سٹوارٹ براڈ کو صفر پر ایل بی ڈبلیو آؤٹ کیا تو انگلینڈ ‌کا سکور 180 تھا۔

اس کے اگلے اوور میں حسن علی نے مارک ووڈ کو آؤٹ کر کے انگلینڈ کی اننگز 184 رنز پر سمیٹ دی

اس سے قبل ٹاس کے وقت انگلینڈ کے کپتان جو روٹ کا کہنا تھا کہ پچ کے حالات بولنگ کے لیے سازگار ہیں لیکن یہ وقت گزرنے کے ساتھ خشک ہو جائے گی۔

تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images
Image caption حسن علی نے پاکستان کو عمدہ آغاز فراہم کیا

انگلینڈ‌ کی جانب سے 20 سالہ آف سپنر ڈوم بیس اپنا پہلا بین الاقوامی ٹیسٹ میچ کھیل رہے ہیں جنھیں کرس ووکس کی جگہ ٹیم میں شامل کیا گیا ہے۔

دوسری جانب پاکستان چار فاسٹ بولروں کے ساتھ میدان میں اترا ہے۔

انگلینڈ کی ٹیم: الیسٹر کک، جو روٹ، ڈیوڈ ملان، جونی بیئرسٹو، بین سٹوکس، جوس بٹلر، مارک ووڈ، ڈوم بیس، سٹوارٹ براڈ اور جیمز اینڈرسن۔

پاکستان کی ٹیم: اظہر علی، امام الحق، حارث سہیل، اسد شفیق، بابر اعظم، سرفراز احمد، شاداب خان، فہیم اشرف، محمد عامر، حسن علی اور محمد عباس۔

پاکستان اور انگلینڈ‌ کے مابین اب تک 81 ٹیسٹ میچ کھیلے جا چکے ہیں جن میں 24 انگلینڈ نے اور 20 پاکستان نے جیتے ہیں جبکہ بقیہ 37 میچ بغیر کسی نتیجے کے ختم ہوئے تھے۔

متعلقہ عنوانات

اسی بارے میں