لارڈز میں سلو اوور ریٹ پر پاکستانی ٹیم کو جرمانہ

پاکستانی کرکٹ ٹیم تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images
Image caption لارڈز میں پاکستانی کرکٹ ٹیم کے نوجوان ارکان نے بہترین کارکردگی کا مظاہرہ کیا

انٹرنیشنل کرکٹ کونسل نے پاکستان کی کرکٹ ٹیم پر انگلینڈ کے خلاف دو ٹیسٹ میچوں کی سیریز کے پہلے میچ کے دوران سلو اوور ریٹ پر جرمانہ عائد کیا ہے۔

لندن میں لارڈز کے تاریخی کرکٹ میدان پر کھیلا جانے والا یہ میچ پاکستان نے نو وکٹوں سے جیت لیا تھا۔

اس ٹیسٹ میچ میں آئی سی سی کے میچ ریفری جیف کرو نے پاکستان کو دیے گئے مقررہ وقت میں تین اوور کم کروانے پر یہ جرمانہ عائد کیا ہے۔

یہ بھی پڑھیے

سلو اوور ریٹ ، پاکستانی کرکٹ ٹیم پر جرمانہ

مصباح الحق ایک ٹیسٹ کے لیے معطل

ون ڈے ٹیم کے کپتان اظہر علی پر ایک میچ کی پابندی

آئی سی سی کے قوانین کے مطابق اس قسم کی تاخیر پر فی اوور دس فیصد میچ فیس بطور جرمانہ وصول کی جاتی ہے اور کپتان کو دگنا جرمانہ ہوتا ہے۔

چنانچہ اب پاکستان ٹیم کے کپتان سرفراز احمد کو اپنی 60 فیصد میچ فیس جبکہ باقی کھلاڑیوں کو 30 فیصد میچ فیس بطور جرمانہ ادا کرنا ہو گی۔

آئی سی سی کی جانب سے پیر کو جاری ہونے والے بیان میں کہا گیا ہے کہ سرفراز احمد کی جانب سے غلطی اور سزا قبول کر لینے کی وجہ سے باضابطہ سماعت کی ضرورت پیش نہیں آئی۔

تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images
Image caption نیٹ ویسٹ ٹیسٹ سیریز میں صرف دو میچ ہیں اور پاکستان کو اس میں ناقابلِ شکست ایک صفر کی برتری حاصل ہے

آئی سی سی کا یہ بھی کہنا ہے کہ اگر پاکستان سرفراز احمد کی کپتانی میں آئندہ ایک برس میں دوبارہ کسی ٹیسٹ میچ میں سلو اوور ریٹ کا مرتکب ہوتا ہے تو اس صورت میں سرفراز احمد کو ایک میچ کی معطلی کا سامنا بھی کرنا پڑ سکتا ہے۔

لارڈز کا میدان، انگلینڈ اور پاکستان

’جو لارڈز میں کھویا تھا، وہیں سے مل گیا‘

خیال رہے کہ اتوار کو ختم ہونے والے لارڈز ٹیسٹ میں فتح کے نتیجے میں پاکستان کو انگلینڈ کے خلاف سیریز میں ناقابلِ شکست برتری حاصل ہو گئی ہے۔

اس سیریز کا دوسرا اور آخری کرکٹ ٹیسٹ یکم جون سے لیڈز میں کھیلا جائے گا۔

متعلقہ عنوانات

اسی بارے میں