سہ فریقی ٹی 20: فنچ کی جارحانہ بلے بازی، آسٹریلیا کی پاکستان پر نو وکٹوں سے فتح

فنچ

،تصویر کا ذریعہGetty Images

،تصویر کا کیپشن

فنچ نے 33 گیندوں پر چھ چھکوں اور تین چوکوں کی مدد سے 68 رنز کی اننگز کھیلی اور ناٹ آؤٹ رہے

زمبابوے میں جاری سہ فریقی ٹی ٹوئنٹی ٹورنامنٹ کے دوسرے میچ میں آسٹریلیا نے ایرون فنچ کی جارحانہ بلے بازی کی بدولت پاکستان کو نو وکٹوں سے شکست دے دی ہے۔

پاکستان نے اس میچ میں فتح کے لیے آسٹریلیا کو 117 رنز کا ہدف دیا جو اس نے 11 اوورز میں باآسانی حاصل کر لیا۔

فنچ نے 33 گیندوں پر چھ چھکوں اور تین چوکوں کی مدد سے 68 رنز کی اننگز کھیلی اور ناٹ آؤٹ رہے۔

آسٹریلیا کی جانب سے شارٹ اور فنچ نے اننگز شروع کی اور فنچ نے دوسرے اوور میں ہی محمد نواز کو دو چھکے لگائے۔ دوسرے اینڈ سے شارٹ نے عثمان شنواری کو تختۂ مشق بنایا اور انھیں لگاتار تین چوکے لگائے۔

ان دونوں نے سکور تین اوورز میں 35 رنز تک پہنچا دیا تاہم چوتھے اوور کی دوسری ہی گیند پر حسن علی نے شارٹ کو حسین طلعت کے ہاتھوں کیچ کروا کے پاکستان کو پہلی کامیابی دلوا دی۔ انھوں نے 15 رنز بنائے۔

اس کے بعد فنچ نے ہیڈ کے ساتھ مل کر 82 رنز کی شراکت قائم کی اور اپنی ٹیم کو فتح دلوا دی۔ ہیڈ 20 رنز بنا ناٹ آؤٹ رہے۔

پاکستان کی جانب سے محمد نواز سب سے مہنگے بولر رہے جنھوں نے دو اوورز میں 22 رنز دیے جبکہ شاداب خان کو چار اووز میں 40 رنز پڑے۔

یہ بھی پڑھیے

اس سے قبل آسٹریلوی بولروں کی نپی تلی بولنگ کی بدولت پاکستانی ٹیم 116 رنز بنا کر آؤٹ ہو گئی تھی۔

پاکستان کی جانب سے شاداب خان نمایاں بلے باز رہے جنھوں نے 29 رنز بنائے۔ ان کے علاوہ آصف علی نے 22 اور فہیم اشرف نے 21 رنز بنا کر پاکستانی اننگز کو کچھ سہارا دیا۔

ان تینوں کے علاوہ پاکستان کے باقی تمام بلے بازوں کو ناکامی کا سامنا کرنا پڑا اور اس کی سب سے بڑی وجہ آسٹریلوی فاسٹ بولر بلی سٹین لیک تھے جنھوں نے اپنے کیریئر کی بہترین بولنگ کی اور چار اوورز میں آٹھ رنز دے کر چار کھلاڑی آؤٹ کیے۔

آسٹریلیا نے ٹاس کر پاکستان کو بیٹنگ کی دعوت دی تو اننگز کے آغاز پر محمد حفیظ گذشتہ میچ کی طرح ایک بار پھر ناکام ہوئے اور پہلے ہی اوور میں بغیر کسی رن کے آؤٹ ہو گئے۔

،تصویر کا ذریعہGetty Images

،تصویر کا کیپشن

بلی سٹین لیک نے اپنے چار اوورز میں چار وکٹیں حاصل کیں

اس کے بعد حسین طلعت کو دس رنز پر فنچ نے سلپ میں کیچ کر لیا اور تیسرے آؤٹ ہونے والے بلے باز فخر زمان تھے جنھوں نے چھ رنز بنائے۔

اس کے بعد سٹین لیک نے اپنے آخری اوور میں کپتان سرفراز احمد کو بھی سلپ میں کیچ آؤٹ کرا دیا جو صرف چار رنز بنا سکے۔

آصف علی نے مارکس سٹوئینس کے اوور کی پہلی ہی گیند پر چھکا لگایا لیکن دو بال کے بعد سٹوئینس نے بدلہ چکاتے ہوئے انھیں بولڈ کر دیا۔ آصف علی نے دو چھکوں کی مدد سے 22 رنز بنائے۔

پانچویں آؤٹ ہونے والے بلے باز شعیب ملک تھے جو 13 رنز بنا کر رن آؤٹ ہوئے۔

فہیم اشرف نے پاکستانی سکور کو بڑھانے کے لیے اپنی سی کوشش کی اور جارحانہ انداز اپناتے ہوئے 21 رنز بنائے۔ جھائے رچرڈسن نے ان کی وکٹ حاصل کی۔

واضح رہے کہ گذشتہ روز سیریز کے پہلی میچ میں پاکستان نے میزبان زمبابوے کو باآسانی 74 رنز سے شکست دے دی تھی۔