فٹبال ورلڈ کپ: دوسرے سیمی فائنل میں انگلینڈ کو شکست، کروشیا پہلی بار فائنل میں

تصویر کے کاپی رائٹ Reuters
Image caption کروشیا نے 1998 میں آخری بار سیمی فائنل کھیلا تھا جہاں اسے فرانس سے شکست ہوئی اور اب فائنل میں اس کا مقابلہ فرانس سے ہی ہے

روس میں جاری فٹبال ورلڈ کپ کے دوسرے سیمی فائنل میں کروشیا نے انگلینڈ کو دو ایک سے شکست دے کر فائنل کے لیے کوالیفائی کر لیا ہے جہاں اس کا مقابلہ فرانس سے ہو گا۔

بدھ کو ماسکو میں کھیلے جانے والے سیمی فائنل میں انگلینڈ نے میچ کے پانچویں منٹ میں گول کر کے کروشیا پر برتری حاصل کر لی۔

انگینڈ کے کھلاڑی کیرن ٹریپیئر نے فری کک پر شاندار گول کیا تو کروشیا کی ٹیم میچ کے ابتدا میں ہی دباؤ میں آ گئی۔

اس بارے میں مزید پڑھیے

پہلے سیمی فائنل میں بیلجیئم کو شکست،فرانس فائنل میں

انگلینڈ 28 سال بعد فٹ بال ورلڈ کپ کے سیمی فائنل میں

56 سال بعد کوارٹر فائنل میں پہنچنے پر جشن

میسی اور رونالڈو نے کن کی نیندیں اڑائی ہوں گی؟

کروشیا نے دباؤ کے باوجود مخالف ٹیم کے گول پوسٹ پر جوابی حملے جاری رکھے لیکن اسے کامیابی نہیں مل سکی تاہم انگینڈ کو میچ کے 30ویں منٹ میں گول کرنے کا عمدہ موقع ملا جب کپتان ہیری کین کروشیا کے گول کیپر کے عمدہ دفاع کی وجہ سے گول کرتے کرتے رہ گئے۔

میچ کے پہلے ہاف میں کروشیا برتری ختم کرنے میں اور انگلینڈ برتری دگنی کرنے میں ناکام رہا لیکن دوسرے ہاف میں میچ کے 68 منٹ میں کروشیا کے ایوان پریشیچ نے گول کر کے انگینڈ کی برتری ختم کر دی۔

دوسرے ہاف میں کروشیا کی ٹیم نے زیادہ جارحانہ انداز اپنایا جبکہ انگلینڈ نے قدرے دفاعی حکمت عملی اپنا رکھی تھی۔

تصویر کے کاپی رائٹ Reuters
Image caption انگلینڈ 28سال بعد ورلڈ کپ کا سیمی فائنل کھیل رہا تھا

میچ کے مقررہ وقت کے اختتام پر دونوں ٹیموں نے ایک ایک گول کر رکھا تھا اس وجہ میچ اضافی وقت میں چلا گیا جس کے پہلے ہاف میں بھی دونوں ٹیموں کو گول کرنے میں کامیابی نہیں ملی۔

اضافی وقت کے دوسرے ہاف میں اور میچ کے مجموعی طور پر 109ویں منٹ میں کروشیا کے ماریو ماندزوکیچ نے انگلینڈ کے دفاعی حصار کو توڑتے ہوئے شاندار گول کر دیا۔

تصویر کے کاپی رائٹ Reuters
Image caption انگلینڈ کو شکست کے بعد کروشیا کے حامیوں کا جشن

اس گول کے بعد میچ کے ختم ہونے میں چند منٹ ہی باقی تھے اور اس نے بھرپور کوشش کی کہ گول کا خسارہ ختم کیا جا سکے لیکن کروشیا کے عمدہ دفاع کی وجہ سے ایسا ممکن نہیں ہو سکا۔

خیال رہے کہ انگلینڈ 28سال بعد ورلڈ کپ کا سیمی فائنل کھیل رہا تھا جبکہ کروشیا نے 1998 میں آخری بار سیمی فائنل کھیلا تھا جہاں اسے فرانس کے ہاتھوں شکست کا سامنا کرنا پرا تھا اور اب 2018 کے ورلڈ کپ کے فائنل میں فرانس ہی اس کے مدمقابل ہے۔

فٹبال ورلڈ کپ کے پہلے سیمی فائنل میں فرانس نے بیلجیئم کو ایک صفر سے شکست دی تھی۔

متعلقہ عنوانات

اسی بارے میں