اینجلیق کربر نے سرینا ولیمز کو شکست دے کر اہنا پہلا ومبلڈن جیت لیا

ٹینس تصویر کے کاپی رائٹ AFP
Image caption سرینا ولیمز میچ ہارنے کے بعد اینجلیق کربر کو مبارکباد دے رہی ہیں

ومبلڈن میں خواتین کے فائنل مقابلے میں جرمنی کی اینجلیق کربر نے امریکہ سے تعلق رکھنے والی سات بار کی فاتح سرینا ولیمز کو 6-3 ، 6-3 سے شکست دے کر اپنا پہلا ومبلڈن ٹائٹل جیت لیا ہے۔

اینجلیق کربر کا یہ تیسرا گرینڈ سلیم ٹائٹل ہے جبکہ سرینا ولیمز اپنے 24ویں گرینڈ سلیم کے تعاقب میں تھیں۔

گذشتہ سال ستمبر میں ایک بچی کی ماں بننے کے بعد سرینا ولیمز کا یہ چوتھا ٹورنامنٹ تھا لیکن جس طرح سے انھوں نے کھیل کا مظاہرہ کیا تھا، کئی ماہرین انھیں فائنل کے لیے فیورٹ قرار دے رہے تھے لیکن 11ویں سیڈ کربر نے حیران کن کھیل پیش کرتے ہوئے کامیابی حاصل کر لی۔

1996 میں سٹیفی گراف کے بعد کربر ومبلڈن جیتنے والی پہلی جرمن خاتون ہیں۔

تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images
Image caption جوکووچ کا فائنل میں کیون اینڈرسن سے مقابلہ ہوگا

اس سے قبل مردوں کا دوسرا سیمی فائنل جمعے کو ملتوی ہونے کے بعد دوبارہ شروع ہوا اور سنسنی خیز مقابلے کے بعد سربیا کے نواک جوکووچ نے سپین کے رافیل نڈال کو پانچ گھنٹے کے بعد 6-4 3-6 7-6 (11-9) 3-6 10-8 سے شکست دے دی۔

جمعے کو میچ جب روکا گیا تھا تو اس وقت جوکووچ کو دو سیٹ کی سبقت حاصل تھی۔

17 گرینڈ سلیمز کا فاتح رافیل نڈال اور 12 گرینڈ سلیم کے فاتح جوکووچ کا 2015 کے بعد پہلی بار کسی گرینڈ سلیم میں مقابلہ ہو رہا تھا۔

تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images
Image caption 17 گرینڈ سلیمز کا فاتح رافیل نڈال اور 12 گرینڈ سلیم کے فاتح جوکووچ کا 2015 کے بعد پہلی بار کسی گرینڈ سلیم میں مقابلہ ہو رہا تھا۔

اتوار کو ہونے والے مردوں کے فائنل میں جوکووچ کا سامنا جنوبی افریقہ کے کیون اینڈرسن سے ہوگا جنھوں نے سیمی فائنل میں ساڑھ چھ گھنٹے کے مقابلے کے بعد امریکہ کے جان ازنر کو شکست دی تھی۔

متعلقہ عنوانات

اسی بارے میں