ایشیائی کھیلوں میں پہلی بار جگہ بنانے والے پانچ کھیل

ایشیائی ممالک کے ہزاروں کھلاڑی 18 اگست سے انڈونیشیا کے شہروں جکارتہ اور پالم بانگ میں شروع ہونے والے ایشیائی کھیلوں میں شرکت کے لیے تیار ہیں۔

ایشیائی کھیل ہر چار برس بعد منعقد ہوتے ہیں اور اس سال ان میں 45 ممالک کے کھلاڑی فٹبال سے لے کر کبڈی تک مختلف قسم کے کھیلوں میں حصہ لیں گے۔

ان میں سے کچھ کھیل ایسے بھی ہیں جو پہلی مرتبہ ایشیائی کھیلوں کا حصہ بنے ہیں۔ ان میں سے پانچ کھیل یہ ہیں۔

1۔ برج

Image caption برج کو عموماً ذہن کا کھیل سمجھا جاتا ہے

شطرنج کی طرح برج کو بھی ذہن کا کھیل سمجھا جاتا ہے اور یہ پہلا موقع ہے کہ یہ کھیل ایشیائی کھیلوں میں شامل کیا گیا ہے۔

ٹیم دو کھلاڑیوں پر مشتمل ہوتی ہے جو تاش کے 52 پتوں کی گڈی سے کھیلتی ہے۔

ہر ڈیل کا مقصد دیے گئے کارڈز کے ساتھ سب سے زیادہ سکور حاصل کرنا ہے۔

برج کا ہر میچ متعدد ڈیلز پر مشتمل ہوتا ہے۔

ذہن سے وابستہ دیگر کھیل جنھیں گذشتہ ایشیائی کھیلوں میں شامل کیا گیا ان میں چینی شطرنج یا اور گو ان شامل ہیں۔ یہ کھیل 2010 میں شامل کیے گئے تھے جبکہ دوحہ میں سنہ 2006 میں منعقد ہونے والی ایشیائی کھیلوں میں شطرنج کو شامل کیا گیا تھا۔

یہ بھی پڑھیے

’مٹی کے اکھاڑوں سے میٹ ریسلنگ کا سفر آسان نہیں‘

ہاکی کی خدمت فیڈریشن میں آکر ہی ممکن ہے؟

شمالی کوریا میں ہار کا کیا انجام ہوتا ہے؟

باسکٹ بال کے عالمی مقابلوں میں حجاب کی اجازت

اب ایشیئن گیمز میں الیکٹرانکس سپورٹس کا میڈل بھی

2. جیٹ سکی

جکارتہ میں منعقد ہونے والے ایشیائی کھیلوں میں پہلی بار مقبول کھیل جیٹ سکائی کو شامل کیا جائے گا۔

اس کھیل کو پہلی بار بالی میں سنہ 2008 میں کھیلے جانے والے ایشیائی مقابلوں میں متعارف کروایا گیا تھا جس کے دوران اس کے چھ مختلف مقابلے منعقد ہوئے۔

اس بار اس کھیل کے صرف چار مقابلے ہوں گے جو تمام کے تمام مکس ہوں گے۔

دی ٹرم ’جیٹ سکی‘ جاپانی آٹوموٹو کمپنی کاواساکا کی جانب سے تیار کردہ ٹریڈ مارک کا برانڈ نام تھا۔

تاہم آج کل یہ اصطلاح اکثر سرگرمی یا کھیل کا حوالہ دینے کے لیے استعمال ہوتی ہے۔

3. سکیٹ بورڈنگ

شہری علاقوں میں سکیٹ بورڈنگ کا رواج امریکہ کے مغربی ساحلی علاقوں سے سے شروع ہوا۔

خالص زبان استعمال کرنے والے اس کھیل کو اب تک سرمایہ دار کا مخالف کھیل سمجھتے ہیں تاہم اب یہ بین الاقوامی طور پر تسلیم شدہ کھیل ہے۔

سکیٹ بورڈنگ کو بھی رواں سال کے ایشیائی کھیلوں میں شامل کیا گیا ہے جبکہ سنہ 2020 میں ٹوکیو میں کھیلے جانے والے ان مقابلوں میں یہ مقابلے کے کھیل میں شامل ہو گا۔

سکیٹ بورڈنگ کا کھیل کب اور کہاں سے شروع ہوا اس بارے میں تنازع ہے، لیکن عام اتفاق یہ ہے کہ یہ کھیل سنہ 1940 کی دہائی میں مغربی ساحل تک پہنچ چکا تھا۔

4. پینکیک سلٹ

پین کیک سلٹ انڈونیشیا کا مارشل آرٹ ہے۔

پین کیک سلٹ کو سنہ 1948 میں رسمی طور پر کھیل قرار دیا گیا تاہم اصل میں اس کی تاریخ سینکڑوں سال پرانی ہے۔

یہ کھیل سنہ 1987 کے جنوب مشرقی کھیلوں میں باقاعدگی سے کھیلا جانے لگا تاہم اسے رواں برس پہلی بار ایشیائی کھیلوں میں شامل کیا گیا ہے۔

سنہ 2017 کے جنوب مشرقی کھیلوں کے دوران میزبان ملک ملائیشیا نے اس کھیل میں 16 جبکہ انڈونیشیا نے 15 گول میڈل جیتے تھے۔

5. پیرا گلائیڈنگ

پیرا گلائیڈنگ کو پہلی بار ایشیائی مقابلوں میں شامل کیا جا رہا ہے۔

کراس کنٹری پیراگلائیڈنگ کی سٹینڈرڈ فارم ہے تاہم ایروبیٹکس میں کھلاڑیوں کو بعض تدابیر انجام دینے کی ضرورت ہے۔

رواں برس کھیلے جانے والے ایشیائی کھیلوں میں پیراگلائیڈنگ میں سونے کے چھ تمخوں کے لیے مقابلہ ہو گا جس میں تین ایونٹ مردوں کے جبکہ تین خواتین کے لیے مختص ہوں گے۔

اس کے علاوہ ای سپورٹس بھی جلد آ رہی ہیں

ای سپورٹس اس سال کے ایشیائی کھیلوں میں نمائشی طور پر شامل ہوں گے، البتہ اولمپک کونسل آف ایشیا نے اعلان کیا ہے کہ 2022 میں ان کھیلوں میں میڈل بھی دیے جائیں گے۔

2018 کے ایشیائی کھیلوں میں چھ ای سپورٹس کے نمائشی مقابلے ہوں گے۔

متعلقہ عنوانات

اسی بارے میں