سربیا کے نواک جوکووچ نے یو ایس اوپن ٹینس ٹورنامنٹ جیت لیا

نواک جوکووچ تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images

سربیا کے ٹینس کھلاڑی نواک جوکووچ نے ارجنٹائین کے ڈیل پورٹو کو شکست دے کر یو ایس اوپن ٹینس ٹورنامنٹ اپنے نام کر لیا ہے۔

نیویارک میں اتوار کی رات کھیلے جانے والے یو ایس اوپن کے فائنل میں نواک جو کو وچ نے اپنے حریف ڈیل پورٹو کو 6-3، 7-6 اور 6-3 سے فرق سے شکست دی۔

یہ نواک جوکووچ کے کریئر کا مجموعی طور پر 14 واں گرینڈ سلیم ٹائٹل ہے۔

اس بارے میں مزید پڑھیے

یو ایس اوپن: سرینا ولیمز کو غصہ کیوں آیا؟

سرینا کی شکست، امپائر پر صنفی تعصب کا الزام

نواک جوکوچ چوتھا ومبلڈن جیتنے میں کامیاب

دفاعی چیمپیئن جوکووچ کو غیر معروف کھلاڑی سے شکست

تصویر کے کاپی رائٹ BBC Sport

واضح رہے کہ رواں سال جولائی میں ویمبلڈن ٹورنامنٹ جیتنے والے 31 سالہ جوکووچ کا یہ تیسرا یو ایس اوپن ٹائٹل ہے۔

نواک جوکووچ سنہ 2008، 2011، 2012، 2013، 2015 اور 2016 میں آسٹریلین اوپن، سنہ 2016 میں فرینچ اوپن، سنہ 2011، 2014، 2015 اور 2018 میں ویمبلڈن جبکہ سنہ 2011، 2015 اور 2018 میں یو ایس اوپن جیت چکے ہیں۔

جوکووچ کے علاوہ سوئٹزرلینڈ کے راجر فیڈرر 20 جبکہ سپین کے رافیل نڈال 17 ٹائٹل جیت چکے ہیں۔

اس سے پہلے سنیچر کو یو ایس اوپن ٹینس ٹورنامنٹ کے خواتین کے فائنل میں جاپانی ٹینس سٹار نوامی اوساکا نے سرینا ولیمز کو 2-6 اور 4-6 سے فرق سے ہرایا۔

اوساکا نے پہلے سیٹ میں سرینا پر واضح برتری قائم رکھی جبکہ دوسرے سیٹ میں بھی وہ بہت پرسکون رہیں۔ وہ جاپان کی پہلی کھلاڑی بنیں جنھوں نے کوئی گرینڈ سلیم ٹورنامنٹ جیتا ہو۔

متعلقہ عنوانات

اسی بارے میں