ورلڈ کپ ابھی دور ہے فی الحال توجہ ایشیا کرکٹ کپ پر

ایشیا کپ تصویر کے کاپی رائٹ AFP/Getty

ایشیا کرکٹ کپ میں شریک چھ میں سے پانچ ٹیمیں آئندہ سال انگلینڈ میں ہونے والے ورلڈ کپ میں حصہ لیں گی۔

ان ٹیموں کے کپتان یہ کہتے ہیں کہ عالمی مقابلہ ابھی آٹھ ماہ کی دوری پر ہے فی الحال ان کی توجہ ایشیا کپ پر مرکوز ہے۔

ایشیا کپ میں حصہ لینے والی چھ ٹیموں کے کپتان سرفراز احمد۔ روہیت شرما، مشرفی مرتضی،ٰ اینجیلو میتھیوز، اصغر افغان اور انشومن رتھ جمعہ کی شام دبئی سٹیڈیم میں ایشیا کپ کی ٹرافی کی تقریب رونمائی کے لیے یکجا ہوئے تو ان میں سے پانچ کپتانوں سے کیے گئے سوالات کا زیادہ تر حصہ ورلڈ کپ سے متعلق تھا۔

پانچوں کپتانوں کا یہ کہنا تھا کہ ورلڈ کپ میں ابھی کافی وقت پڑا ہے لہٰذا پہلے موجودہ ٹورنامنٹ یعنی ایشیا کپ پر توجہ مرکوز رکھی جائے لیکن اسے ورلڈ کپ کی تیاری کے حصے کے طور پر بھی دیکھا جائے۔

دبئی میں موجود نامہ نگار عبدالرشید شکور کے مطابق انڈین کپتان روہیت شرما کا کہنا تھا کہ ایک لحاظ سے آپ یہ کہہ سکتے ہیں کہ ایشیا کپ ورلڈ کپ کی تیاری کے عمل کا ایک حصہ ہے کیونکہ ہر ٹیم اپنے کامبی نیشن اور قوت کا اندازہ لگانے کے بعد ہی ورلڈ کپ میں جانا چاہتی ہے لیکن ساتھ ہی وہ یہ بھی سمجھتے ہیں کہ اس وقت جو ذمہ داری آپ کو سونپی گئی ہے اس پر توجہ رکھی جائے بجائے اس کے کہ بہت دور کے بارے میں سوچا جائے۔

روہیت شرما کا کہنا تھا کہ اس ایشیا کپ میں ہر ٹیم کی نظر اس بات پر ہو گی کہ ورلڈ کپ کے لیے اس کا درست کامبی نیشن تیار ہو جائے اور اس کے لیے وہ بھرپور کوشش کرے گی۔ ورلڈ کپ سے پہلے ہر ٹیم کو کافی میچز کھیلنے ہیں۔

اس بارے میں مزید پڑھیے

ایشیا کپ: انڈیا کو شارجہ میں کھیلنے سے کیا مسئلہ ہے؟

وراٹ کوہلی کے بغیر ایشیا کپ کا رنگ پھیکا

ایشیا کپ، شان مسعود پہلی بارٹیم میں شامل، محمد حفیظ ڈراپ

ایشیا کپ کے لیے پاکستانی کرکٹ ٹیم کی تیاریاں

تصویر کے کاپی رائٹ AFP/Getty

پاکستانی کرکٹ ٹیم کے کپتان سرفراز احمد کا کہنا تھا کہ ورلڈ کپ کی طرف پاکستانی ٹیم کا سفر جاری ہے اور وہاں تک پہنچنے کے لیے اسے ایشیا کپ کے بعد آسٹریلیا نیوزی لینڈ جنوبی افریقہ اور انگلینڈ کے خلاف سیریز کھیلنی ہے لہٰذا کوشش کریں گے کہ اپنی کارکردگی میں بہتری لاتے جائیں تاکہ جب ورلڈ کپ میں پہنچیں تو ہمیں پتہ ہو کہ ٹیم کہاں کھڑی ہے۔

انڈین کرکٹ ٹیم بارہ سال کے طویل عرصے کے بعد پہلی مرتبہ متحدہ عرب امارات میں بین الاقوامی ون ڈے میچز کھیلنے آئی ہے۔

روہیت شرما سےجب پاک انڈیا کرکٹ کے روایتی جوش وخروش کے بارے میں پوچھا گیا تو ان کا کہنا تھا کہ یقینی طور پر پاک انڈیا کرکٹ کی اپنی روایتی دلچسپی ہوتی ہے اور وہ بھی پاک بھارت میچ کے منتظر ہیں لیکن یہ بات نہیں بھولنی چاہیے کہ اس ٹورنامنٹ میں دوسری ٹیمیں بھی موجود ہیں جن کی نظریں ٹائٹل پر لگی ہوئی ہیں لہٰذا اس ٹورنامنٹ کے تمام میچز میں اچھا مقابلہ ہوگا اور توجہ صرف ایک میچ پر نہیں ہو گی۔

اسی بارے میں