ابو ظہبی: پاکستان نے نیوزی لینڈ کو دو رنز سے شکست دے دی

تصویر کے کاپی رائٹ AFP

متحدہ عرب امارات کے شہر ابو ظہبی میں پاکستان نے نیوزی لینڈ کو دو رنز سے شکست دے کر ٹی ٹوئنٹی میچوں میں مسلسل سات میچز جیت لیے ہیں۔

پاکستان نے ٹاس جیت کر پہلے بیٹنگ کرتے ہوئے مقررہ 20 اوورز میں چھ وکٹوں کے نقصان پر 148 رنز سکور کیے۔ جواب میں نیوزی لینڈ کی ٹیم چھ وکٹوں پر 146 رنز سکور کر سکی۔

میچ کا تفصیلی سکور کارڈ

محسن خان کا بیان سرفراز پہ کیا اثر ڈالے گا؟

پاکستان کی جانب سے صاحبزادہ فرحان اور بابر اعظم نے اننگز کا آغاز کیا۔ لیکن بابر اعظم تیسرے ہی اوور میں ملنے کی گیند پر وکٹ کیپر کے ہاتھوں کیچ ہو گئے۔ وہ صرف سات رنز سکور کر سکے۔

صاحبزادہ فرحان بھی اگلے ہی اوور میں ایک رن بنا کر کیچ آؤٹ ہو گئے۔

محمد حفیظ نے تیز بیٹنگ کی لیکن وہ 36 گیندوں میں 45 رنز سکور کر کے کیچ آؤٹ ہو گئے۔

پاکستان کی چوتھی وکٹ 93 کے مجموعی سکور پر گری جب آصف علی 21 گیندوں میں 24 رنز بنا کر آؤٹ ہوئے۔

اگلے آؤٹ ہونے والے سرفراز احمد تپے جنھوں نے تین چوکوں اور ایک چھکے کی مدد سے 26 گیندوں میں 34 رنز سکور کیے۔

شعیب ملک صرف آٹھ رنز بنا کر رن آؤٹ ہو گئے۔

پاکستان کو پہلی کامیابی چھٹے اوور کی آخری گیند پر ملی جب فلپس حسن علی کی گیند پر 12 رنز بنا کر بولڈ ہوئے۔

تصویر کے کاپی رائٹ AFP

نیوزی لینڈ کو دوسرا نقصان 12 ویں اوور میں ہوا جب کولن منرو جو جارحانہ انداز میں کھیل رہے تھے آؤٹ ہو گئے۔ ان کو شاداب نے آوٹ کیا۔ کولن نے 42 گیندوں میں چھ چوکوں اور تین چھکوں کی مدد سے 58 رنز سکور کیے۔

پاکستان کو ایک اور کامیابی جلد ہی ملی جب کین ولیمسن 11 رنز بنا کر عماد وسیم کی گیند پر آؤٹ ہوئے۔

نیوزی لینڈ کو ایک اور نقصان اس وقت ہوا جب گرینڈ ہوم چھ رنز بنا کر رن آؤٹ ہو گئے۔

اینڈرسن نو رنز سکو کر کے آوٹ ہوئے جبکہ چھٹی وکٹ اس وقت گری جب سیفرٹ صفر پر آؤٹ ہوئے۔

تصویر کے کاپی رائٹ AFP

ٹی ٹوئنٹی انٹرنیشنل میچوں میں تیز ترین ایک ہزار رنز مکمل کرنے کے لیے بابر اعظم کو 95 رنز درکار ہیں۔

اس وقت تیز ترین ایک ہزار بنانے والے کھلاڑی انڈیا کے ویراٹ کوہلی ہیں جنھوں نے یہ ریکارڈ 27 اننگز میں بنایا۔ تاہم بابر اعظم آج نیوزی لینڈ کے خلاف اپنی 24 ویں اننگز کھیلیں گے۔

نیوزی لینڈ کی ٹیم میں نیوزی لینڈ اے کے دو کھلاڑی شامل کیے گئے ہیں۔ وکٹ کیپر ٹم سیفرٹ اور گلین فلپس۔

دوسری جانب پاکستان کی ٹیم میں فاسٹ بولر شاہین آفریدی کو عثمان خان کی جگہ لایا گیا ہے جبکہ فخر زمان گھٹنے کی چوٹ کے باعث ٹیم میں نہیں ہیں۔

نیوزی لینڈ سات ماہ بعد انٹرنیشنل کرکٹ کھیل رہا ہے۔ تاہم اس کے کھلاڑیوں نے انڈین پریمیئر لیگ اور کریبیئن کرکٹ لیگ میں اپنے آپ کو مصروف رکھا ہے۔

تصویر کے کاپی رائٹ PCB

پاکستان ٹی ٹوئنٹی رینکنگ میں سر فہرست ہے۔ پاکستان نے حال ہی میں آسٹریلیا کو ٹی ٹوئنٹی سیریز میں تین صفر سے شکست دی ہے۔

متعلقہ عنوانات

اسی بارے میں