آل راؤنڈر کے طور پر پہچانا جانا چاہتا ہوں: فہیم اشرف

تصویر کے کاپی رائٹ PCB
Image caption فہیم اشرف ٹی ٹوئنٹی انٹرنیشنل میں ہیٹ ٹرک کرنے والے واحد پاکستانی بولر ہیں۔

فہیم اشرف نے پہلی بار اپنی موجودگی کا احساس اس وقت دلایا تھا جب چیمپیئنز ٹرافی سے قبل بنگلہ دیش کے خلاف ہونے والے وارم اپ میچ میں انھوں نے صرف تیس گیندوں پر ناقابل شکست چونسٹھ رنز بنائے تھے اور پھر چیمپیئنز ٹرافی میں سری لنکا کے خلاف مشکل صورتحال میں ان کے ایک چھکے اور ایک چوکے نے کپتان سرفراز احمد کا حوصلہ بڑھا دیا تھا۔

یہ فہیم اشرف کا پہلا بین الاقوامی میچ تھا جس میں انہوں نے دو وکٹیں بھی حاصل کی تھیں جن میں دنیش چندی مل کو صفر پر بولڈ کرنا بھی شامل تھا۔

یہ بھی پڑھیے

پی ایس ایل: یونائیٹڈ نے قلندرز کو 49 رنز سے شکست دے دی

پی ایس ایل: میچ سنسنی خیز مرحلے میں، تین اوورز باقی

فہیم اشرف نے جب آئرلینڈ کے خلاف ڈبلن میں اپنا اولین ٹیسٹ کھیلا تو اس کی پہلی اننگز میں بھی انہوں نے قیمتی 83 رنز بنا کر پاکستانی ٹیم کو مشکل صورتحال سے نکالا تھا۔

فہیم اشرف پاکستانی ٹیم کے بولنگ آل راؤنڈر ہیں۔ ابھی تک ان کی زیادہ تر کارکردگی بولنگ میں سامنے آئی ہے لیکن ان کی خواہش ہے کہ وہ بولنگ کے ساتھ بیٹنگ میں بھی قابل ذکر کارکردگی دکھاتے ہوئے ایک مکمل آل راؤنڈر کی حیثیت سے اپنی پہچان کرائیں۔

’چونکہ میں بولنگ آل راؤنڈر کی حیثیت سے ٹیم میں ہوں لہٰذا میری پہلی ترجیح بولنگ ہے لیکن اس کا مطلب یہ نہیں کہ میری توجہ بیٹنگ پر نہیں، میں جتنا کام اپنی بولنگ پر کر رہا ہوں اتنا ہی بیٹنگ پر بھی کرتا ہوں۔ ٹی ٹوئنٹی میں میری بیٹنگ اس وقت آتی ہے جب برائے نام اوورز باقی رہ جاتے ہیں لیکن میری کوشش ہوگی کہ جو بھی موقع ملے اس سے فائدہ اٹھاؤں۔‘

فہیم اشرف کی پاکستانی ٹیم میں سب سے اچھی دوستی شاداب خان کے ساتھ ہے اور وہ اس لمحے کو یاد کرتے ہیں جب ان دونوں نے آئرلینڈ کے خلاف ٹیسٹ میں ذمہ داری سے بیٹنگ کی تھی۔

’شروع میں صورتحال بہت مشکل لگ رہی تھی لیکن بعد میں ہم دونوں نے نہ صرف ایک دوسرے کو اعتماد دینا شروع کیا بلکہ ایک دوسرے سے مذاق بھی کرنے لگے تھے۔ اس کا مقصد صرف یہ تھا کہ خود پر دباؤ نہ لیا جائے۔ اس اننگز میں ہم دونوں کے درمیان117 رنز کی شراکت ہوئی تھی۔‘

تصویر کے کاپی رائٹ PCB
Image caption فہیم اشرف اس پی ایس ایل میں اب تک بہترین انفرادی بولنگ کرنے والے بولر ہیں۔ انہوں نے لاہور قلندرز کے خلاف 19 رنز دے کر6 وکٹیں حاصل کی تھیں۔

فہیم اشرف کو اس اننگز میں سنچری نہ ہونے کا بہت افسوس ہے۔

’اولین ٹیسٹ میں سنچری سے آپ کا نام تاریخ میں لکھا جاتا ہے اور دنیا ساری زندگی آپ کو یاد رکھتی ہے۔ مجھے صرف سترہ رنز کی کمی سے سنچری مکمل نہ ہونے کا بہت افسوس ہے لیکن مجھے خوشی اس بات کی بھی ہے کہ میری نصف سنچری اپنا پہلا ٹیسٹ کھیلنے والے کسی بھی بیٹسمین کی تیز ترین نصف سنچری کا ریکارڈ بنی تھی۔‘

فہیم اشرف ٹی ٹوئنٹی انٹرنیشنل میں ہیٹ ٹرک کرنے والے واحد پاکستانی بولر ہیں۔

انہوں نے یہ ہیٹ ٹرک سری لنکا کے خلاف ابوظہبی میں کی تھی جب انہوں نے لگا تار گیندوں پر اودانا، اوداوتے اور شاناکا کو آؤٹ کیا تھا۔

’جب میں شاناکا کو گیند کرنے جارہا تھا تو میں یہ سوچ رہا تھا کہ جو میری اچھی لائن ہے اس پر گیند کروں گا۔ عماد وسیم نے بھی مجھ سے یہی کہا کہ میں گیند کو اندر لاؤں کیونکہ اس میں وکٹ ملنے کا زیادہ امکان موجود ہوتا ہے۔‘

فہیم اشرف اس پی ایس ایل میں اب تک بہترین انفرادی بولنگ کرنے والے بولر ہیں۔ انہوں نے لاہور قلندرز کے خلاف 19 رنز دے کر6 وکٹیں حاصل کی تھیں۔

مجموعی طور پر سب زیادہ وکٹوں کی دوڑ میں فہیم اشرف کا مقابلہ حسن علی کے ساتھ ہے۔

’میں اسی وقت زیادہ خوش ہوں گا جب اسلام آباد یونائٹڈ پی ایس ایل کی فاتح بنے گی اور میں سب سے زیادہ وکٹیں لینے والا بولر بنوں گا۔‘

متعلقہ عنوانات

اسی بارے میں