کراچی: کوئٹہ گلیڈی ایٹرز نے پاکستان سپر لیگ جیت ہی لی

پاکستان سپر لیگ تصویر کے کاپی رائٹ EPA

کراچی میں کھیلے جانے والے پاکستان سپر لیگ کے چوتھے ایڈیشن کے فائنل میں کوئٹہ گلیڈی ایٹرز نے یک طرفہ مقابلے کے بعد پشاور زلمی کو آٹھ وکٹوں سے شکست دے دی ہے۔

پی ایس ایل فائنل میں پہلے بیٹنگ کرتے ہوئے پشاور زلمی نے 139 رنز کا ہدف دیا جسے کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کی ٹیم نے دو وکٹوں کے نقصان پر 18ویں اوورز میں حاصل کر لیا۔

کراچی کے نیشنل سٹیڈیم میں کھیلے جانے والے اس میچ میں کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کے کپتان سرفراز احمد نے ٹاس جیت کر پہلے فیلڈنگ کرنے کا فیصلہ کیا۔

گلیڈی ایٹرز کے بولروں محمد حسنین، ڈیوئن براوو اور سہیل تنویر نے اپنا جادو دکھایا اور بعد ازاں گلیڈی ایٹرز کے ٹاپ آرڈر نے بھی سرفراز کو دھوکہ نہیں دیا۔

تصویر کے کاپی رائٹ AFP/Getty Images

139 رنز کے ہدف کے تعاقب میں کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کے آؤٹ ہونے والے پہلے بلے باز شین واٹسن تھے جو تیسرے اوور میں صرف سات رنز بنا کر رن آؤٹ ہوئے جبکہ 66 کے مجموعی سکور پر زلمی کو دوسری کامیابی احسن علی کی وکٹ کی صورت میں ملی جو 25 رنز بنا کر آؤٹ ہوئے۔

اس کے بعد تیسری وکٹ کی شراکت میں احمد شہزاد اور ریلی روسو نے 73 رنز کی اننگز کھیلی اور اپنی ٹیم کو فتح سے ہمکنار کیا۔

تصویر کے کاپی رائٹ PCB

یہ بھی پڑھیے

پشاور زلمی نے اسلام آباد یونائیٹڈ کو 48 رنز سے ہرا دیا

’آل راؤنڈر کے طور پر پہچانا جانا چاہتا ہوں‘

چار ٹیموں کی ٹائٹل پر نظریں

پی ایس ایل: کوئٹہ گلیڈی ایٹرز فائنل میں، واٹسن ہیرو

تصویر کے کاپی رائٹ PCB

پشاور زلمی کی اننگز

اس سے قبل گلیڈی ایٹرز نے ٹاس جیت کر پشاور زلمی کو پہلے بیٹنگ کی دعوت دی تھی۔

کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کی شاندار بولنگ کی بدولت پشاور زلمی بڑا ہدف دینے میں ناکام رہی اور اس نے مقررہ 20 اوورز میں آٹھ وکٹوں کے نقصان پر 138 رنز بنائے تھے۔

گلیڈی ایٹرز کی جانب سے نوجوان بولر محمد حسنین نے شاندار بولنگ کا مظاہرہ کرتے ہوئے چار اوورز میں 30 رنز کے عوض تین کھلاڑیوں کو آؤٹ کیا جبکہ ڈوائن براوو نے 24 رنز دے کر دو بلے بازوں کو پویلین کی راہ دیکھائی۔

سہیل تنویر اگرچہ کوئی وکٹ لینے میں ناکام رہے مگر انھوں نے اپنے چار اوورز میں صرف 23 رنز دیے۔

گلیڈی ایٹرز کی نپی تلی بولنگ کی بدولت زلمی کا کوئی بھی بلے باز بڑا سکور کرنے میں کامیاب نہ ہو پایا جبکہ وقفے وقفے سے وکٹیں گرنے کا سلسلہ بھی جاری رہا۔

15 ویں اوور میں زلمی کی نصف ٹیم صرف 96 رنز بنا کر پویلین لوٹ چکی تھی۔

زلمی کو پہلا نقصان دوسرے ہی اوور میں اٹھانا پڑا جب اوپننگ بلے باز امام الحق گلیڈی ایٹرز کے نوجوان بولر محمد حسنین کی گیند پر تین رنز بنا کر کیچ آؤٹ ہوئے۔

چوتھے اوور میں زلمی کے اوپنر کامران اکمل بھی 21 رنز بنا کر محمد نواز کی گیند پر بولڈ ہوئے۔

تصویر کے کاپی رائٹ PCB

تیسرے آؤٹ ہونے والے بلے باز صہیب مقصود تھے جو دسویں اوور میں 20 رنز بنا کر ڈیوئن براوو کی گیند پر باونڈری کے قریب کیچ آؤٹ ہوئے۔

14 ویں اوور کی پہلی ہی گیند پر عمر امین 38 رنز بنا کر محمد حسنین کی گیند پر کیچ آؤٹ ہوئے جبکہ اگلے ہی اوور میں نبی گل صرف نو رنز بنا کر فواد احمد کا شکار بنے۔

کیرون پولارڈ صرف سات رنز بنا کر محمد حسنین کا شکار ہوئے۔ ڈیوئن براوو کی جانب سے کیے گئے اننگز کے آخری اوور میں وہاب ریاض 12 جبکہ کپتان ڈیرن سیمی 18 رنز بنا کر کیچ آؤٹ ہوئے۔

پی ایس ایل کی رنگا رنگ اختتامی تقریب

اس سے قبل شام چھ بجے شروع ہونے والی پی ایس ایل کی رنگا رنگ اختتامی تقریب اپنے انجام کو پہنچی جس میں مشہور گلوکاروں نے اپنے فن کا مظاہرہ کرتے ہوئے شائقین سے داد سمیٹی۔

تصویر کے کاپی رائٹ PCB

اختتامی تقریب کا آغاز نیوزی لینڈ میں مساجد پر ہونے والے دہشت گردی کے حملے میں ہلاک ہونے والے افراد کی یاد میں ایک منٹ کی خاموشی اختیار کر کے کیا گیا۔

فائنل میچ کو دیکھنے کے لیے گورنر سندھ عمران اسمائیل، وزیراعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ، آرمی چیف قمر جاوید باجوہ، چیئرمین پاکستان کرکٹ بورڈ احسان مانی اور ترجمان پاکستان آرمی میجر جنرل آصف غفور بھی نیشنل سٹیڈیم کراچی میں موجود تھے۔

تصویر کے کاپی رائٹ PCB

رنگا رنگ تقریب میں گلوکار ابرار الحق نے سب سے پہلے اپنی پرفارمنس کا مظاہرہ کیا، نوجوان گلوکارہ آئمہ بیگ نے نازیہ حسن کا گانا ’دوستی‘ گا کر سٹیڈیم میں موجود شائقین سے داد وصول کی جبکہ معروف اداکار و گلوکار فواد خان نے پی ایس ایل فور کا آفیشل گانا گا کر لوگوں کا لہو گرمایا۔ جنون بینڈ نے بھی اپنے ماضی کے مشہور گیت پیش کیے۔

تصویر کے کاپی رائٹ PCB

چیرمین پی سی بی نے تقریب کے آغاز پر تقریر کرتے ہوئے اس سیزن کو کامیاب بنانے کے لیے پاکستان اور خصوصاً کراچی کی عوام کا شکریہ ادا کیا اور اگلے برس پی ایس ایل کے تمام میچ پاکستان میں کرانے کا عزم کیا۔

وزیر اعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ نے اس موقع پر سٹیڈیم میں موجود شائقین کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ ’ہم نے دو سال پہلے وعدہ کیا تھا کہ ہم پی ایس ایل کراچی لائیں گے اور ہم نے یہ کر دکھایا۔ اور ہم چاہیں گے کہ انٹرنیشنل کرکٹ ملک میں واپس آئے اور اس کا آغاز کراچی کے نیشنل سٹیڈیم سے ہو۔‘

اختتامی تقریب میں ہسپانوی فٹ بالر ہیول بھی موجود تھے۔

تصویر کے کاپی رائٹ PCB

دوسری جانب پاکستان سپر لیگ کے چوتھے ایڈیشن کا فائنل مقابلہ دیکھنے کے لیے شائقین کرکٹ بہت پرجوش رہے۔ شائقین نے کراچی، اسلام آباد، لاہور، کوئٹہ اور پشاور سمیت ملک کے مختلف شہروں میں میچ دیکھنے کے لیے بڑی سکرینیں لگائیں جہاں انھوں نے یہ میچ دیکھا۔

کوئٹہ گلیڈی ایٹرز نے کوالیفائر میں پشاور زلمی کو دس رنز سے شکست دے کر فائنل میں جگہ بنائی جبکہ پشاور زلمی نے دوسرے ایلیمنیٹر میں گذشتہ سال کی فاتح اسلام آباد یونائٹڈ کو 48 رنز سے ہراکر فائنل کھیلنے کا اعزاز حاصل کیا۔

تصویر کے کاپی رائٹ PCB

دونوں ٹیمیں اس سے قبل دو دو مرتبہ پی ایس ایل کا فائنل کھیل چکی ہیں۔

سنہ 2016 میں پہلی پی ایس ایل کے فائنل میں اسلام آباد یونائٹڈ نے کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کے خلاف کامیابی حاصل کی تھی۔

پشاور زلمی نے سنہ 2017 میں لاہور میں کھیلے گئے فائنل میں کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کو شکست دی تھی جبکہ گذشتہ سال کراچی میں کھیلے گئے فائنل میں پشاور زلمی کو اسلام آباد یونائیٹڈ کے خلاف شکست کا سامنا کرنا پڑا تھا۔

متعلقہ عنوانات

اسی بارے میں