پاکستان سپر لیگ کی فاتح ٹیم کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کی وکٹری پریڈ

کوئٹہ گلیڈی ایٹرز

پاکستان سپر لیگ کے چوتھے ایڈیشن کی فاتح ٹیم کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کے کھلاڑیوں نے کپتان سرفراز احمد کی قیادت میں بلوچستان کے درالحکومت کوئٹہ کی شاہراہوں پر ٹرافی کے ساتھ وکٹری پریڈ کی۔

لوگوں نے اپنی ٹیم کا بھرپور استقبال کیا۔

یہ بھی پڑھیے

مسلسل عمدہ کارکردگی عابد علی کو ٹیم میں لے آئی

’پی ایس ایل بین الاقوامی کرکٹ کی واپسی کے لیے اہم قدم‘

کوئٹہ گلیڈی ایٹرز نے پاکستان سپر لیگ جیت ہی لی

بعد ازاں ٹیم نے وزیر اعلیٰ بلوچستان جام کمال کی جانب سے دیے گئے ظہرانے میں شرکت کی جہاں صوبائی وزرا اور اراکین بلوچستان اسمبلی کے علاوہ کمانڈر سدرن کمانڈ لیفٹینٹ جنرل عاصم سلیم باجوہ اور دیگر عمائدین بھی موجود تھے۔

کوئٹہ کی شاہراہوں پر لوگوں کی ایک بڑی تعداد نے ٹیم کا استقبال کیا اور ان پر پھول بھی نچھاور کیے گئے جبکہ ٹیم کے کھلاڑیوں کے حق میں نعرے بازی بھی کی گئی۔

اس موقع پر بات کرتے ہوئے سرفراز احمد نے کوئٹہ کے شہریوں کا شکریہ ادا کیا اور ان کا کہنا تھا کہ کہ کوئٹہ کے لوگوں نے جو پیار دیا اس کو دیکھ کر بہت مزا آیا۔

انہوں نے کہا کہ کوئٹہ میں کرکٹ کے فروغ کے لیے ایک اکیڈمی بنائی جائی گی جبکہ کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کے مالک ندیم عمر کوئٹہ میں کرکٹ کے ٹورنامنٹ بھی کروائیں گے۔

اس موقع پر ندیم عمر کا کہنا تھا کہ وہ یہ سوچ بھی نہیں سکتے تھے کہ کوئٹہ کے لوگ ان کی ٹیم کا اس قدر شاندار استقبال کریں گے۔

ان کا کہنا تھا کہ ان کے پاس الفاظ نہیں کہ وہ لوگوں کا کس طرح شکریہ ادا کریں۔

یہ بات قابل ذکر ہے کہ کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کی ٹیم میں بلوچستان سے تعلق رکھنے والے صرف ایک کھلاڑی کو شامل کیا گیا تھا لیکن انہیں بھی کسی میچ میں کھیلنے کا موقع نہیں دیا گیا۔

ندیم عمر کا کہنا تھا کہ آئندہ پی ایس ایل میں بلوچستان کے کھلاڑیوں کو بھی کھلایا جائے گا۔

’ایک وقت آئے گا کہ پوری کی پوری ٹیم میں بلوچستان کے کھلاڑی کھیلیں گے۔‘

پاکستان سپر لیگ فور کی فاتح ٹیم کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کے کھلاڑی ٹرافی کے ہمراہ سنیچر کی رات کراچی سے کوئٹہ پہنچے تو کوئٹہ ایئر پورٹ پر ان کا شاندار استقبال کیا گیا۔

کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کے فاتح کھلاڑیوں کو ایئر پورٹ سے کوئٹہ چھاؤنی میں پولو گراؤنڈ لے جایا گیا۔

پولو گراؤنڈ میں وزیر اعلیٰ بلوچستان جام کمال کی جانب سے ٹیم کے کھلاڑیوں کے اعزاز میں استقبالیے اہتمام کیا گیا تھا۔

اس موقع پر یوم پاکستان اور کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کی جیت کی خوشی میں آتش بازی کا بھی مظاہرہ کیا گیا جبکہ گل پانڑہ اور دیگر گلوکاروں نے نغمے بھی پیش کیے۔

تقریب سے خطاب کرتے ہوئے وزیر اعلیٰ بلوچستان جام کمال خان نے کہا کہ ہمارے نوجوان کھلاڑیوں میں بہت ٹیلنٹ ہے اور اگر انھیں آگے بڑھنے کے مواقع ملیں تو وہ اپنی صلاحیتوں کا لوہا منوا سکتے ہیں۔

وزیر اعلیٰ نے اس توقع کا اظہار کیا کہ آئندہ کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کی ٹیم میں بلوچستان کے کھلاڑیوں کی مزید نمائندگی ہو گی۔

جام کمال خان نے کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کے مالک ندیم عمر کی جانب سے کوئٹہ میں کرکٹ اکیڈمی کے قیام کے اعلان کا خیر مقدم کرتے ہوئے صوبائی حکومت کی جانب سے بھرپور تعاون کا یقین دلایا۔

وزیر اعلی نے اس موقع پر صوبائی حکومت کی جانب سے کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کی ٹیم کے لیے گیارہ ملین روپے کی انعامی رقم کا چیک ٹیم کے کیپتان سرفراز احمد کو پیش کیا۔

اس سے قبل ایئر پورٹ پہنچنے پر سرفراز احمد نے میڈیا سے بات کرتے ہوئے کہا کہ وہ کوئٹہ کے شہریوں کے ساتھ جیت کی خوشی منانے آئے ہیں۔

انھوں نے اس امید کا اظہار کیا کہ پاکستان سپر لیگ کے آئندہ میچ ملک کے ہر شہر میں کھیلے جائیں گے۔

سرفراز احمد کا کہنا تھا کہ پاکستان سپر لیگ اپنے ملک میں کھیلنے کا مزہ ہی الگ ہے۔

انھوں نے کہا کہ یہ ان کا خواب تھا کہ وہ پاکستان سپر لیگ ککی ٹرافی جیت کر کوئٹہ آئیں آج وہ خواب پورا ہو گیا۔

متعلقہ عنوانات

اسی بارے میں