دبئی: چوتھا ون ڈے بھی آسٹریلیا کا، پاکستان کی لگاتار چوتھی شکست

آسٹریلیا پاکستان تصویر کے کاپی رائٹ PCB

پاکستان آسٹریلیا سیریز کا چوتھا میچ آج دبئی میں کھیلا گیا جس میں آسٹریلیا نے پاکستان کو سات رنز سے شکست دے دی۔

آسٹریلیا کو پانچ میچوں پر مشتمل ایک روزہ سیریز میں تین صفر کی فیصلہ کن برتری حاصل ہے۔ آسٹریلیا کو پہلے بیٹنگ کی دعوت ملی اور اس کی ٹیم نے پاکستان کو جیت کے لیے 278 رنز کا ہدف دیا۔

جواب میں پاکستان نے مقررہ اوور میں آٹھ وکٹوں کے نقصان پر 270 رنز بنائے۔

میچ میں پاکستان نے 250 رنز بنائے تو ایسا لگ رہا تھا کے شاید پاکستان یہ چوتھا ون ڈے شاید جیتنے میں کامیاب ہو جائے اس کی آخری تین اوور میں پاکستان کی وکٹیں یکے بعد گر گئیں۔

میچ کا تفصیلی سکورکارڈ

محمد رضوان اور عابد علی کی سنچریاں بھی پاکستان کو کامیابی دلانے میں ناکام رہیں۔ حارث سہیل نے 25رنز بنائے جبکہ اس کے علاوہ کوئی بھی کھلاڑی ڈبل فگر تک بھی نہ پہنچ سکا۔

محمد رضوان 104 جوکہ عابد علی 112 رن بنا کر آؤٹ ہوئے۔ اس سے پہلے شان مسعود بغیر کوئی رن بنائے آؤٹ ہوئے جبکہ دوسرے آؤٹ ہونے والے کھلاڑی حارث سہیل نے پچیس رن بنائے۔ عمر اکمل سات رن بنا کر آؤٹ ہوئے۔

آسٹریلیا نے مقررہ 50 اوورز میں 277 رنز بنائے اور ان کے سات کھلاڑی آؤٹ ہوئے تھے۔ گلین میکسویل سب سے نمایاں بلے باز رہے۔ انھوں نے ذمہ دارانہ بیٹنگ کا مظاہرہ کرتے ہوئے اپنی نصف سنچری 53 گیندوں میں مکمل کی اور سنچری کے بہت نزدیک 98 رنز پر آؤٹ ہوگئے۔

پاکستان کی جانب سے محمد حسنین، یاسر شاہ اور عماد وسیم نے دو دو کھلاڑیوں کو آؤٹ کیا۔ محمد حسنین نے ایک روزہ میچوں میں اپنی پہلی وکٹ حاصل کی اور ایرون فنچ کو پویلین کی راہ دکھائی۔

کپتان ایرون فنچ جو گذشتہ تین میچوں میں شاندار کارکردگی کا مظاہرہ کر چکے ہیں مگر آج 39 رنز بنا پائے اور محمد حسنین کی گیند پر ایل بی ڈبلیو قرار پائے۔

آسٹریلیا کی اننگز

تصویر کے کاپی رائٹ AFP

آؤٹ ہونے والے دوسرے کھلاڑی شان مارش تھے جو پانچ رنز بنا کر عماد وسیم کی گیند پر سٹمپ آؤٹ ہوئے۔ پیٹر ہینڈس کومب سات رنز بنا کر عماد وسیم کی گیند پر کیچ آؤٹ ہوئے۔

مارکس سٹوئنس یاسر شاہ کی گیند پر بولڈ ہوگئے اور وہ صرف دو رنز ہی بنا پائے۔ عثمان خواجہ بھی یاسر شاہ کی عمدہ بولنگ کا نشانہ بنے اور 62 کی شاندار اننگز کھیلنے کے بعد ایل بی ڈبلیو قرار پائے۔ عثمان خواجہ نے اپنی نصف سنچری 64 گیندوں پر مکمل کی تھی۔

آج کے میچ سے پہلے پاکستانی ٹیم کو ایک اور بُری خبر شعیب ملک کی عدم دستیابی کی صورت میں ملی ہے۔ پی سی بی نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر ایک ٹویٹ کے ذریعے بتایا کہ شعیب ملک کو پسلی پر چوٹ آئی ہے جس کے باعث وہ آج کا میچ نہیں کھیلیں گے اور ان کی جگہ عماد وسیم ٹیم کی کپتانی کریں گے۔

سعد علی پی سی بی کے مطابق آج اپنا پہلا ایک روزہ میچ کھیلیں گے۔

تصویر کے کاپی رائٹ PCB

چوتھے ایک روزہ میچ کے لیے آسٹریلوی ٹیم: کپتان ایرون فنچ، عثمان خواجہ،پیٹر ہینڈس کومب، شان مارش، مارکس اسٹونس، گلین میکسویل، کین رچرڈسن، نیتھن لائن، ایلیکس کیری، ایڈم زامپا اور نیتھن کولٹر نائل پر مشتمل ہے۔

قومی کرکٹ ٹیم کی قیادت عماد وسیم کریں گے جب کہ قومی ٹیم میں عابد علی، شان مسعود، عمر اکمل، حارث سہیل، سعد علی، فہیم اشرف، محمد رضوان، محمد حسنین، محمد عباس اور یاسر شاہ شامل ہیں۔

’سمجھ آ گیا عمر اکمل کو ورلڈکپ کھلانا ہے یا نہیں‘

آسٹریلیا تیسرے ون ڈے کا فاتح، سیریز بھی جیت لی

اس سیریز کی خاص بات یہ ہے کہ پاکستان کرکٹ بورڈ نے کپتان سرفراز احمد کو آرام دینے کا فیصلہ کیا تھا اور ان میچوں کے لیے قیادت کی ذمہ داری شعیب ملک کو سونپی گئی تھی۔

سرفراز احمد کے علاوہ دیگر پانچ کھلاڑیوں فخرزمان، شاداب خان، حسن علی، شاہین شاہ آفریدی اور بابر اعظم کو بھی آرام دینے کا فیصلہ کیا گیا تھا۔

ابو ظہبی میں کھیلے جانے والے تیسرے ایک روزہ میچ میں آسٹریلیا نے پاکستان کو 80 رنز سے ہرا دیا تھا۔ آسٹریلیا نے پاکستان کو جیتنے کے لیے 267 رنز کا ہدف دیا تھا جواباً پاکستان کی پوری ٹیم 44.4 اوور میں 186 رنز بنا کر آؤٹ ہو گئی۔

یہ بھی پڑھیے

’یہ ٹیم پاکستان کے لیے نہیں کھیل رہی‘

تصویر کے کاپی رائٹ AFP

قومی ٹیم کے کپتان شعیب ملک کو دوسرے ایک روہ میچ کے بعد خاصی تنقید کا سامنا کرنا پڑا ہے۔ ان کو اس تنقید کا سامنا اس بیان کے بعد کرنا پڑا جس میں ان کا کہنا تھا کہ ہم اپنے بینچ پر موجود کھلاڑیوں کو آزما رہے ہیں اور اس سیریز میں جیتنا یا ہارنا معنی نہیں رکھتی۔

اس بیان کہ بعد دیگر وضاحتیں دی گئی ہیں خصوصی طور پر کوچ مکی آرتھر کی جانب سے جنھوں نے اس تاثر کو رد کیا ہے کہ پاکستان ٹیم جیت کے لیے پر عزم نہیں ہے۔

متعلقہ عنوانات

اسی بارے میں