کرکٹ ورلڈ کپ 2019: افغانستان کے خلاف سری لنکا کی 34 رنز سے جیت

کرکٹ ورلڈ کپ 2019 تصویر کے کاپی رائٹ Google

کرکٹ ورلڈ کپ 2019 میں منگل کو کارڈف کے میدان میں سری لنکا نے افغانستان کی ٹیم کو 34 رنز سے شکست دے دی۔

سری لنکانے جیت کے لیے افغانستان کی ٹیم کو 187 رنز کا ہدف دیا تھا۔

افغانستان نے 32 اعشاریہ چار اوورز میں 10 وکٹوں کے نقصان پر 152 رنز بنائے۔

کارڈف کے صوفیہ گارڈنز کرکٹ گراؤنڈ میں کھیلا جا رہا میچ بارش سے متاثر ہوا جس کے باعث اسے 41 اوورز فی اننگز تک محدود کر دیا گیا ہے۔

بارش سے متاثرہ اس میچ میں ڈک ورتھ لوئیس میتھڈ کے تحت اب افغانستان کو اب 41 اوورز میں 187 رنز کا ہدف حاصل کرنا تھا۔

اس سے پہلے سری لنکا کی پوری ٹیم 36.5 اوورز میں 201 رنز پر آؤٹ ہو گئی تھی۔

میچ کے تفصیلی سکور کارڈ کے لیے کلک کریں

کرکٹ ورلڈ کپ 2019 پر بی بی سی اردو کی خصوصی کوریج

آسٹریلیا کی افغانستان کو سات وکٹوں سے شکست

سری لنکا کو نیوزی لینڈ سے دس وکٹوں سے شکست

تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images

افغانستان کی جانب سے محمد شہزاد اور حضرت اللہ نے اننگز کا آغاز کیا اور پہلی وکٹ کی شراکت میں 34 رنز بنائے۔

افغانستان کے آؤٹ ہونے والے پہلے باز محمد شہزاد تھے جو سات رنز بنا کر لست ملینگا کی گیند پر کرورتنے کے ہاتھوں کیچ آؤٹ ہوئے۔

42رنز کے مجموعی سکور پر افغانستان کو دوسرا نقصان اس وقت اٹھانا پڑا جب رحمت شاہ صرف دو رنز بنا کر پویلین لوٹ گئے۔

افغانستان کی اننگز کے آٹھویں اور نویں اوور میں یکے بعد دیگرے دو وکٹیں گریں۔

تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images

آؤٹ ہونے والے تیسرے بلے باز حضرت اللہ تھے۔ انھوں نے تین چوکوں اور ایک چھکے کی مدد سے 30 رنز بنائے۔

نجیب اللہ زردان 43 رنز بنا کر رن آؤٹ ہو گئے۔ محمد نبی 11 اور گلبدین نائب 23 رنز بنا پائے۔ راشد خان، دولت زردان، حمید حسن اور مجیب الرحمن میں سے کوئی بھی انفرادی طور پر دس رنز بھی سکور نہیں کر سکا۔

سری لنکا کی جانب سے پردیپ نے چار، ملینگا نے تین اڈانا اور پریرا نے ایک، ایک کھلاڑی کو آؤٹ کیا۔

تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images

اس سے قبل سری لنکا کی جانب سے کپتان ڈیموتھ کرونارتنے اور کوشال پریرا نے اننگز شروع کی اور پہلی وکٹ کی شراکت میں 92 رنز بنائے۔

ایک موقع پر ایسا دکھائی دے رہا تھا کہ سری لنکا کی ٹیم افغانستان کو ایک بڑا ہدف دے گی تاہم افغانستان کے بالروں نے عمدہ بولنگ کا مظاہرہ کیا اور سری لنکا کے بلے بازوں کو 201 رنز تک محدود کر دیا۔

سری لنکا کی جانب سے کوشل پریرا نے آٹھ چوکوں کی مدد سے 78 اور کپتان ڈیموتھ کرونارتنے نے تین چوکوں کی مدد سے 30 رنز بنائے۔

تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images

افغانستان کی جانب سے محمد نبی نے شاندار بولنگ کرتے ہوئے نو اوورز میں 30 رنز دے کر سری لنکا کے چار کھلاڑیوں کو پویلین کی راہ دکھائی۔

محمد نبی ایک ہی اوور میں تین کھلاڑیوں کو پویلین کی راہ دکھائی۔ انھوں نے 22 ویں اوور میں تھریمانے، مینڈس اور میتھیو کو آؤٹ کیا۔

اس سے قبل افغانستان کے کپتان گلبدین نائب نے ٹاس جیت کر پہلے بولنگ کرنے کا فیصلہ کیا۔ کارڈف میں منگل کی صبح بارش کے بعد پچ کو ڈھک دیا گیا تھا اور میچ کے آغاز سے قبل بھی مطلع ابرآلود تھا۔

ورلڈ کپ 2019 میں ان دونوں ٹیموں کا آغاز مایوس کن رہا ہے اور افغانستان کو جہاں پہلے میچ میں آسٹریلیا کے ہاتھوں شکست ہوئی وہیں سری لنکا کے خلاف نیوزی لینڈ نے ایک یکطرفہ مقابلے کے بعد فتح حاصل کی۔

تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images

ورلڈ کپ 2019 کے پوائنٹس ٹیبل پر اس وقت افغانستان کی ٹیم نویں اور سری لنکا کی ٹیم آخری نمبر پر ہے۔

نیوزی لینڈ کے خلاف دس وکٹوں سے شکست کے بعد سری لنکا کا رن ریٹ بھی بہت خراب ہے۔

ماضی میں یہ دونوں ٹیمیں 2015 کے ورلڈ کپ میں مدِمقابل آئی تھیں جہاں سری لنکا نے ایک دلچسپ مقابلے کے بعد چار رنز سے فتح حاصل کی تھی۔

تاہم اس شکست کا بدلہ افغانستان نے گذشتہ برس ایشیا کپ میں لیا تھا جب اس نے سری لنکا کو ہرا کر ٹورنامنٹ سے باہر کر دیا تھا۔

تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images

دلچسپ امر یہ بھی ہے کہ 2015 کے ورلڈ کپ کے بعد سے اگر دیکھا جائے تو افغانستان نے سری لنکا کے مقابلے میں زیادہ ایک روزہ میچ جیتے ہوئے ہیں۔

صوفیا گارڈنز کا میدان بھی بڑے مجموعوں کے لیے جانا جاتا ہے اور یہاں میچ جیتنے والے ٹیم کا پہلی اننگز میں اوسط سکور 322 رنز ہے۔

تاہم یہاں سری لنکن ٹیم کا ریکارڈ بہت خراب ہے۔ سری لنکا نے ماضی میں یہاں پانچ ون ڈے اور ایک ٹیسٹ میچ کھیلا اور ان تمام مقابلوں میں اسے شکست ہوئی ہے۔

کرکٹ ویب سائٹ کرکٹ انفو کے مطابق افغان ٹیم کے کپتان گلبدین نائب نے کہا ہے کہ ’سری لنکا کی ٹیم ایک دو برس سے ون ڈے میچوں میں مشکلات کا شکار رہی ہے۔ ہمارے پاس موقع ہے کہ ہم ان کے خلاف اچھی کارکردگی دکھائیں۔‘

ان کا کہنا تھا کہ اگر ان کی ٹیم 50 اوور کھیل جاتی ہے تو ممکن ہے کہ وہ سری لنکا کو ہرا سکیں لیکن وہ اپنے مدِمقابل کو آسان نہیں لیں گے۔

اسی بارے میں