شکھر دھون: آسٹریلیا کے خلاف میچ میں زخمی ہونے کی وجہ سے ورلڈ کپ سے باہر

انڈین کرکٹ ٹیم تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images
Image caption شکھردھون کی جگہ کون اوپنر ہوگا فیصلہ کوہلی کریں گے

انڈیا کی کرکٹ ٹیم کے اوپنر بلے باز شکھر دھون انگوٹھا ٹوٹنے کی وجہ سے تین ہفتے کے لیے ورلڈ کپ سے باہر ہوگئے ہیں۔ ان کو ڈاکٹروں نے کم سے کم تین ہفتے آرام کا مشورہ دیا ہے۔ اس دوران وہ اہم ترین میچوں کے لیے اپنی ٹیم کو دستیاب نہیں ہونگے۔

کرکٹ ورلڈ کپ کا آغاز 30 مئی کو ہوا تھا اور اس کا آخری مقابلہ 14 جولائی کو ہونا ہے۔

یہ انڈیا کے لیے بڑا دھچکا ہے۔ دھون نے آسٹریلیا کے خلاف اہم میچ میں 109 گیندوں پر ناقابل شکست 117 رنز بنا کر اپنی ٹیم کی فتح سے ہمکنار کیا۔ آسٹریلین فاسٹ بولر نیتھن کولٹر نائل کی ایک گیند ان کے بائیں ہاتھ کے انگھوٹھے کو لگی تھی جس سے وہ زخمی ہوئے۔ دھون اپنے زخمی انگوٹھے کے باوجود کھیلتے رہے۔

یہ بھی پڑھیے

شکھر دھون کا آفریدی کو جواب: ’زیادہ دماغ مت لگاؤ‘

دھون کے 143 رنز، مگر جیت آسٹریلیا کی

اس میچ میں دھون کی جگہ روندر جدیجا نے فیلڈ نگ کی تھی۔ بعد میں ایکسرے سے معلوم ہوا کہ دھون کے انگوٹھے میں فریکچر ہو چکا ہے۔

ابھی تک انڈیا نے ورلڈ کپ کے دو میچ کھیلے ہیں اور دونوں ہی جیتے ہیں۔ انڈین ٹیم کے کپتان وراٹ کوہلی کو اب دھون کی جگہ روہت شرما کے ساتھ کسی نئے کھلاڑی کو اوپنر کے طور پر آزمانا ہوگا۔

تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images
Image caption آسٹریلیا کے خلاف شکھر دھون کی سینچری پر انڈین شائقین خوش ہوئے تو وہیں اس میچ میں ان کے زخمی ہونے پر اداس بھی

اس ورلڈ کپ کے لیے رشب پنت اور امبیتی رایو ڈو بھی انڈین ٹیم کے لیے اضافی کھلاڑیوں کی فہرست میں شامل ہیں۔

جون میں انڈیا کے نیوزی لینڈ، پاکستان، افغانستان، ویسٹ انڈیز اور انگلینڈ سے میچ ہونے ہیں۔ اب یہ بات واضح ہو چکی ہے کہ ان میچوں میں دھون اپنی ٹیم کو دستیاب نہیں ہونگے۔

تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images
Image caption شکھر دھون انگوٹھا ٹوٹنے کی وجہ سے ورلڈ کپ کے بقیہ میچوں میں حصہ نہیں لے سکیں گے

رشب پنت اور ممبئی کے شریاس ائیر بھی دھون کی جگہ ٹیم میں جگہ بنا سکتے ہیں۔ دھون کے انگوٹھے کے سرے پر فریکچر کا اس وقت انکشاف ہوا جب وہ اپنی ٹیم کے ساتھ ناٹنگھم میں نیوزی لینڈ کے خلاف میچ کھیلنے نہیں آئے۔

متعلقہ عنوانات

اسی بارے میں