پاکستانی اشتہار میں ابھینندن کے مذاق پر انڈین شائقین ناراض

ابھینندن تصویر کے کاپی رائٹ ISPR
Image caption ابھینندن کو پاکستانی حکام نے طیارہ گرنے کے بعد اپنی تحویل میں لیا تھا

انڈیا اور پاکستان کے مابین تناؤ ایک مرتبہ پھر بڑھ گیا ہے لیکن اس مرتبہ وجہ سرحدی کشیدگی نہیں بلکہ کرکٹ ہے۔

پاکستان اور انڈیا کی ٹیمیں انگلینڈ میں جاری کرکٹ ورلڈ کپ میں اتوار کو مدِمقابل آ رہی ہیں یہ ٹورنامنٹ کا وہ میچ ہے جس کا سب سے بےچینی سے انتظار کیا جا رہا ہے۔

اس ماحول میں ایک پاکستانی کمپنی کے اشتہار نے ماحول مزید گرما دیا ہے۔ اس اشتہار میں رواں برس پاکستان کی جانب سے گرائے جانے والے انڈین جنگی طیارے کے پائلٹ ابھینندن کے حلیے والے ایک شخص کو پیش کیا گیا ہے۔

یہ بھی پڑھیے

’مونچھیں ہوں تو ابھینندن جیسی ورنہ نہ ہوں۔۔۔‘

انڈین پائلٹ ابھینندن کو بھارتی حکام کے حوالے کر دیا گیا

’یہ ابھینندن نہیں کوئی اور ہے‘

ابھینندن کو پاکستانی حکام نے طیارہ گرنے کے بعد اپنی تحویل میں لیا تھا اور ان سے تفتیش کے بعد انھیں ’امن کی خواہش‘ کے تحت انڈین حکام کے حوالے کر دیا گیا تھا۔

فروری 2019 میں جب یہ واقعہ پیش آیا تو دونوں ممالک کے درمیان حالات انتہائی کشیدہ ہو گئے تھے اور سرحد کے آرپار عوامی جذبات بھی بھڑک اٹھے تھے۔

اشتہار میں ایک اداکار جس کی مونچھیں ابھینندن جیسی ہیں اور وہ انڈین کرکٹ سے مشابہ جرسی پہنے ہوئے ہیں، ایسی تفتیشی ویڈیو میں دکھایا گیا ہے جیسی پاکستان نے ابھینندن کی گرفتاری کے بعد ریلیز کی تھی۔

اس ویڈیو میں جیسے ابھینندن ہر سوال کا جواب دینے سے انکار کرتے دکھائی دیتے ہیں ویسے ہی یہ اداکار بھی یہی ورلڈ کپ میں انڈین ٹیم سے متعلق ہر سوال کے جواب میں یہی کہتا ہے کہ ’یہ میں آپ کو نہیں بتا سکتا۔‘

آخر میں جب اس سے چائے کے بارے میں سوال کیا جاتا ہے تو وہ اسے عمدہ قرار دیتا ہے اور جانے کی اجازت ملنے پر کپ سمیت روانہ ہونے لگتا ہے تو سوال کرنے والا اس سے کہتا ہے کہ ’کپ چھوڑ کر جاؤ‘۔

ابھینندن جب واپس انڈیا پہنچے تھے تو انھیں ہیرو قرار دیا گیا تھا اور یہی وجہ ہے کہ انڈین عوام کو یہ اشتہار کچھ پسند نہیں آیا اور وہ اسے بے حسی پر مبنی اور شرمناک قرار دیے رہے ہیں۔

لیکن کچھ لوگ ایسے بھی ہیں جنھیں اس اشتہار میں مزاح دکھائی دیا ہے اور کچھ کا کہنا ہے کہ انڈیا کو اس کا جواب پاکستان کو میچ میں ہرا کر دینا چاہیے۔

ادھر پاکستانی بھی کسی سے پیچھے نہیں ہیں اور ان کا کہنا ہے کہ انڈین گزشتہ چھ ورلڈ کپ مقابلوں سے پاکستانیوں کا ’موقع موقع‘ والے اشتہاروں سے مذاق اڑاتے آ رہے ہیں اور اب ان سے ایک اشتہار برداشت نہیں ہو رہا۔

ان پیغامات سے ایک بات تو واضح ہے کہ اتوار کو پاکستان اور انڈیا کی ٹیمیں جب اولڈ ٹریفرڈ کے میدان میں مدِمقابل آئیں گی تو صرف میدان میں ہی نہیں بلکہ ہزاروں میل دور پاکستان اور انڈیا میں بھی جذبات عروج پر ہوں گے۔

یقیناً ایسا ہی ہونے والا ہے اگر بارش نہ ہو گئی تو۔

اسی بارے میں