کرکٹ ورلڈ کپ 2019: انگلینڈ کی ویسٹ انڈیز پر آٹھ وکٹوں سے فتح

گیل تصویر کے کاپی رائٹ Reuters
Image caption کرکٹ کے 12ویں عالمی کپ کے 19ویں میچ میں انگلینڈ نے ویسٹ انڈیز کو آٹھ وکٹوں سے شکست دے کر مسلسل دوسری فتح اپنے نام کر لی

کرکٹ کے 12ویں عالمی کپ کے 19ویں میچ میں انگلینڈ نے ویسٹ انڈیز کو آٹھ وکٹوں سے شکست دے کر مسلسل دوسری فتح اپنے نام کر لی۔ اس فتح کے بعد انگلینڈ کی ٹیم ورلڈ کپ کے پوائنٹس ٹیبل پر دوسرے نمبر پر آ گئی ہے۔

میچ میں کیا ہوا

ساوتھیمٹن میں کھیلے جانے والے اس میچ میں انگلینڈ نے ٹاس جیت کر ویسٹ انڈیز کو پہلے بیٹنگ کی دعوت دی تو ویسٹ انڈیز کی پوری ٹیم صرف 212 رنز بنا کر آؤٹ ہو گئی۔ ویسٹ انڈیز کی طرف سے سب سے زیادہ سکور نکلوس پورن نے بنایا۔ انھوں نے 78 گیندوں پر تین چوکوں اور ایک چھکے کی مدد سے 63 رنز بنائے جبکہ انگلینڈ کی طرف سے مارک وڈ اور جوفرا آرچر نے تین تین کھلاڑیوں کو آؤٹ کیا۔

انگلینڈ نے 213 رنز کا ہدف 33.1 اوورز میں دو وکٹوں کے نقصان پر پورا کر لیا۔ انگلینڈ کی طرف سے جو روٹ نے 11 چوکوں کی مدد سے سب سے زیادہ 100 رنز بنائے جبکہ ویسٹ انڈیز کی جانب سے دونوں وکٹیں شینن گیبریئل نے حاصل کیں۔

تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images
Image caption جو روٹ اپنی 16ویں سنچری اور دو وکٹوں کے باعث میچ کے بہترین کھلاڑی قرار پائے

میچ کا بہترین کھلاڑی

جو روٹ اپنی 16ویں سنچری اور دو وکٹوں کے باعث میچ کے بہترین کھلاڑی قرار پائے۔ انھوں نے اپنی سنچری میں 11 چوکے لگائے اور انگلینڈ کی ایک معمولی ہدف کا تعاقب کرنے میں مدد کی۔

لیکن ان کی بیٹنگ سے زیادہ بولنگ میں کی جانے والی کارکردگی اہم ثابت ہوئی۔ انگلینڈ کے کپتان آئن مورگن نے انھیں اس وقت گیند تھمائی جب ویسٹ انڈیز کے نوجوان بلے باز شیمرون ہیٹمائر اور نکلولس پورن 89 رنز کی مضبوط شراکت قائم کر چکے تھے۔

مزید پڑھیں

کرکٹ ورلڈ کپ 2019: انگلینڈ کو ہرانے کے لیے پاکستان اور انڈیا کے کی ’ڈریم ٹیم‘

کرکٹ ورلڈ کپ 2019 میں پاکستان ٹیم کہاں تک پہنچے گی

’یہ ورلڈ کپ آل راؤنڈرز کا ہو گا: کلائیو لائڈ

ایسے میں روٹ نے ہیٹمائر کو آؤٹ کر کہ نہ صرف یہ شراکت توڑی بلکہ ویسٹ انڈیز کے کپتان جیسن ہولڈر کو بھی آوٹ کر کہ انگلینڈ کی میچ میں پوزیشن مستحکم کر دی۔

تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images
Image caption جب انگلینڈ کو ایک اچھا آغاز ملا تو ایک موقع پر ویسٹ انڈیز کو یہ اندازہ ہو گیا تھا کہ اب ان کی میچ میں واپسی ممکن نہیں ہے تو ایسے میں کپتان جیسن ہولڈر نے گیند کرس گیل کو تھمائی

کرس گیل کی دلچسپ حرکات

جب انگلینڈ کو ایک اچھا آغاز ملا تو ایک موقع پر ویسٹ انڈیز کو یہ اندازہ ہو گیا تھا کہ اب ان کی میچ میں واپسی ممکن نہیں ہے۔ ایسے میں کپتان جیسن ہولڈر نے گیند کرس گیل کو تھمائی۔

گیل آئے تو پہلے تو ان کے خوبصورت چشمے بڑی سکرین پر دیکھ گراؤنڈ میں بیٹھے شائقین شور مچانے لگے۔ پھر گیل نے گیند کرانے سے پہلے تھوڑا ناچ کر شائقین کو متوجہ کیا۔ پھر ہر گیند پر جو روٹ اور کرس ووکس کو چھیڑتے نظر آئے۔

تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images
Image caption پھر اپنے پہلے اچھے اوور کے بعد پچ کے بیچ میں کھڑے ہو کر انوکھے انداز میں سیلوٹ کرنے لگے اور شائقین سے داد جبکہ جو روٹ سے ایک مسکراہٹ وصول کی

پھر اپنے پہلے اچھے اوور کے بعد پچ کے بیچ میں کھڑے ہو کر انوکھے انداز میں سیلوٹ کرنے لگے اور شائقین سے داد جبکہ جو روٹ سے ایک مسکراہٹ وصول کی۔ یاد رہے کہ یہ کرس گیل کا آخری ورلڈ کپ ہے۔

تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images
Image caption ووکس نے ایک منجھے ہوئے بلے باز کی مانند 40 رنز کی خوبصورت اننگز کھیلی جس میں چار چوکے بھی شامل تھے

ووکس کی نمبر تین پر بلے بازی

ووکس نے ویسٹ انڈیز کی اننگز کے آغاز میں ہی ایک کھلاڑی کو آؤٹ کرنے کے علاوہ عمدہ بولنگ کر کہ اپنی ٹیم کو اچھا آغاز دیا۔ لیکن آج انگلینڈ نے انھیں نمبر تین پر بھیج کر یہ یہ اعلان بھی کیا کہ ووکس صرف اپنی بولنگ کی وجہ سے ٹیم میں نہیں ہیں۔

ووکس نے ایک منجھے ہوئے بلے باز کی مانند 40 رنز کی خوبصورت اننگز کھیلی جس میں چار چوکے بھی شامل تھے اور اس طرح انگلینڈ کا یہ تجربہ بھی کامیاب رہا۔

اسی بارے میں