کرکٹ ورلڈ کپ 2019: محمد حفیظ کے مطابق ’پاکستانی کرکٹ ٹیم کی یہ تاریخ ہے کہ وہ گر کر اٹھتی ہے‘

کرکٹ ورلڈ کپ 2019 تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images

پاکستان کی کرکٹ ٹیم کے آل راؤنڈر محمد حفیظ کو اس بات کا افسوس ہے کہ ورلڈ کپ میں انڈیا کے خلاف شکست کے بعد ہونے والی تنقید میں کرکٹرز کے ساتھ ساتھ ان کی خاندانوں کو کو بھی نشانہ بنایا گیا۔

محمد حفیظ کا کہنا ہے کہ انڈیا کے خلاف شکست کے بعد بہت سی باتوں کا میڈیا میں ذکر ہوا اور کھلاڑیوں کو بہت سی باتیں سننے کو ملیں جو بہت زیادہ تکلیف دہ تھیں اور وہ ان تمام کرکٹرز کے ساتھ ہمدردی رکھتے ہیں جن کے خاندانوں کو ہدف بنایا گیا۔ ایسا نہیں ہونا چاہیے تھا۔

یہ بھی پڑھیے

بڑی ٹیموں کے خلاف پاکستانی ٹیم کا مایوس کن ریکارڈ

پاکستان اب بھی سیمی فائنل تک پہنچ سکتا ہے؟

اولڈ ٹریفرڈ سے ہم نے کیا سیکھا

’یہ غلطیاں انڈیا کے خلاف دہرائیں تو ہار جائیں گے‘

’ایک دوسرے کو اپنی اچھی پرفارمنسز یاد دلائیں‘

محمد حفیظ نے شعیب ملک کا خاص طور پر ذکر کرتے ہوئے کہا کہ یقیناً ان کی کارکردگی بری رہی ہے لیکن یہ وقت ہر کرکٹر پر آتا ہے کہ آپ اچھا کرنے کی کوشش کرکے بھی کامیاب نہیں ہوتے۔ صرف ایک دو ناکامیوں پر 15، 20 سال کے کریئر کی خدمات کو بھلادینا درست نہیں ہے۔

محمد حفیظ کا کہنا ہے کہ ابھی تک پاکستانی ٹیم کی کارکردگی اچھی نہیں رہی اور اس کی ذمہ داری کسی فرد واحد پر نہیں ڈالی جا سکتی سب کو اس کی ذمہ داری لینی پڑے گی جس میں کھلاڑی اورسپورٹنگ سٹاف شامل ہیں۔

پاکستان کی کرکٹ ٹیم کے آل راؤنڈر کے خیال میں انڈیا کے خلاف شکست کا دکھ کھلاڑیوں کو اتنا ہی ہے جتنا کسی دوسرے پاکستانی کو ہے۔ اس شکست کو قبول کرتے ہوئے اپنی خامیوں کو دور کرنے کی ضرورت ہے۔

تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images

جب محمد حفیظ کو یاد دلایا گیا کہ وزیراعظم عمران خان نے بھی ٹیم کو مشورہ دیا تھا کہ ٹاس جیت کر پہلے بیٹنگ کی جائے اس کے باوجود پہلے بولنگ کا فیصلہ کیوں کیا گیا تو ان کا جواب تھا کہ ٹاس کے بارے میں اتنی بحث نہیں ہونی چاہیے۔

ان کا کہنا تھا کہ ٹویٹس پڑھ کر کوئی بھی فیصلے نہیں کرتا۔ کسی کی رائے لے کر کوئی اپنی رائے تبدیل نہیں کرتا۔ سرفراز کو جو بھی فیصلہ بہترین لگا وہ انھوں نے کیا، یہ ٹیم کا فیصلہ تھا جو کنڈیشنز کو دیکھتے ہوئے کیا گیا تھا۔ بولرز اچھی بولنگ کرکے انڈین بلے بازوں کو دباؤ میں نہیں لاسکے۔

پاکستانی کرکٹ ٹیم اس وقت ورلڈ کپ کے پوائنٹس ٹیبل پر نویں نمبر پر ہے اور یہ بات محمد حفیظ کے لیے بڑی تکلیف دہ ہے۔

ان کا کہنا ہے ’یہ دباؤ سے زیادہ دکھ کی بات ہے کہ پاکستانی ٹیم ورلڈ کپ میں اس جگہ موجود ہے تاہم ہماری ٹیم کا چانس ابھی ختم نہیں ہوا اور پاکستانی ٹیم کی یہ تاریخ ہے کہ وہ گر کر اٹھتی ہے۔ اگلے میچ کی تیاری میں کوئی کمی نہیں چھوڑ رہے۔ امید ہے کہ آئندہ میچوں میں اچھی کارکردگی کا مظاہرہ کریں گے۔

اسی بارے میں