دہائی کی بہترین ویمن کرکٹ ٹیم کی کپتان کا اعزاز ثنا میر کے نام

تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images
Image caption ثنا میر اس س پہلے آئی سی سی کی عالمی درجہ بندی میں پہلی پوزیشن پر پہنچنے والی پہلی پاکستانی خاتون بولر ہونے کا اعزاز حاصل کر چکی ہیں۔

پاکستان کی خواتین کرکٹ ٹیم کی سابق کپتان اور آل راؤنڈر ثنا میر، کرکٹ کے معروف جریدے وزڈن کی جانب سے اس دہائی کی بہترین ویمن کرکٹ ٹیم کی کپتان منتخب کی گئی ہیں۔

اس دہائی کے دوران بہترین کارکردگی کی بنا پر منتخب ہونے والی اس ٹیم میں ثنا میر واحد پاکستانی کھلاڑی ہیں۔

اعلان کردہ ٹیم میں انگلینڈ کی تین کھلاڑی، شارلٹ ایڈورڈز، سارہ ٹیلر اور کیتھرین برنٹ، آسٹریلیا کی میگ لیننگ اورالیزے پیری شامل ہیں جبکہ انڈیا سے متھالی راج اور جھولن گوسوامی کو شامل کیا گیا ہے۔

یہ بھی پڑھیے

مرد و خواتین کرکٹرز مساوی کیوں نہیں؟

پاکستانی خواتین کی تصاویر اور جشن کی ایک کوشش

کھلاڑی کھیل سے دوری کیوں اختیار کرتے ہیں؟

’نیشنل یوتھ کونسل‘ کرے گی کیا؟

اس دہائی کی بہترین کھلاڑیوں کی ٹیم میں نیوزی لینڈ، جنوبی افریقہ اور ویسٹ انڈیز سے ایک ایک کھلاڑی، سوزی بیٹس، ڈین وین نیکرک اور سٹیفنی ٹیلر کو بھی شامل کیا گیا ہے۔

بی بی سی سی بات کرتے ہوئے ثنا میر کا کہنا تھا کہ اس دہائی کی بہترین کھلاڑیوں کی ٹیم کی کپتان منتخب ہونا بہت بڑے اعزاز کی بات ہے۔

'ٹیم میں بہت سی ایسی کھلاڑی شامل ہیں جن سے میں متاثر رہی ہوں۔ اس سکواڈ کی کپتانی کے لیے نامزد ہونے سے یہ احساس ہوا ہے کسی نے میرے کیریئر کے دوران میری محنت اور جدو جہد کو پوری طرح جانچا ہے اور یہ بہت اچھا لگا۔'

ثنا میر اس س پہلے آئی سی سی کی عالمی درجہ بندی میں پہلی پوزیشن پر پہنچنے والی پہلی پاکستانی خاتون بولر ہونے کا اعزاز حاصل کر چکی ہیں۔

ثنا میر کا مزید کہنا تھا کہ وہ اپنے ایک اعزاز کا موازنہ دوسرے نہیں کر سکتیں۔ البتہ اس ٹیم کے ساتھ انھیں لگتا ہے وہ دنیا کی کسی بھی بہترین ٹیم کو چیلنج کر سکتی ہیں، یہ ٹیم چاہے عورتوں کی ہو یا مردوں کی۔

اٹھارہ سو چونسٹھ سے ہر سال شائع ہونے والے جریدے وزڈن کو کرکٹ کی بائبل تصور کیا جاتا ہے۔

اس سے پہلے مردوں کی اس دہائی کی بہترین وزڈن ٹیم کا اعلان کیا گیا جس میں روہت شرما، ڈیوڈ وارنر، اے بی ڈی ویلئرز، جاس بٹلر، ایم ایس دھونی، شکیب الحسن، لستھ ملنگا، مچل سٹارک، ٹرینٹ بولٹ اور ڈیل سٹین شامل ہیں۔

اسی بارے میں