#PSL5: کراچی میں افتتاحی میچ میں کوئٹہ گلیڈی ایٹرز نے اسلام آباد یونائیٹڈ کو ہرا دیا

QUETTA تصویر کے کاپی رائٹ PCB

ایک رنگارنگ افتتاحی تقریب کے بعد پاکستان سپر لیگ کے پانچویں ایڈیشن کا افتتاحی میچ کوئٹہ گلیڈی ایٹرز اور اسلام آباد یونائیٹڈ کے مابین کھیلا گیا جو کوئٹہ کوئٹہ گلیڈی ایٹرز نے تین وکٹوں سے جیت لیا۔

کراچی کے نیشنل سٹیڈیم میں جمعرات کی شب کھیلے جانے والے میچ میں کوئٹہ گلیڈی ایٹرز نے ٹاس جیت کر اسلام آباد یونائیٹڈ کو بیٹنگ کی دعوت دی جن کی پوری ٹیم 20ویں اوور کی پہلی بال پر 168 رن بنا کر آؤٹ ہو گئی۔ جواب میں کوئٹہ کی ٹیم نے 19ویں اوور میں سات وکٹوں کے نقصان پر 171 رن بنا لیے۔

کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کی طرف سے جیسن روئے اور شین واٹسن نے 169 رن کے تعاقب میں بیٹنگ کا آغاز کیا۔ روئے دوسری ہی گیند پر کوئی رن بنائے بغیر آؤٹ ہو گئے۔ اس کے بعد جلد ہی شین واٹسن اور احمد شہزاد بھی پویلین لوٹ گئے۔ شین واٹسن رن آؤٹ ہوئے جبکہ احمد شہزاد کو محمد موسیٰ نے آؤٹ کیا۔

26 رنز پر تین کھلاڑی آؤٹ ہونے کے بعد سرفراز احمد اور اعظم خان نے اننگز کو سنبھالا اور ان کے درمیان 50 رن سے زیادہ کی شراکت ہو ئی۔ 88 کے کل سکور پر سرفراز احمد 21 رن بنا کر آؤٹ ہوئے۔ اعظم خان نے 59 رن کی اننگز کھیلی۔

پاکستان سپر لیگ کے پانچویں ایڈیشن پر بی بی سی اردو کی خصوصی کوریج

پی ایس ایل 5:اسلام آباد یونائیٹڈ 168 پر آل آؤٹ

اسلام آباد یونائیٹڈ کی طرف سے ڈی جے ملن نے سب سے زیادہ رن بنائے اور وہ 40 گیندوں پر 64 رن بنا کر آؤٹ ہوئے۔ اس کے بعد لوک رانکی نے 23 اور فہیم اشرف نے 20 رن بنائے۔ کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کی طرف سے محمد حسنین نے 25 رنز کے عوض 4 اور بی کٹنگ نے 31 کے رنز کے عوض 3 وکٹیں حاصل کیں۔

تصویر کے کاپی رائٹ PCB

کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کی ٹیم اس ٹورنامنٹ کی دفاعی چیمپیئن ہے جبکہ اسلام آباد کی ٹیم ماضی میں دو مرتبہ یہ ٹرافی اٹھا چکی ہے۔

کوئٹہ گلیڈی ایٹرز نے دو بار فائنل ہارنے کے بعد گذشتہ سال پشاور زلمی کو فائنل میں شکست دی تھی۔

کوئٹہ کے کپتان سرفراز احمد کے لیے یہ پی ایس ایل اس لیے بھی زیادہ اہم ہے کہ وہ اس لیگ میں بہترین کارکردگی کے ذریعے پاکستانی ٹیم میں واپسی کے لیے پرامید ہیں۔

یہ بھی پڑھیے

پی ایس ایل 5: ایک وعدہ جسے پورا کر دکھایا

پاکستان سپر لیگ 5 کا شیڈول اور ٹکٹوں کا حصول

اینڈی فلاور: پی ایس ایل بہترین بولنگ اٹیک کی لیگ ہے

’جس کی کوئی ٹیم نہیں، اُس کی ٹیم کوئٹہ ہے‘

کوئٹہ کی بولنگ میں نوجوان محمد حسنین اور نسیم شاہ کے علاوہ تجربہ کار سہیل خان اور محمد نواز بھی موجود ہیں جبکہ بیٹنگ لائن میں آسٹریلیا کے شین واٹسن اور انگلینڈ کے جیسن روئے کا کردار بہت اہم ہے۔

ان کے علاوہ ٹیم کو احمد شہزاد اور احسان علی سے بھی اچھی کارکردگی کی امید ہے۔

کوئٹہ کو پہلے ہی میچ سے قبل اس وقت دھچکا لگا جب جمعرات کو اس ٹیم کے اہم رکن عمر اکمل کو پاکستان کرکٹ بورڈ کے اینٹی کرپشن کوڈ کی خلاف ورزی پر معطل کر دیا گیا۔

تصویر کے کاپی رائٹ Getty Images
Image caption پاکستان سپر لیگ نے یہ قدم شائقین کو اس ایونٹ سے مزید قریب لانے کی سوچ کے تحت اٹھایا ہے

عمر اکمل اس معطلی کی وجہ سے پی ایس ایل سے بھی باہر ہو گئے ہیں اور ان کی جگہ سکواڈ میں انور علی کو شامل کیا گیا ہے۔

اس میچ میں کوئٹہ کی مدمقابل اسلام آباد یونائیٹڈ کی قیادت شاداب خان کر رہے ہیں اور اس کی بیٹنگ لائن کالن منرو، کالن انگرم، آصف علی، فلپ سالٹ اور لیوک رونکی کی موجودگی میں مضبوط دکھائی دیتی ہے۔

اسلام آباد کو اس ٹورنامنٹ میں پہلی بار پی ایس ایل کھیلنے والے جنوبی افریقی فاسٹ بولر ڈیل سٹین کی خدمات بھی حاصل ہیں جبکہ ماضی میں پاکستان کی قومی ٹیم کا حصہ رہنے والے رومان رئیس بھی فٹ ہونے کے بعد دوبارہ اپنی کرکٹ شروع کر رہے ہیں۔

تصویر کے کاپی رائٹ PCB

پی ایس ایل کا یہ ایڈیشن اس لیے بھی خاص ہے کہ لیگ کے آغاز کے بعد یہ پہلا موقع ہے کہ اس کے تمام میچ پاکستان میں کھیلے جا رہے ہیں۔ یہ میچ چار شہروں کراچی، لاہور، راولپنڈی اور ملتان میں کھیلے جائیں گے۔

پاکستان سپر لیگ کو پاکستان لانے کی ابتدا تین سال پہلے صرف ایک فائنل سے ہوئی تھی جس کے بعد مرحلہ وار میچوں کی تعداد بڑھا کر سکیورٹی کے بارے میں غیرملکی کرکٹرز کے خدشات دور کرنے کی کوشش کی گئی اور اب چھ ٹیموں میں شامل تمام غیرملکی کرکٹرز ہر قسم کے خوف سے آزاد ہو کر پاکستانی میدانوں میں نظرآنے والے ہیں۔

تصویر کے کاپی رائٹ PCB

متعلقہ عنوانات

اسی بارے میں