#MelaLootLiya: علی ظفر، علی عظمت اور #PSL2020 کے ترانے پر تنازع

پی ایس ایل

،تصویر کا ذریعہGetty Images

پاکستان سپر لیگ کے پانچویں ایڈیشن کا نصف مکمل ہونے کو ہے لیکن اس کے آغاز سے پہلے لیگ کے آفیشل گانے 'تیار ہیں' کے بارے میں چھڑنے والی بحث ابھی تک جاری ہے۔

گذشتہ روز معاملے نے زبانی جمع خرچ سے ہٹ کر ایک نیا رخ اس وقت لیا جب پاکستانی گلوکار علی ظفر نے پی ایس ایل کے لیے اپنا گانا ’میلہ لوٹ لیا‘ ریلیز کیا۔ ٹوئٹر پر اپنا نیا ترانہ شیئر کرتے ہوئے علی ظفر کا کہنا تھا ’بھائی نے صرف اپنے مداحوں کے لیے اپنا وعدہ پورا کیا۔‘

یہ بھی پڑھیے

یاد رہے کہ ’تیار ہیں‘ کو پاکستان کے چار نامور گلوکاروں: علی عظمت، ہارون رشید، عاصم اظہر اور عارف لوھار نے مل کر گایا ہے۔

اس گانے کے آغاز میں رباب، ڈھول، شہنائی اور پھر الیکٹرک گٹار کی آواز سنائی دیتی ہے جو شاید اس بات کا اشارہ ہے کہ روایتی کلاسیکی اور جدید پاپ موسیقی کے ذریعے پاکستانی ثقافت کو اس ترانے میں نمائندگی دینے کی کوشش کی گئی ہے لیکن ریلیز کے بعد سے گانے کو منفی ردعمل کا سامنا ہے۔

تنقید کے جواب میں ایک طرف گلوکار عاصم اظہر نے عوام سے ’اُمیدوں پر پورا نہ اُترنے پر معافی‘ مانگی ہے تو دوسری جانب گلوکار علی عظمت نے اس تنقید کو ’تخلیق کردہ‘ قرار دیا تھا۔

،تصویر کا ذریعہ@AbdurRa27751763

پی ایس ایل کے پانچویں ایڈیشن کا ترانہ ریلیز ہونا اور تقریب کے بدنظمی کا شکار ہونے سے براہ راست علی ظفر کا کوئی تعلق نظر تو نہیں آتا، تاہم دونوں گلوگاروں (علی عظمت اور علی ظفر) کے درمیان نوک جھوک نے سوشل میڈیا صارفین کو بحث کے لیے کافی موا دے دیا ہے۔

دونوں گانوں کا موازنہ کرتے ہوئے ایک صارف کا کہنا تھا ’گانے کا مقصد دیکھیں تو ’تیار ہو‘ قدرے سلو ہے، میچز کے بیک گراؤنڈ کے لیے۔ یہاں ’میلہ لوٹ لیا‘ زیادہ کیچی ہے۔ لیکن صرف گانے کی حیثیت سے دیکھیں تو ’تیار ہو‘ اعلیٰ گانا ہے۔‘

علی عظمت کے گائے گانے کی تعریف کرتے عارف ملک کہتے ہیں ’علی عظمت کا گانا آج میں نے پورا سنا ہے بہت اچھا گانا ہے۔ اس میں بیٹ ہے ردھم ہے جوش ہے یہ علی ظفر کے پہلے گانے سے بہت بہتر ہے اور دوسرے سے بھی۔‘

،تصویر کا ذریعہ@ghulamafridi66

جہاں کئی صارفین کو علی ظفر کا گایا گیا گانا پسند آ رہا ہے وہیں ایسے لوگ بھی ہیں جو پی سی بی کی انتظامیہ کو موردِالزام ٹھہراتے یہ کہتے نظر آئے کہ ’پی سی بی انتظامیہ کی ناقص حکمت عملی نے فنکاروں کو بھی تقسیم کر دیا ہے۔‘

چند صارفین نے ایسے پولز بھی چلائے جن میں پوچھا گیا کہ پی ایس ایل 2020 کا کونسا گانا بہتر ہے؟ علی عظمت کا یا علی ظفر کا؟

جہاں ’تیار ہیں‘ اور علی ظفر کے مداح کافی خوش ہیں وہیں اس گانے پر تنقید کرنے والوں کی بھی کوئی کمی نہیں۔

شہباز ملک نامی صارف نے ’میلہ لوٹ لیا‘ پر تنقید کرتے ہویے کہا: ’یہ تھا علی ظفر کا وہ سونگ جس کے لیے سوشل میڈیا پر اتنے دن سے طوفان برپا تھا؟ یہ پی ایس ایل کا گانا کم اور کسی بی گریڈ انڈین مووی کا سستا آئٹم نمبر زیادہ لگتا ہے۔‘

،تصویر کا ذریعہ@aadiiroy19

کئی صارفین علی ظفر کو سینئیرز کی عزت کرنے کی نصحیتیں بھی کرتے نظر آئے۔

راشد نامی صارف علی عظمت کے ماضی مںی گائے گئے سپر ہٹ گانوں کو یاد کرتے ہوئے کہتے ہیں ’علی ظفر نے علی عظمت کو ڈی گریڈ کرنے کی کوشش کی ہے۔ لیکن استاد استاد ہی ہوتا ہے۔‘

علی عظمت اور علی ظفر کے درمیان تنازع ہے کیا؟

چند روز قبل نجی ٹی وی چینل کے پروگرام میں اینکر پرسن وسیم بدامی کے ساتھ انٹرویو میں علی عظمت نے گانے ’تیار ہو‘ کی ریلیز کے لیے منعقدہ تقریب میں ہونے والے بدانتظامیوں کے حوالے سے اپنے تحفظات کا اظہار کرتے ہوئے کہا تھا کہ گانے کو سبوتاژ کرنے کے لیے مخالف فنکاروں نے مبینہ طور پر بلاگرز کی خدمات حاصل کیں۔

جب اینکر وسیم بدامی نے پوچھا کہ کیا ان کا اشارہ گلوکار علی ظفر کی جانب ہے تو علی عظمت کا کہنا تھا کہ وہ کسی کا نام نہیں لینا چاہتے تاہم پاکستان کرکٹ بورڈ بھی ’اُن آرٹسٹ سے آگاہ ہے۔‘

واضح رہے کہ پاکستان سپر لیگ کے پہلے تینوں ایڈیشن کا آفیشل گانا گلوکار علی ظفر نے ہی گایا تھا اور یہاں یہ بات بھی اہم ہے کہ جس دن ’تیار ہیں‘ کو ریلیز کیا گیا اسی روز علی ظفر بغیر کسی ظاہری وجہ کے سوشل میڈیا پر ’ٹرینڈ‘ کرتے نظر آئے۔

اگلے دن علی ظفر نے سوشل میڈیا پر #Bhaihazirhai کے ہیش ٹیگ کے ساتھ ایک ویڈیو پوسٹ کی، جس میں وہ بظاہر گلوکار علی عظمت سے مخاطب تھے۔

،تصویر کا ذریعہ@AliZafarsays

ایک منٹ دو سیکنڈ کی ویڈیو میں طنزیہ انداز میں ان کا کہنا تھا کہ ’اگر آپ کی زندگی میں کوئی بھی مسئلہ چل رہا ہے، کوئی ازدواجی مسئلہ، سماجی مسئلہ، کاروبار نہیں چلا، گانا نہیں چلا، ایونٹ نہیں چلا تو اُس کے ذمہ دار آپ بالکل نہیں ہیں، اُس کا ذمہ دار میں ہوں‘۔

علی ظفر نے طنزیہ انداز جاری رکھتے ہوئے مزید کہا ’میں اتنا طاقتور ہوں، ٹرمپ کو کس نے الیکٹ کرایا؟ (اپنی جانب اشارہ کرتے ہوئے) بھائی نے۔۔۔ اپنے کمرے میں ایک ڈارٹ بورڈ لگائیں اور اُس پر میری تصویر لگا کر روزانہ صبح اُٹھ کر، نشانہ لگائیں تاکہ آپ کا غصہ تھوڑا کم ہو۔۔‘