پاکستان سپر لیگ: لاہور قلندرز کے بلے باز بین ڈنک چھکوں سے زیادہ چیونگم کی وجہ سے مقبول

  • عبدالرشید شکور
  • بی بی سی اردو ڈاٹ کام، کراچی
بین ڈنک

،تصویر کا ذریعہ@CRICINGIF

آسٹریلوی بلے باز بین ڈنک نے اپنی جارحانہ بیٹنگ کی بدولت پاکستان سپر لیگ کا میلہ لوٹ لیا ہے۔

لاہور قلندرز کی طرف سے کھیلتے ہوئے انھوں نے پہلے کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کے خلاف دس چھکوں اور تین چوکوں کی مدد سے 93 رنز بنائے اور پھر کراچی کنگز کے خلاف 99 رنز ناٹ آؤٹ کی شاندار اننگز کھیلی جس میں بارہ چھکے اور تین چوکے شامل تھے۔

بین ڈنک نے ٹی ٹوئنٹی مقابلوں میں اپنے بہترین انفرادی سکور کے ریکارڈ کو بھی برابر کیا اور ساتھ ہی پی ایس ایل میں ایک اننگز میں سب سے زیادہ چھکوں کا نیا ریکارڈ بھی قائم کر دیا۔

چیونگم چبانے کی عادت جو والدہ کو بالکل پسند نہیں

بظاہر بین ڈنک شائقین میں اپنے طاقتور چھکوں سے زیادہ چیونگم چبانے کی عادت کی وجہ سے مشہور ہو گئے ہیں۔ اپنی بیٹنگ کے دوران وہ نہ صرف چیونگم چباتے رہتے ہیں بلکہ اکثر وہ اسے پُھلاتے بھی نظر آتے ہیں۔

یہ بھی پڑھیے

ان کی اس عادت پر سوشل میڈیا پر دلچسپ تبصرے بھی ہوئے ہیں۔ خود بین ڈنک کا اس بارے میں کہنا ہے کہ وہ اپنے اعصاب کو نارمل رکھنے کے لیے چیونگم چباتے رہتے ہیں تاہم ان کا یہ بھی کہنا ہے کہ ان کی والدہ کو ان کی یہ عادت بالکل پسند نہیں ہے۔

سوشل میڈیا پر دلچسپ ردعمل

سوشل میڈیا صارفین بھی بین ڈنک کی چیونگم چبانے کی عادت پر دلچسپ تبصرے کرتے رہے ہیں۔

ٹوئٹر پر سجاد نامی ایک صارف نے لکھا کہ ’سُپر مین، سپائڈر مین کے بعد پیشِ خدمت ہے ببل مین۔ بین ڈنک۔

محمد رضوان نامی صارف کا کہنا تھا ’ببل مین نے ایک مرتبہ پھر یہ اکیلے ہی کر دکھایا۔ ایک اننگز میں 12 چھکے۔

ندیم نامی صارف نے بین ڈنک کی چیونگم پھلاتے ایک ویڈیو شیئر کی اور کہا ’ڈنگ ڈانگ کا نیا اشتہار۔‘

پی ایس ایل میمز کے نام سے ٹوئٹر ہینڈل نے سابق وزیر اعظم نواز شریف اور ان کے بھائی شہباز شریف کی ایک تصویر شیئر کی اور اس پر ازراہ مذاق یہ عنوان تحریر کیا ’بھیا اپنا دور ہوتا تو بین ڈنک کے نام کا ایک فلائی اوور بنوا دیتے۔‘

بین ڈنک کون ہیں؟

مواد پر جائیں
پوڈکاسٹ
ڈرامہ کوئین

’ڈرامہ کوئین‘ پوڈکاسٹ میں سنیے وہ باتیں جنہیں کسی کے ساتھ بانٹنے نہیں دیا جاتا

قسطیں

مواد پر جائیں

33 سالہ بین ڈنک کا پاکستان سپر لیگ میں یہ دوسرا سال ہے۔ گذشتہ سال انھوں نے کراچی کنگز کی نمائندگی کی تھی لیکن سات میچوں میں وہ مجموعی طور پر صرف 124 رنز بنانے میں کامیاب ہو سکے تھے جس میں 49 رنز ناٹ آؤٹ سب سے بڑا سکور تھا جو انھوں نے اسلام آباد یونائٹڈ کے خلاف بنایا تھا۔

بین ڈنک نے اپنی کرکٹ کوئنز لینڈ کی طرف سے وکٹ کیپر کی حیثیت سے شروع کی تھی۔ ان کی فیملی کا شمالی کوئنز لینڈ میں کیلوں کا فارم تھا۔ تسمانیہ منتقلی کے بعد وہ ایک مستند بیٹسمین کا روپ دھار چکے تھے۔

بین ڈنک کو لنکاشائر لیگ کھیلنے کی وجہ سے اپنے کھیل میں بہتری لانے کا موقع ملا۔ سنہ 2013 کی بگ بیش لیگ میں انھوں نے تسمانیہ ہریکینس کی طرف سے کھیلتے ہوئے 395 رنز بنا ڈالے اور وہ ٹورنامنٹ کے بہترین کھلاڑی قرار پائے۔ اس کارکردگی نے ان پر آئی پی ایل اور کیریبئن لیگ کے دروازے بھی کھول دیے۔

بین ڈنک نے اگلے سال آسٹریلوی ون ڈے ٹورنامنٹ میں ڈبل سنچری بنا ڈالی۔ یہ پہلا موقع تھا کہ آسٹریلوی ڈومیسٹک ون ڈے ٹورنامنٹ میں کسی بیٹسمین نے ڈبل سنچری سکور کی۔ انھیں جنوبی افریقہ کے خلاف ٹی ٹوئنٹی سیریز کے لیے آسٹریلوی ٹیم میں شامل کر لیا گیا لیکن سیریز کے تینوں میچوں میں وہ قابل ذکر کارکردگی نہ دکھا سکے۔

،تصویر کا ذریعہGetty Images

بین الاقوامی کرکٹ میں بین ڈنک کی واپسی سنہ 2017 میں ہوئی لیکن سری لنکا کے خلاف دو ٹی ٹوئنٹی میچوں میں بھی ان کی کارکردگی اچھی نہ رہی۔

بین ڈنک پر محدود اوورز کے بیٹسمین کی چھاپ لگی رہی ہے حالانکہ انھوں نے سنہ 2015 کی شیفیلڈ شیلڈ میں چار سنچریوں کی مدد سے 837 رنز بنائے۔

بین ڈنک آسٹریلوی بگ بیش میں مجموعی رنز بنانے والے بیٹسمینوں میں 12ویں نمبر پر ہیں۔ ان کے بنائے گئے 1658 رنز میں دس نصف سنچریاں شامل ہیں۔

بین ڈنک نے گذشتہ سال جنوبی افریقہ میں منعقدہ لیگ میں نیلسن مینڈیلا جائنٹس کی نمائندگی کی۔ وہ اس لیگ میں سب سے زیادہ 415 رنز بنانے والے بیٹسمین تھے۔