سابق ایمپائر شیپرڈ انتقال کر گئے

ڈیوڈ شیپرڈ
Image caption ڈیوڈ شیپرڈ نے بانوے ٹیسٹ اور ایک سو بہتر ایک روزہ میچوں میں ایمپائرنگ کی

سابق ٹیسٹ ایمپائر ڈیوڈ شیپرڈ اڑسٹھ سال کی عمر میں انتقال کر گئے ہیں۔ وہ کافی عرصے سے کینسر کے مرض میں مبتلا تھے۔

برطانیہ کی کاؤنٹی ڈیون میں پیدا ہونے والے ڈیوڈ شیپرڈ نے بانوے ٹیسٹ اور ایک سو بہتر بین الاقوامی ایک روزہ میچوں میں ایمپائرنگ کی ہے، جن میں تین ورلڈ کپ بھی شامل ہیں۔ انہوں نے سنہ دو ہزار پانچ میں ریٹائرمنٹ اختیار کر لی تھی۔

ویسٹ انڈیز کے سٹیو بکنر اور جنوبی افریقہ کے رڈی کوئرٹیزن ہی ہیں جو ان سے زیادہ ٹیسٹ میچوں میں ایمپائرنگ کروا چکے ہیں۔ ان دونوں نے بالاترتیب ایک سو اٹھائیس اور ایک سو ایک میچوں میں ایمپائرنگ کی ہے۔

شیپرڈ نے برطانوی کاؤنٹی گلوسٹرشائر کی طرف سے 1965 سے لے کر 1979 تک کرکٹ کھیلی اور 10،672 رنز بنائے۔

1981 میں انہیں فرسٹ کلاس ایمپائر بنا دیا گیا اور صرف چار سال بعد ہی انہیں ایشز سیریز میں ایمپائرنگ کے لیے چنا گیا۔

جب انہوں نے آسٹریلیا اور انگلینڈ کے درمیان اپنے آخری میچ میں ایمپائرنگ کی تو سٹیڈیم میں موجود تماشائیوں نے ان کو کھڑے ہو کر خراجِ تحسین پیش کیا۔

ان کے ساتھ کئی میچوں میں ایمپائرنگ کرنے والے ڈکی برڈ نے کہا کہ وہ اپنے سابق ساتھی کو ’مسِ‘ کریں گے۔

انہوں نے کہا کہ ’وہ ایک اچھے ایمپائر تھے۔ ہم نے کئی خوشگوار لمحے اکٹھے گزارے۔۔۔ وہ ایک اچھے دوست تھے۔‘

اسی بارے میں