آفریدی کو گیند چبانے کی سزا

آفریدی(فائل فوٹو)
Image caption شاہد آفریدی نے پچھتاوے کا اظہار کیا اور معافی مانگی

پاکستانی آل راؤنڈر شاہد آفریدی پر آئی سی سی کے میچ ریفری رنجن مدو گالے نے دو ٹونٹی ٹونٹی کرکٹ میچ کھیلنے پر پابندی عائد کر دی ہے۔ یہ پابندی شاہد آفریدی پر آسٹریلیا کے خلاف پانچویں ایک روزہ میچ کے دوران بال کو خراب کرنے کے سبب لگائی گئی۔

شاہد آفریدی آسٹریلیا کے خلاف پانچ فروری کو ملبورن میں اور انیس فروری کو دبئی میں انگلینڈ کے خلاف میچ میں شرکت نہیں کر سکیں گے۔ یاد رہے کہ شاہد آفریدی پاکستان کی ٹونٹی ٹونٹی ٹیم کے کپتان بھی ہیں۔

آفریدی نے، جو پاکستان اور آسٹریلیا کے درمیان پانچ میچوں کی سیریز کے آخری میچ میں کپتانی کے فرائض سر انجام دے رہے تھے، پاکستان کی بالنگ کے دوران گیند کو خراب کرنے کی کوشش کی۔ گراؤنڈ میں لگے ٹی وی کیمروں نے شاہد آفریدی کو گیند کو منہ میں لے کر کاٹتے ہوئے دکھایا۔

شاہد آفریدی نے اپنی اس غلطی کو تسلیم کیا جس پر میچ ریفری رنجن مدو گالے نے ان پر دو ٹونٹی ٹونٹی میچز کی پابندی عائد کر دی۔

شاہد آفریدی آئی سی سی کے گیند کی حالت خراب کرنے کے جس قانون کے مطابق سزا دی گئی اس قانون میں اس عمل کی سزا ایک ٹیسٹ یا دو ون ڈے یا دو ٹی ٹونٹی میچ ہے۔

رنجن مدو گالے نے فیلڈ ایمپائروں کی جانب سے شاہد آفریدی پر لگائے گئے الزام کی مکمل سماعت کی ضرورت محسوس نہیں کی کیونکہ شاہد آفریدی نے اپنا جرم قبول کر لیا تھا۔

آئی سی سی کے ریفری رنجن مدو گالے نے شاہد آفریدی پر اس غلطی کی سزا سناتے ہوئے کہا کہ یہ قومی ٹیم کے کپتان کی ذمہ داری ہوتی ہے کہ وہ کھیل کو قانون کے اور اس کی صحیح روح کے مطابق کھیلنے کو یقینی بنائے۔

شاہد آفریدی نے اپنے اس عمل پر پچھتاوے کا اظہار کیا اور معافی مانگی۔

اسی بارے میں