نیوزی لینڈ فالو آن پر مجبور

آسٹریلیا کے خلاف ویلنگٹن میں ہونے والے پہلے ٹیسٹ کے تیسرے روز نیوزی لینڈ کی ٹیم کو فالو آن پر مجبور ہونا پڑا ہے۔

Image caption بولنگر نے تیرہ اووروں میں اٹھائیس رنز دے کر پانچ کھلاڑیوں کو آؤٹ کیا

آسٹریلیا کی ٹیم نے ٹاس جیت کر پہلے کھیلتے ہوئے چار سو انسٹھ رنز پانچ کھلاڑی آؤٹ ہونے پر اننگز ختم کرنے کا اعلان کر دیا تھا۔

آسٹریلیا کی طرف سے مائیکل کلارک نے ایک سو اڑسٹھ رنز بنائے جبکہ مارکس نارتھ ایک سو بارہ رنز بنا کر ناٹ آؤٹ رہے۔

جواب میں نیوزی لینڈ کی ٹیم اچھے کھیل کا مظاہرہ نہ کر سکی اور صرف ایک سو ستاون رنز بنا کر آؤٹ ہو گئی۔

میچ کے تیسرے روز جب نیوزی لینڈ نے اپنی اننگز کا آغاز کیا تو اس کا مجموعی سکور ایک سو آٹھ تھا اور اس کے چار کھلاڑی آؤٹ ہوئے تھے۔

تاہم بولنجر کی شاندار بالنگ کی بدولت نیوزی لینڈ کی پوری ٹیم ایک سو ستاون رنز بنا کر ڈھیر ہو گئے۔ نیوزی لینڈ کی طرف سے کپتان ڈینیئل وٹوری نے چھیالیس رنز بنائے جبکہ گپٹل نے تیس رنز کی اننگز کھیلی۔ وکٹ کیپر میککلم چوبیس اور راس ٹیلر اکیس رنز بنا کر آؤٹ ہوئے۔

ان کے علاوہ نیوزی لینڈ کا کوئی بھی کھلاڑی ڈبل فگر تک نہ پہنچ سکا۔

آسٹریلیا کی طرف سے بولنگر نے تیرہ اووروں میں اٹھائیس رنز دے کر پانچ جبکہ ہیرس نے سترہ اووروں میں بیالیس رنز دے کر دو کھلاڑیوں کو آؤٹ کیا۔ نیوزی لینڈ کے دو کھلاڑی رن آؤٹ ہوئے۔

نیوزی لینڈ نے اپنی دوسری اننگز میں چوبیس رنز بنائے ہیں اور اس کا کوئی کھلاڑی آؤٹ نہیں ہوا۔ اننگز کی شکست سے بچنے کے لیے نیوزی لینڈ کو مزید دو سو چوہتر رنز درکار ہیں اور اس کی ابھی دس وکٹیں باقی ہیں۔

اسی بارے میں