خواجہ جنید نئے چیف کوچ و منیجر

سابق اولمپیئن خواجہ جنید کو پاکستانی ہاکی ٹیم کا نیا چیف کوچ و منیجر مقرر کردیا گیا ہے۔

انہیں یہ ذمہ داری فی الحال اذلان شاہ ہاکی ٹورنامنٹ کے لئے سونپی گئی ہے۔

واضح رہے کہ ورلڈ کپ میں ٹیم کی شرمناک کارکردگی کے بعد پاکستان ہاکی فیڈریشن نے ٹیم منیجمنٹ اور سلیکشن کمیٹی کو فارغ کردیا تھا اور پاکستانی ٹیم کے لیے غیرملکی کوچ کی خدمات حاصل کرنے کا فیصلہ کیا تھا۔

اس ضمن میں جرمنی سے تعلق رکھنے والے پال لیزک انٹرویو کے لیے پاکستان آئے تھے اس کے علاوہ آسٹریلیا اور ہالینڈ سے تعلق رکھنے والے چند دوسرے کوچز کے نام بھی پاکستان ہاکی فیڈریشن کے زیرغور تھے۔ لیکن سکیورٹی کے خدشات کے سبب کوئی بھی غیرملکی کوچ پاکستان آنے کےلئے تیار نہ تھا۔

ہمارے نامہ نگار عبدالرشید شکور نے بتایا کہ خواجہ جنید اس سے قبل پاکستانی جونیئر ٹیم کے کوچ رہ چکے ہیں۔

احمد عالم اور اجمل خان کو اسسٹنٹ کوچ مقرر کیا گیا ہے۔

پاکستانی ہاکی ٹیم آئندہ ماہ ملائشیا میں ہونے والے اذلان شاہ ہاکی ٹورنامنٹ میں حصہ لے گی۔

خواجہ جنید نے بی بی سی کو دیئے گئے انٹرویو میں کہا کہ موجودہ حالات میں یہ ذمہ داری آسان نہیں کیونکہ ورلڈ کپ کی مایوس کن کارکردگی کے بعد کھلاڑیوں کے پست حوصلوں کو بلند کرنا ان کے لئے چیلنج ہوگا۔

انہوں نے اس بات سے اتفاق نہیں کیا کہ ورلڈ کپ کے بعد تمام ہی کھلاڑیوں کو ٹیم سے باہر کردینا چاہئے تھا۔

انہوں نے کہا کہ کلین سوئپ کے مثبت نتائج برآمد نہیں ہوتے بلکہ بتدریج ٹیم کی بہتری کے لئے اقدامات کئے جاتے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ ان کی کوشش ہوگی کہ سینئر کھلاڑیوں کا تجربہ جونیئرز میں منتقل کیا جائے تاکہ وہ خود کو بین الاقوامی چیلنج کے لئے تیار کرسکیں۔

خواجہ جنید نے کہا کہ وہ اس بات سے پریشان نہیں کہ انہیں صرف ایک ٹورنامنٹ کے لئے کیوں کوچ مقرر کیا گیا ہے۔اگر وہ اچھے نتائج دینے میں کامیاب رہے تو انہیں اس مدت میں اضافہ بھی ہوسکتا ہے۔ یہ بات فیڈریشن کو بھی پتہ ہے کہ مطلوبہ نتائج کے لئے وقت درکار ہوتا ہے۔

خواجہ جنید کو اس بات کی بہت زیادہ خوشی ہے کہ وہ اپنی سالگرہ کے دن یعنی سولہ اپریل کو کوچ مقرر کئے گئے ہیں اور دلچسپ اتفاق یہ ہے کہ انہوں نے اپنے بین الاقوامی کریئر کا آغاز بھی سولہ اپریل انیس سو ستاسی کو کیا تھا۔

چوالیس سالہ خواجہ جنید 1988 کے اولمپکس1990 اور 1994 کے عالمی کپ سمیت171 بین الاقوامی میچوں میں پاکستان کی نمائندگی کرچکے ہیں۔

اسی بارے میں