پاکستان سیمی فائنل میں

انگلینڈ کی طرف سے مورگن سب سے کامیاب بیٹسمین رہے۔ ٹی ٹوئنٹی کے ایک مقابلے میں انگلینڈ کی ٹیم نے نیوزی لینڈ کو ہرا کر سیمی فائنل کے لیے کوالیفائی کر لیا۔

انگلینڈ کی اس جیت کی بدولت پاکستان کی ٹیم بھی بہتر رن ریٹ کی بنیاد پر سیمی فائنل میں پہنچنے میں کامیاب ہو گئی ہے۔ سیمی فائنل میں پاکستان کا مقابلہ گروپ ایف میں سب سے زیادہ پوائنٹ حاصل کرنے والی ٹیم سے ہو گا۔

نیوزی لینڈ کے کپتان ڈینیئل وٹوری نے ٹاس جیت کر پہلے بیٹنگ کرنے کا فیصلہ کیا تھا۔

نیوزی لینڈ نے مقررہ بیس اوورز میں راس ٹیلر کے چوالیس، برینڈن مکیلم کے تینتیس اور سکاٹ سٹائرس کے اکتیس رنز کی بدولت چھ وکٹوں کے نقصان ایک سو انچاس رنز بنائے۔

انگلینڈ کی طرف سے سٹورٹ براڈ اور گریم سوان نے دو دو کھلاڑیوں کو آؤٹ کیا جبکہ بریسنن اور سائیڈباٹم نے ایک ایک وکٹ لی۔

اس طرح انگلینڈ کو میچ جیتنے کے لیے ایک سو پچاس رنز کا ہدف ملا۔

انگلینڈ نے مطلوبہ سکور سات وکٹوں کے نقصان پر پورا کر لیا۔

انگلینڈ کی طرف سے مورگن سب سے کامیاب بیٹسمین رہے۔ انہوں نے چونتیس گیندوں پر ایک چھکے اور چار چوکوں کی مدد سے چالیس رنز بنائے۔

انگلش اوپنر مائیکل لمپ نے عمدہ کھیل پیش کیا اور اکیس گیندوں پر بتیس رنز بنائے۔ لیوک رائٹ اور بریسنن نے ٹیم کے سکور میں قابلِ قدر اضافہ کیا اور بالترتیب چوبیس اور تئیس رنز بنائے۔

نیوزی لینڈ کی طرف سے شین بانڈ اور سکاٹ سٹائرس نے دو دو وکٹیں لیں جبکہ نیتھن ملیکم، ملز اور وٹوری نے ایک ایک کھلاڑی کو آؤٹ کیا۔

بریسنن نے عمدہ بولنگ اور بیٹنگ کی بنیاد پر مین آف دی میچ کا اعزاز حاصل کیا۔

اسی بارے میں