شین بونڈ نے ریٹائرمنٹ کا اعلان کر دیا

نیوزی لینڈ سے تعلق رکھنے والے چونتیس سالہ فاسٹ بالر شین بونڈ نے تمام قسم کی بین الاقوامی کرکٹ سے ریٹائرمنٹ کا اعلان کر دیا ہے۔

ریٹائرمنٹ کے اعلان کے موقع پر شین بونڈ کا کہنا تھا کہ ’میں نے چھ برس کی عمر میں نیوزی لینڈ کے لیے کرکٹ کھیلنے کا خواب دیکھا تھا اور اس خواب کی تعبیر اس سب سے کہیں زیادہ ملی جس کی میں نے توقع کی تھی‘۔

انہوں نے کہا کہ نیوزی لینڈ کی نمائندگی کرنا ان کے لیے باعثِ فخر ہے اور اسے یاد کریں گے۔

شین بونڈ نے اپنے کیریئر کے دوران بیاسی ایک روزہ میچوں میں حصہ لیا اور ایک سو سینتالیس وکٹیں حاصل کیں۔

تاہم بارہا زخمی ہونے کی وجہ سے ان کا ٹیسٹ کیرئر طویل ثابت نہیں ہوا اور سنہ 2001 میں آسٹریلیا کے خلاف ڈیبیو کرنے کے بعد اگلے نو سال میں شین بونڈ صرف اٹھارہ ٹیسٹ میچ کھیل سکے جن میں انہوں نے چھیاسی وکٹیں لیں۔

شین بونڈ کا کہنا تھا کہ وہ مستقبل میں کسی اور شکل میں نیوزی لینڈ کرکٹ کے لیے خدمات سرانجام دینے کے حوالے سے سنجیدہ ہیں۔

نیوزی لینڈ کرکٹ کے سربراہ جسٹن وان کا کہنا ہے کہ ’ہم بین الاقوامی مقابلوں میں شین کی کمی محسوس کریں گے۔ ان کی رفتار اور صلاحیت سے دنیائے کرکٹ کی ہر ٹیم کے بلے باز خوفزدہ تھے‘۔

کیوی ٹیم کے موجودہ کپتان ڈینیئل ویٹوری نے شین بونڈ کی ریٹائرمنٹ کو بڑا نقصان قرار دیا ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ ’میں جانتا ہوں کہ اس نے کھیل کے میدان پر رہنے کے لیے کتنی کوشش کی۔ وہ اپنے جسم سے واقف ہیں اور وہ جانتے ہیں کہ بین الاقوامی کرکٹ کی ضروریات کیا ہیں۔ ان کا جانا میرے لیے ایک بڑا نقصان ہے‘۔

اسی بارے میں