مرلی کا ٹیسٹ کرکٹ سے ریٹائرمنٹ کا فیصلہ

مرلی دھرن
Image caption مرلی دھرن نے 132 ٹیسٹ میچوں میں 792 وکٹیں لی ہیں

ٹیسٹ اور ایک روزہ میچوں میں سب سے زیادہ وکٹیں حاصل کرنے والے سری لنکن سپنر مرلی دھرن نے ٹیسٹ کرکٹ سے ریٹائر ہونے کا فیصلہ کر لیا ہے۔

اٹھارہ جولائی کو بھارت کے خلاف گال میں کھیلا جانے والا ٹیسٹ میچ مرلی دھرن کے کیریئر کا آخری ٹیسٹ ہوگا۔

مرلی دھرن کے ریٹائر ہونے کا اعلان سری لنکن کرکٹ بورڈ کی جانب سے جاری کردہ بیان میں کیا گیا۔ بیان میں یہ بھی کہا گیا ہے کہ اس سلسلے میں مزید معلومات وقت آنے پر ایک پریس کانفرنس میں سامنے لائی جائیں گی۔

کرکٹ ویب سائٹ کرک انفو کا کہنا ہے کہ مرلی دھرن نے ریٹائرمنٹ کا فیصلہ سری لنکن سلیکشن کمیٹی کے سربراہ اروندا ڈی سلوا اور کپتان کماراسنگاکارا سے ملاقات کے بعد کیا ہے۔

مرلی دھرن نے اپنے ٹیسٹ کیریئر کا آغاز سنہ 1992 میں کولمبو میں آسٹریلیا کے خلاف کیا تھا اور اٹھارہ سالہ ٹیسٹ کیرئر میں انہوں نے ایک سو بتیس ٹیسٹ میچ کھیل کر سات سو بانوے وکٹیں لی ہیں جبکہ ایک روزہ میچوں میں ان کی وکٹوں کی تعداد پانچ سو پندرہ ہے۔

خیال رہے کہ گزشتہ برس مرلی دھرن نے یہ اعلان کیا تھا کہ وہ ٹیسٹ کرکٹ سے ریٹائرمنٹ کے بارے میں غور کر رہے ہیں۔ انہوں نے کہا تھا کہ ’میں سینتیس برس کا ہو گیا ہوں اور اب ابتدائی دنوں کی طرح بولنگ نہیں کر سکتا۔ میں پندرہ، سولہ اوورز کے بعد تھک جاتا ہوں‘۔

مرلی دھرن نے کہا تھا کہ وہ سنہ 2011 کے ورلڈ کپ تک ایک روزہ کرکٹ کھیلنا چاہتے ہیں اور اس کے بعد ان کی مکمل توجہ ٹوئنٹی ٹوئنٹی کرکٹ پر ہوگی۔

اسی بارے میں