پاکستان کے بولر چھا گئے

محمد آصف
Image caption محمد آصف نے بہترین بولنگ کرتے ہوئے اوپر تلے تین کھلاڑی آؤٹ کر دیے

پاکستان اور آسٹریلیا کے درمیان ٹیسٹ سیریز کے لارڈز کے میدان میں ہونے والے پہلے میچ کے پہلے روز آسٹریلیا کے نو کھلاڑی آؤٹ ہو گئے ہیں۔

پہلے ٹیسٹ کا تازہ ترین سکور

آؤٹ ہونے والے کھلاڑیوں میں واٹسن، پونٹنگ، کلارک، کیٹچ، نارتھ، پین، سمتھ ، جونسن اور بی ڈبلیو ہیلفن ہاس شامل ہیں۔

آخری آؤٹ ہونے والے کھلاڑی ہیلفن ہاس تھے جنہیں محمد عامر نے بولڈ کیا۔

اس سے قبل دانش کنیریا نے جونسن کو بولڈ کیا۔ انہوں نے تین رنز بنائے۔ کنیریا نے سمتھ کو بھی ایک کے سکور پر ایل بی ڈبلیو آؤٹ کیا۔

چھٹی وکٹ پین کی تھی جنہیں عمر گل کی گیند پر کامران اکمل نے کیچ آؤٹ کیا۔ انہوں نے سات رنز بنائے۔

اس سے قبل محمد آصف نے بہت خوبصورت سوئنگ گیند کر کے اوپر تلے تین کھلاڑیوں کو آؤٹ کیا۔ پہلے کلارک کو 47 کے سکور پر ایل بی ڈبلیو آؤٹ کیا، اس کے بعد کیٹچ کو 80 کے سکور پر کامران اکمل کے ہاتھوں آؤٹ کیا، اور پھر نارتھ کو صفر کے سکور پر بولڈ کر دیا۔

جب سکور آٹھ پر پہنچا تو آسٹریلیا کے اوپننگ بیٹسمین ایس آر واٹسن محمد عامر کی گیند پر بولڈ ہو گئے۔ انہوں نے چار رنز بنائے تھے۔ لنچ کے وقفے کے بعد پونٹنگ بھی چھبیس رنز بنانے کے بعد محمد عامر کی ہی گیند پر عمر امین کے ہاتھوں آؤٹ ہوئے۔

اس وقت بولنگر اور مائیک ہسی کھیل رہے ہیں۔

کھیل بارش کی وجہ سے دیر سے شروع ہوا۔ کھیل مقامی وقت کے مطابق ساڑھے دس بجے شروع ہونا تھا۔تاہم امپائرز نے میدان کی حالت دیکھتے ہوئے میچ کے آغاز میں تاخیر کا فیصلہ کیا ہے۔ لندن میں گزشتہ روز سے وقفے وقفے سے بارش ہو رہی ہے۔ گزشتہ رات بھی بارش ہوتی رہی جس کی وجہ سے میدان گیلا بتایا جاتا ہے۔

پاکستان نے ٹاس جیت کر آسٹریلیا کو پہلے کھیلنے کی دعوت دی تھی۔

کپتان شاہد آفریدی تین سال کے بعد ٹیسٹ کرکٹ کھیل رہے ہیں۔ انہوں نے سنہ 2006 سے ایک روزہ کرکٹ پر توجہ دینے کی خاطر ٹیسٹ کرکٹ چھوڑی ہوئی ہے۔

شاہد آفریدی نےمیچ سے پہلے کہا ہے کہ پاکستانی ٹیم اب متحد ہے اور اس کو ’دوبارہ جیتنے کی عادت‘ پڑ گئی ہے لہذا پاکستان کی کامیابی کے انہیں کافی امکانات نظر آتے ہیں۔

پاکستان نے اس ماہ آسٹریلیا کے خلاف دونوں ٹی ٹوئنٹی میچ جیت لیے تھے۔ تاہم اس سے پہلے آسٹریلیا کا دورہ پاکستانی ٹیم کے لیے انتہائی نا کام اور مایوس کُن ثابت ہوا تھا۔ اس دورے پر پاکستان کو تین صفر سے ٹیسٹ سیریز میں شکست ہوئی تھی اور اس دورے پر وہ ایک بھی بین الاقوامی میچ نہ جیت سکا۔

مبصرین کے مطابق محمد یوسف اور یونس خان کی غیر موجودگی میں پاکستان کی بیٹنگ کو مشکلات کاسامنا ہو سکتا ہے۔ تاہم بولنگ میں محمد آصف، عمر گل ، محمد عامر اور سپنر دانش کنیریا پر مبنی بولنگ اٹیک مضبوط ہے۔

آسٹریلیا کے بیٹسمین مائکل ہسی نے یوسف اور یونس کی غیر موجودگی پر زور دیتے ہوئے کہا ہے کہ ٹیسٹ میچ کے لیے پاکستان کی بیٹنگ مضبوط نہیں ہے۔ محمد یوسف او یونس خان کی ٹیسٹ میچوں میں رنز کی اوسط 50 سے زیادہ تھی۔ ان کے بعد اب تیسرے نمبر پر چالیس کی ایوریج کےساتھ عمر اکمل ہیں جو اب تک صرف چھ ٹیسٹ میچ کھیل چکے ہیں۔

آسٹریلیا کے کپتان رکی پونٹنگ کی بھی کوشش ہوگی کہ وہ خود جم کر کھیلیں، لارڈز پر وہ ابھی تک ٹیسٹ سینچری نہیں بنا پائے ہیں۔

اسی بارے میں