ابتدائی نقصان کے بعد محتاط بیٹنگ

لارڈز میں پاکستان اور آسٹریلیا کے مابین پہلے ٹیسٹ میچ کے دوسرے دن کھانے کے وقفے پر آسٹریلیا کے 253 رنز کے جواب میں پاکستان نے اپنی پہلی اننگز میں دو وکٹ کے نقصان پر انچاس رن بنا لیے ہیں۔

اس وقت سلمان بٹ اور اپنا پہلا ٹیسٹ کھیلنے والے عمر امین کریز پر موجود ہیں۔

پہلے ٹیسٹ کا تازہ ترین سکور

پاکستان کی جانب سے سلمان بٹ اور عمران فرحت نے محتاط انداز میں اننگز شروع کی تھی تاہم پاکستان کو پہلا نقصان چھٹے اوور میں اس وقت اٹھانا پڑا جب عمران فرحت ہلفنہاس کی گیند پر وکٹوں کے پیچھے کیچ ہوگئے، انہوں نے چار رن بنائے۔

آؤٹ ہونے والے دوسرے کھلاڑی اظہر علی تھے جو اپنے پہلے ٹیسٹ میچ میں سولہ رن بنا کر ہلفنہاس کا دوسرا شکار بنے۔

اس سے قبل آسٹریلوی ٹیم اپنی پہلی اننگز میں دو سو ترپّن رن بنا کر آؤٹ ہوگئی۔ دوسرے دن آسٹریلیا نے دو سو انتیس رنز نو کھلاڑی آؤٹ پر اپنی پہلی اننگز دوبارہ شروع کی تو مائیکل ہسی نے جارحانہ انداز میں کھیلتے ہوئے آسٹریلوی ٹیم کے سکور میں تیزی سے اضافہ کرنے کی کوشش کی۔

اسی دوران انہوں نے سات چوکوں اور ایک چھکے کی مدد سے اپنی نصف سنچری بھی مکمل کی۔ ہسی چھپّن رنز بنا کر ناٹ آؤٹ رہے۔ آؤٹ ہونے والے آخری کھلاڑی ڈگ بولنجر تھے جنہیں محمد عامر نے بولڈ کیا۔

آسٹریلیا کی جانب سے سائمن کیٹچ اسّی رنز کے ساتھ ٹاپ سکورر رہے۔

پاکستان کی جانب سے محمد عامر چار وکٹوں کے ساتھ سب سے کامیاب بولر رہے۔ ان کے علاوہ محمد آصف نے تین، دانش کنیریا نے دو جبکہ عمرگل نے ایک وکٹ حاصل کی۔

میچ کے پہلے دن پاکستان نے ٹاس جیت کر آسٹریلیا کو پہلے کھیلنے کی دعوت دی تھی اور ایک موقع پر ایک سو اکہتر کے مجموعی سکور پر آسٹریلیا کے صرف دو کھلاڑی آؤٹ تھے تاہم چائے کے وقفے کے بعد آسٹریلیا کی سات وکٹیں صرف اٹھاون رنز کے اضافے کے بعد گر گئیں۔

پہلے دن بارش کی وجہ سے کھیل تاخیر سے شروع ہوا تھا اور دن میں مقررہ نوّے اوورز کی جگہ صرف ستّر اوورز کا کھیل ہو سکا تھا۔

اسی بارے میں